سلیم احمد زندگی موت کے پہلو میں بھلی لگتی ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ سلیم احمد

مدیحہ گیلانی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 13, 2013

  1. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    واہ واہ کیا ہی خوبصورت انتخاب ہے۔ ارسال کرنے کا شکریہ
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. مدیحہ گیلانی

    مدیحہ گیلانی محفلین

    مراسلے:
    2,282
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    شکریہ
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  3. مدیحہ گیلانی

    مدیحہ گیلانی محفلین

    مراسلے:
    2,282
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    شکریہ صائمہ :)
     
  4. x boy

    x boy محفلین

    مراسلے:
    6,208
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    موڈ:
    Breezy
    سچ تو کہہ دوں مگر اس دور کے انسانوں کو
    بات جو دل سے نکلتی ہے بُری لگتی ہے
    خوب کہا
     
    • متفق متفق × 1
  5. مدیحہ گیلانی

    مدیحہ گیلانی محفلین

    مراسلے:
    2,282
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    جیتے رہیں بیٹا :)
     
  6. شاہد شاہنواز

    شاہد شاہنواز لائبریرین

    مراسلے:
    1,836
    جھنڈا:
    Pakistan
  7. مدیحہ گیلانی

    مدیحہ گیلانی محفلین

    مراسلے:
    2,282
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. امیداورمحبت

    امیداورمحبت محفلین

    مراسلے:
    3,065
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    روز کاغذ پہ بناتا ہوں میں قدموں کے نقوش
    کوئی چلتا نہیں اور ہمسفَری لگتی ہے
    بہت خوب ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  9. مدیحہ گیلانی

    مدیحہ گیلانی محفلین

    مراسلے:
    2,282
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    شکریہ امیداورمحبت
    محفل پر پھر سے فعال دیکھ کر خوشی ہوئی :)
    کیسی ہیں آپ ؟:)
     
  10. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,549
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question
    گھر میں کچھ کم ہے، یہ احساس بھی ہوتا ہے سلیمؔ
    یہ بھی کھُلتا نہیں کس شے کی کمی لگتی ہے

    بہت خوب ۔۔۔۔
    سلیم احمد نے بہت کم لکھا ہے مگر جو بھی لکھا ہے بہت ہی منفرد لکھا ہے ۔ ان کا ایک شعر برسوں بعد بھی یاد ہے ۔

    ہم سمجھتے تھے ہمارے بام و در دُھل جائیں گے
    بارشیں آئیں تو کائی جم گئی دیوا ر پر

    سلیم احمد کی اس خوبصورت غزل کو یہاں شئیر کرنے کا بہت بہت شکریہ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. عبد الرحمن

    عبد الرحمن لائبریرین

    مراسلے:
    1,982
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    ماشاء اللہ! بہت ہی خوب انتخاب ہے۔
    جزاکِ اللہ خیرا!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. مدیحہ گیلانی

    مدیحہ گیلانی محفلین

    مراسلے:
    2,282
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    غزل کی پسندیدگی اور تبصرے کے لیے ممنون ہوں ظفری صاحب ۔
    اور سلیم احمد کے خوبصورت شعرکو شیئر کرنے کا بھی شکریہ :)
    سلامت رہیں ۔
     
  13. مدیحہ گیلانی

    مدیحہ گیلانی محفلین

    مراسلے:
    2,282
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    شکریہ ۔جیتے رہیں :)
     
  14. قرۃالعین اعوان

    قرۃالعین اعوان محفلین

    مراسلے:
    8,651
    موڈ:
    Lurking
    زندگی موت کے پہلو میں بھلی لگتی ہے
    گھاس اس قبر پہ کچھ اور ہری لگتی ہے

    روز کاغذ پہ بناتا ہوں میں قدموں کے نقوش
    کوئی چلتا نہیں اور ہمسفری لگتی ہے

    آنکھ مانوس تماشہ نہیں ہونے پاتی
    کیسی صورت ہے کہ ہر روز نئی لگتی ہے

    گھاس میں جذب ہوئے ہونگے زمیں کے آنسو
    پاؤں رکھتا ہوں تو ہلکی سی نمی لگتی ہے

    سچ تو کہہ دوں مگر اس دور کے انسانوں کو
    بات جو دل سے نکلتی ہے بری لگتی ہے

    میرے شیشے میں اتر آئی ہے جو شامِ فراق
    وہ کسی شہرِ نگاراں کی پری لگتی ہے

    بوند بھر اشک بھی ٹپکا نہ کسی کے غم میں
    آج ہر آنکھ کوئی ابرِ تہی لگتی ہے

    شور طفلاں بھی نہیں ہے نہ رقیبوں کا ہجوم
    لوٹ آؤ یہ کوئی اور گلی لگتی ہے

    گھر میں کچھ کم ہے یہ احساس بھی ہوتا ہے سلیم
    یہ بھی کھلتا نہیں کس شے کی کمی لگتی ہے


     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  15. منیب الف

    منیب الف محفلین

    مراسلے:
    453
    جھنڈا:
    Pakistan
    اس کے شاعر کا نام سلیم کوثر ہے کہ سلیم احمد؟
     
  16. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,138
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    یہ غزل سلیم احمد کی ہے
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1

اس صفحے کی تشہیر