بشیر بدر شبنم کے آنسو پھول پر یہ تو وہی قصہ ہوا

فہد اشرف نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 21, 2017

  1. فہد اشرف

    فہد اشرف محفلین

    مراسلے:
    7,153
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Relaxed
    غزل

    شبنم کے آنسو پھول پر یہ تو وہی قصہ ہوا
    آنکھیں مری بھیگی ہوئی چہرہ ترا اترا ہوا

    اب ان دنوں میری غزل خوشبو کی اک تصویر ہے
    ہر لفظ غنچے کی طرح کِھل کر ترا چہرہ ہوا

    شاید اسے بھی لے گئے اچھے دنوں کے قافلے
    اس باغ میں اک پھول تھا تیری طرح ہنستا ہوا

    ہر چیز ہے بازار میں اس ہاتھ دے اس ہاتھ لے
    عزّت گئی شہرت ملی رسوا ہوئے چرچا ہوا

    مندر گئے مسجد گئے پیروں فقیروں سے ملے
    اک اس کو پانے کے لئے کیا کیا کِیا، کیا کیا ہوا

    انمول موتی پیار کے دنیا چرا کر لے گئی
    دل کی حویلی کا کوئی دروازہ تھا ٹوٹا ہوا

    برسات میں دیوار و در کی ساری تحریریں مٹیں
    دھویا بہت مٹتا نہیں تقدیر کا لکھا ہوا

    بشیر بدر
    (انتخاب از آمد)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  2. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی لائبریرین

    مراسلے:
    19,071
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    واہ زبردست ۔عمدہ شراکت
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر