1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $420.00
    اعلان ختم کریں
  2. اردو محفل سالگرہ چہاردہم

    اردو محفل کی یوم تاسیس کی چودہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

فارسی شاعری خوبصورت فارسی اشعار مع اردو ترجمہ

محمد وارث نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 7, 2008

  1. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,936
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    گر جُست و جوئے گم شُدہ مجنوں نمی کُند
    در دشت ہر طرف تگ و پوئے غزال چیست؟

    ابوالفیض فیضی دکنی

    اگر وہ گم شدہ مجنوں کی جستجو نہیں کرتے تو پھر دشت میں ہرطرف غزالوں کی تگ و پو کیا ہے۔
     
    • زبردست زبردست × 2
  2. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    (قطعه)
    مرا گفتند جمعی مهربانان
    چو دیدندم ز غم در اضطرابی
    که خوش می‌باش کز دورانِ گیتی
    عمارت بازیابد هر خرابی
    کشیدم از جگر آهی و گفتم
    بدان صاحبدلان نیکو جوابی
    چه سود آنگه که ماهی مرده باشد
    که باز آید به جوی رفته آبی
    (ابنِ یمین فریومدی)

    سالِ وفات: ۷۶۹ ہجری

    مہربانوں کی ایک جماعت نے جب مجھے غم کے مارے اضطراب میں دیکھا تو مجھے تسلی دینے کے لیے کہا کہ "خوش رہو، کیونکہ دنیا کی گردش سے ہر ویرانہ آخر کار دوبارہ آباد ہو جاتا ہے۔" میں نے جگر سے ایک آہ کھینچی اور اُن صاحب دلوں کو ایک خوبصورت جواب دیا کہ "جب مچھلی مر چکی ہو تو ندی میں خشک ہوئے پانی کے واپس آنے سے کیا فائدہ!"

    لغت نامۂ دہخدا کے مطابق تیسرے مصرعے میں دورانِ گردوں آنا چاہیے جبکہ سعید نفیسی کے تصحیح کردہ دیوان میں دورانِ گیتی درج ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏نومبر 25, 2014
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,936
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    می شوند از گردشِ چشمِ بُتاں زیر و زبر
    عشقبازاں را غمے از گردشِ افلاک نیست

    صائب تبریزی

    وہ تو چشمِ بتاں کی گردش سے ہی زیر و زبر ہو جاتے ہیں، عاشقوں کو گردشِ افلاک کا تو کوئی غم نہیں ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  4. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ھوای بندگی آورد در وجود مرا
    وگرنه ذوقِ چنین آمدن نبود مرا

    (بھائی نند لال 'گویا')


    مجھے بندگی کی خواہش ہی وجود میں لے کر آئی ہے ورنہ اس طرح دنیا میں آنے کی مجھے آرزو نہیں تھی۔

    بہت خوب!
     
    آخری تدوین: ‏جنوری 3, 2014
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,936
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    در دلِ بے خَبَراں جز غمِ عالم، غم نیست
    در غمِ عشقِ تو ما را خبر از عالم نیست


    ہلالی چغتائی شہید

    بے خبر اور انجان لوگوں کے دل میں دنیا کے غم کے سوا اور کوئی غم نہیں ہے، اور تیرے عشق کے غم میں ہمیں دنیا ہی کی کوئی خبر نہیں ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  6. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    چرا بی‌هوده می‌گردی به صحرا و به دشت ای دل
    چو آن سلطانِ خوبان کرده اندر دیده منزل‌ها

    (بھائی نند لال 'گویا')


    اے دل! تو بے فائدہ ویرانوں اور جنگلوں میں کیوں بھٹک رہا ہے جب کہ خوبصورتوں کے سلطان نے تو تیری آنکھوں میں ٹھکانا کیا ہوا ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏جنوری 29, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  7. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    (رباعی)
    دوشینه به خواب حشر دیدم برپا
    دربانِ ارم ستاده در دست عصا
    رفتم که اجازت طلبم گفت که‌ای
    گفتم که غلامِ علی‌ام گفت بیا

    (میر غلام علی آزاد بلگرامی)

    کل رات میں نے خواب میں دیکھا کہ روزِ حشر برپا تھا اور جنت کا دربان ہاتھ میں عصا لیے کھڑا تھا۔۔۔۔ میں اُس کے پاس گیا کہ اُس سے جنت میں داخل ہونے کی اجازت طلب کروں۔۔ اُس نے پوچھا کون ہو؟ میں نے جواب دیا کہ میں علی کا غلام ہوں۔۔۔ اُس نے کہا داخل ہو جاؤ۔۔۔۔
     
    آخری تدوین: ‏جنوری 29, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  8. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,936
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    نظیری نیشاپوری کی ایک غزل کے تین اشعار

    تو از عذابِ خدا ما ز مغفرت گوئیم
    نگاہ کُن تو کجائی و ما کجا واعظ

    اے واعظ، تُو عذابِ خدا کی اور ہم اسکی مغفرت کی باتیں کرتے ہیں، ذرا دیکھ تو سہی کہ تو کہاں ہے اور ہم کہاں ہیں۔

    کلامِ حق بغَلَط تا بکے کُنی تفسیر
    تو ہیچ شرم نداری ز مُصطفیٰ واعظ

    کب تک تُو خدا کے کلام کی غلَط تفسیر کرتا رہے گا، واعظ تجھے مُصطفیٰ (ص )کی بھی کچھ شرم نہیں ہے۔

    کجا حدیثِ نظیری ترا فروغ دہد
    ندادہ آیتِ قرآں ترا ضیا واعظ

    اے واعظ، نظیری کی باتیں کہاں تجھے روشنی بخشیں گی کہ قرآن کی آیتیں بھی تجھ کچھ روشنی نہ دے سکیں۔
     
    • زبردست زبردست × 2
  9. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    قیصرِ روم سلطان مراد چہارم نے مغل حکمران شاہ جہاں کو لکھا کہ آپ صرف ہندوستان کے بادشاہ ہیں۔ شاہ جہاں کا لقب اختیار کرنا ٹھیک نہیں۔ بات پتے کی تھی۔ بادشاہ نے یمین الدولہ سے کہا کوئی اور لقب اختیار کرنا چاہیے۔ ملک الشعرا ابو طالب کلیم کاشانی نے اسی وقت قصیدہ لکھ کر پیش کیا اور اس میں لقب کی یہ توجیہ کی:

    هند و جهان ز روی عدد هر دو چون یکیست
    شه را خطابِ شاه جهانی مبرهن است


    یعنی چونکہ ایک ہی عدد (۵۹) رکھنے کی وجہ سے ہند اور جہاں دونوں ایک ہیں، اس لیے بادشاہ کے لیے شاہ جہاں کا خطاب دلیل سے ثابت ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏جنوری 29, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. خالد محمود چوہدری

    خالد محمود چوہدری محفلین

    مراسلے:
    11,564
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    بعد از خدا بعشقِ محمد مخمرم (ﷺ)
    گر کفر اِیں بُودبخدا سخت کافرم
    ترجمہ :۔خدا تعالیٰ کے بعد مَیں محمد مصطفیٰﷺکے عشق میں دیوانہ ہو چکا ہوں۔ اگر اس عشق کی دیوانگی کا نام کوئی کفر رکھتا ہے تو خدا کی قسم میں سخت کافر ہوں (کیونکہ آپﷺ سے میں شدید محبت رکھتا ہوں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  11. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    اگرچه زادهٔ هندم فروغِ چشمِ من است
    ز خاکِ پاکِ بخارا و کابل و تبریز

    (علامه اقبال)

    اگرچہ میں ہند میں پیدا ہوا ہوں، لیکن میری آنکھوں کی چمک بخارا، کابل اور تبریز کی پاک خاک کے سرمے سے ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏جنوری 29, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  12. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,936
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    بیدل کسے بہ عرشِ حقیقت نمی رسد
    تا خاکِ راهِ احمدِ مُرسَل نمی شود

    ابوالمعانی مرزا عبدالقادر بیدل

    بیدل کوئی بھی عرشِ حقیقت تک نہیں پہنچ سکتا کہ جب تک وہ حضورِ پاک (ص) کی راہ کی خاک نہیں بن جاتا۔
     
    • زبردست زبردست × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  13. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    (نام)
    یک جوان می‌خواست شهرت یابد اندر بین خلق،
    نام خود را زنده گرداند به عالم جاودان.
    فکر کرد و عاقبت یک چاره‌ای پیدا نمود:
    کند نامش را به روی سنگ و زان شد شادمان.

    گفتمش: آن سنگ را سیلاب اگر از جا برد،
    سازد آن را در یگان جایی ز چشم کس نهان،
    یا کفد آن سنگ از گرما و از سرمای سخت،
    نام تو گم می‌شود، بی‌شبهه، با سنگ از میان.

    گر تو خواهی زنده باشی سال‌های بی‌شمار،
    عمر بینی جاودانی تا جهان دارد بقا،
    از ته دل خدمت خلق و دیار خویش کن،
    ثبت کن نامت به قلب مردمان باوفا!

    (لایق شیرعلی)

    ترجمہ: ایک جوان چاہتا تھا کہ وہ لوگوں کے درمیان شہرت پائے اور وہ اپنے نام کو دنیا میں زندۂ جاوید کر دے۔ وہ اس بارے میں سوچتا رہا اور آخرکار اُسے ایک طریقہ سوجھا: اُس نے اپنا نام پتھر پر کندہ کیا اور اُس سے خوشی محسوس کرنے لگا۔
    میں نے اُس سے کہا: اگر اس پتھر کو سیلاب اپنی جگہ سے لے جائے اور کسی دوسری جگہ پر لوگوں کی نظروں سے چھپا کر رکھ دے، یا اگر سخت گرمی اور سردی سے یہ پتھر ریزہ ریزہ ہو جائے تو بے شک تمہارا نام بھی پتھر کے ساتھ ہمیشہ کے لیے گم ہو جائے گا۔
    اگر تم چاہتے ہو کہ بے شمار سالوں تک زندہ رہو، اور جب تک جہاں باقی ہے اُس وقت تک جاودانی عمر پاؤ، تو تہِ دل سے اپنے لوگوں اور اپنے دیار کی خدمت کرو، اور اس طرح مردمانِ باوفا کے دلوں میں اپنا نام ہمیشہ کے لیے ثبت کر دو۔
     
    آخری تدوین: ‏اپریل 13, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  14. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,936
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    اظہارِ عجز پیشِ ستم پیشگاں خطاست
    اشکِ کباب باعثِ طغیانِ آتش است

    صائب تبریزی

    ستم پیشہ، ظالم لوگوں کے سامنے عاجزی کا اظہار کرنا غلطی ہے کیونکہ کباب سے گرنے والے قطرے آگ کو مزید بڑھکا دیتے ہیں۔
     
    • زبردست زبردست × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. حسینی

    حسینی محفلین

    مراسلے:
    1,560
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بہت ہی خوبصورت تشبیہ ہے۔۔ ماشاء اللہ
    بہت خوب وارث بھائی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  16. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    گرچه فقیر و خوار و گداییم و بی‌نوا
    هر شب خیالِ دلبرِ ما میهمانِ ماست

    (منیری)

    اگرچہ ہم فقیر، خوار، گدا اور بے نوا ہیں، اس کے باوجود ہمارے دلبر کا خیال ہر شب ہمارا مہمان بن کر آتا ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏جنوری 29, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,936
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    آنچہ زر می شود از پر توِ آں، قلبِ سیاہ
    کیمیائیست کہ در صحبتِ درویشاں است

    حافظ شیرازی

    جس کے سائے سے سیاہ دل سونا بن جائے، وہ کیمیا درویشوں کی صحبت میں ہے یعنی دریشوں کی صحبت ایک ایسی کیمیا ہے کہ جس کے سائے سے بھی سیاہ دل زریں ہو جاتے ہیں۔
     
    • زبردست زبردست × 3
  18. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    (رباعی)
    شب چیست سُوَیدایِ دلِ اهلِ کمال
    سرمایه‌دِهِ حُسن به زلف و خط و خال
    معراجِ نبی به شب ازان بود که نیست
    وقتی شایسته‌تر ز شب بهرِ وصال
    (میرزا اسدالله خان غالب دهلوی)

    شب کیا ہے؟ اہلِ کمال کے دل کا وہ سیاہ نقطہ کہ جو احساسات کا مرکز ہے۔۔۔ نیز شب زلف، خط اور خال کو حُسن کا سرمایہ بخشنے والی چیز بھی ہے۔۔۔ نبی کی معراج شب کے وقت اِس لیے ہوئی تھی کیونکہ شب سے بڑھ کر کوئی اور وقت وصال کے لیے شائستہ و مناسب نہیں ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏اپریل 25, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  19. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    24,936
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    بسوخت حافظ و در شرطِ عشق و جانبازی
    ہنوز برسرِ عہد و وفائے خویشتن است

    حافظ شیرازی

    حافظ جل گیا لیکن عشق اور جانبازی کی شرط میں ابھی تک اپنے عہد و پیمان اور وفا پر قائم ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  20. Tahir Naqash

    Tahir Naqash محفلین

    مراسلے:
    1
    گر یقیں دانم کہ برمن عاشقی
    از جمال خویش حیرانت کنم

    - شمس تبریزی
    (اگر مجھے یقین ہوجائے کہ تمہیں مجھسے محبت ہے
    تو میں اپنی خوبصورتی سے تمہیں حیران کردونگا)
     
    آخری تدوین: ‏فروری 7, 2014
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3

اس صفحے کی تشہیر