سماجی مسائل پہ اشعار

جاسمن نے 'اشعار اور گانوں کے کھیل' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 11, 2018

  1. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    4,555
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    اصل محبت روٹی کی، پیٹ کی، بھوک کو مٹانے کی ہوتی ہے، کوئی پیارا بھی مر جائے یہ تب بھی باز نہیں آتی، بڑی مشکل سے تدفین تک انتظار کیا جاتا ہے پھر جیسے تیسے کر کے اسے مِٹانا پڑتا ہے، ظالم پیٹ کی سننی پڑتی ہے۔
    چهان مارے ہیں فلسفے سارے
    دال روٹی ہی سب پہ بهاری ہے
     
    • زبردست زبردست × 1
  2. رباب واسطی

    رباب واسطی محفلین

    مراسلے:
    1,504
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Chatty
    چہرے سجے سجے ہیں تو دل ہیں بجھے بجھے
    ہر شخص میں تضاد ہے دن رات کی طرح
     
  3. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    4,555
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    زمانے کی دورنگی پر ساحر لدھیانوی کا ایک شعر
    بنامِ امن ہیں جنگ و جدل کے منصوبے
    بہ شورِ عدل، تفاوت کے کارخانے ہیں
     
  4. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    رہتے ہیں دُور دُور غریبوں کے دیس سے
    انساں ہوئے عدم کہ پری زاد ہوگئے
    عدم
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. لاریب مرزا

    لاریب مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,648
    کوئے جاناں کی ناکہ بندی ہے!
    دلِ ہنگامہ جُو! کِدهر چلیے

    جون ایلیا
     
  6. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    4,555
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    جس میں ہر عہد کے ہر نسل کے غم زندہ ہیں
    خاک ہو کر بھی یہ لگتا تھا کہ ہم زندہ ہیں
    افتخار عارف
     
  7. رباب واسطی

    رباب واسطی محفلین

    مراسلے:
    1,504
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Chatty
    یہ دورِ خود نمایؑ ہے ، بڑھا چڑھا کے بات کر
    ہر ایک رُخ پہ آج کل نمایؑشی غلاف ہے

    قمر زیدی
     
  8. رباب واسطی

    رباب واسطی محفلین

    مراسلے:
    1,504
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Chatty
    میں اپنے آپ کا نہیں تو میرا کون ہو قمر
    رقیب تو رقیب ہے ، حبیب بھی خلاف ہے
     
    • زبردست زبردست × 1
  9. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    4,555
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    دروغ گوئی، جہالت و عدم احترام ہمارے سماج کا ایک بڑا مسئلہ ہے
    جو سچ کہوں تو برا لگے، جو دلیل دوں تو ذلیل ہوں
    یہ سماج جہل کی زد میں ہے، یہاں بات کرنا حرام ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    کھیلنے کی عمر تھی مزدوریاں کرتا رہا
    ہائے وہ بچپن کہ جس میں بچپنہ کوئی نہ تھا
    حسیب جمال
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    آلودگی
    گھٹن سے بچ کے کہیں سانس لے نہیں سکتے
    جہاں بھی جائیں یہ کالا دھواں تو سر پر ہے

    سلمان نجمی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    ‏غربت/معاشی ناہمواری
    بھوک پھرتی ہے میرے ملک میں ننگے پاؤں
    رزق ظالم کی تجوری میں چھپا بیٹھا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    غربت
    کیسا عجیب آیا ہے اس سال کا بجٹ
    مرغی کا جو بجٹ ہے وہی دال کا بجٹ
    خالد احسان
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    Urbanization شہربندی
    اب گھر کے دریچے میں آئے گی ہوا کیسے
    آگے بھی پلازا ہے پیچھے بھی پلازا ہے
    خالد احسان
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  15. کامران عاشر

    کامران عاشر محفلین

    مراسلے:
    534
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    غم اگرچہ جاں گسل ہے پہ کہاں بچیں کہ دل ہے
    غم عشق گر نہ ہوتا غم روزگار ہوتا
     
  16. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    غربت
    ساتھ چاول کے یہ کنکر بھی نگل جاتا ہے
    بھوک میں آدمی پتھر بھی نگل جاتا ہے
    جاوید نسیمی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  17. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    کثرت آبادی
    صحرا میں بسے سب دیوانے شہروں میں بھی محشر ہے برپا
    اللہ تری اس خلقت سے باقی نہ رہا ویرانہ تک
    عفیف سراج
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    اس دائرۂ روشنی و رنگ سے آگے
    کیا جانیے کس حال میں بستی کے مکیں ہیں
    نجیب احمد
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  19. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    چھیڑیے ایک جنگ، مل جل کر غریبی کے خلاف دوست، میرے مذہبی نغمات کومت چھیڑیے
    عدم گونڈوی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    دام بیجوں کے کیوں نہیں گرتے
    کھاد سستی کبھی نہیں ہوتی
    بجلی آئے نہ آئے کٹیا میں
    بل کا ناغہ کبھی نہیں ہوتا
    مرض کوئی بھی ہو علاج میں بس
    ہانپتی کانپتی ہوئی ماں کی
    کچھ دعائیں مجھے میسر ہیں
    کپڑے پھٹتے نہیں کبھی عابی
    گل کے گرتے ہیں یہ پسینے سے
    گڑیا پڑھنے مری نہیں جاتی
    بیٹا کھیتوں میں اگ رہا ہے مرا
    گھی مصالحوں کا جو یہ فیشن ہے
    ہے یہی ایک شوق بیوی کا
    کوئی تہوار ہو تو کرتی ہے
    کھیت پانی سے زیادہ پیتے ہیں
    یہ پسینہ مرے مساموں کا
    خون جتنا پلانا پڑتا ہے
    اتنا بنتا نہیں بدن میں مرے
    ہڈیاں تک نچوڑ دیتا ہوں
    تب کہیں فصل لہلہاتی ہے
    دیکھ کر حوصلہ مرا عابی
    دھوپ سورج کی ہار جاتی ہے
    سخت موسم سے جیت جاتا ہوں
    سبزی ہو یا اناج منڈی میں
    سستے داموں میں ہار جاتا ہوں
    فصل ہوتے ہی میں چکا دوں گا
    "میری گندم خریدنے والو!!
    تھوڑا آٹا ادھار دے دو گے؟"
    عابی مکھنوی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر