برائے اصلاح

Muhammad Ishfaq نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 23, 2020

  1. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    پانی پر حباب سی
    تیرا جو شباب سی
    میرا جو خیال تھا
    وہ تو اک سراب سی
    زندگی یوں گزری ہے
    جیسے احتساب سی
    وہ تو کوئی اور تھا
    یوں لگا جناب سی
    رات بھی اندھیری تھی
    رستہ بھی خراب سی
    اپنے کیوں خفا ہوئے
    میں کھلی کتاب سی
    فرش پر جو حبس ہے
    عرش پر سحاب سی
     
  2. محمّد احسن سمیع :راحل:

    محمّد احسن سمیع :راحل: محفلین

    مراسلے:
    477
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    ردیف سمجھ نہیں آرہا، کہیں اردو کے "جیسا" کے معنی میں آرہا ہے تو کہیں پنجابی والا "سی" محسوس ہوتا ہے!

    دوسرے یہ کہ جس بحر میں طبع آزمائی کی ہے وہ بھی لکھ دیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    ہزج مربع اشتر مقبوض
    فاعلن مفاعلن بحر ہے اور سی کا مطلب تھا تھی تھےاورجیسی جیسا ہے
     
  4. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    8,594
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    گویا راحل بھائی کا شبہ درست ثابت ہوا، آپ نے اردو اور پنجابی کو گڈ مڈ کردیا ہے۔ مزاحیہ نظم میں تو شاید ایسا کرنا جائز ہوتا لیکن سنجیدہ اردو شاعری میں مناسب نہیں کہ اردو میں پنجابی کی ملاوٹ کریں۔ جہاں جہاں آپ نے پنجابی لفظ ’’سی‘‘ استعمال کیا ہے وہاں تھا یا تھی کا محل ہے۔ بعض جگہوں پر آپ نے اپنے بیان کے مطابق جیسا یا جیسی کے معنوں میں استعمال کیا ہے، وہاں آپ کو مصرع تبدیل کرنا پڑے گا۔ ویسے بھی بہت سے مصرعے وزن میں نہیں۔

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  5. ارشد چوہدری

    ارشد چوہدری محفلین

    مراسلے:
    1,460
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Brooding
    صرف ( فاعلن مفاعلن) یہ کوئی معروف بحر تو نہیں لگتی۔سی کی جگہ تھا لکھا جائے تو اکثر مصرعوں میں بات قابلِ فہم بن سکتی ہے لیکن بحر کا مسئلہ پھر بھی رہے گا
     
  6. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    8,594
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    فاعلن مفاعلن جیسی چھوٹی بحر میں بھی غزل ہوسکتی ہے۔
     
  7. ارشد چوہدری

    ارشد چوہدری محفلین

    مراسلے:
    1,460
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Brooding
    ہاں بھائی بجا فرمایا آپ نے، دراصل میں معروف 24 بحروں میں لکھتا ہوں اس لئے شائد یہ بات کہہ دی
     
  8. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    اساتذہ اکرام ! شکریہ
    اس کا مطلب یہ ہوا ۔کہ سی پنجابی کا لفظ ہے۔اور سی کی جگہ تھا رکھنے سے غزل ہوسکتی ہے۔
     
  9. محمّد احسن سمیع :راحل:

    محمّد احسن سمیع :راحل: محفلین

    مراسلے:
    477
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    پنجابی "سی" اردو کے "تھا/تھے" کے معنی استعمال ہوتا ہے
    اردو میں "سی" ۔۔۔ "جیسی" کے معنی میں آتا ہے۔
    جیسا کہ میر کا مشہور مصرعہ ہے
    پنکھڑی اک گلاب کی "سی" ہے

    یہاں "سی" سے مراد "جیسی" ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    8,594
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    جی ہاں۔ اساتذہ کرام کے ساتھ ہم بھی یہی سمجھتے ہیں۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  11. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    پانی پر حباب تھا
    تیرا جو شباب تھا
    میرا جو خیال تھا
    وہ تو اک سراب تھا
    زندگی یوں گزری ہے
    جیسے احتساب تھا
    وہ تو کوئی اور تھا
    یوں لگا جناب تھا
    رات بھی اندھیری تھی
    رستہ بھی خراب تھا
    اپنے کیوں خفا ہوئے
    میں کھلی کتاب تھا
    فرش پر جو حبس ہے
    عرش پر سحاب تھا
     
  12. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    سی کا استعمال میر صاحب نے کیا ہے۔ تبھی تو ہم نے کیا۔
     
    آخری تدوین: ‏فروری 24, 2020
  13. محمّد احسن سمیع :راحل:

    محمّد احسن سمیع :راحل: محفلین

    مراسلے:
    477
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    مجھے آپ کی الجھن سمجھ نہیں آرہی۔ میرؔ ’’سی‘‘ پنجابی والی ’’سی‘‘ کے معنی میں استعمال کی ہے؟؟؟
     
  14. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    سر ! در اصل میں نے تو ‘‘سی ’’ اردو لفظ سمجھ کر استعمال کیاتھا ۔میرے ذہن میں نہیں آیا کہ یہ پنجابی لفظ ہے۔آگے آپ جو راہنمائی فرمائیں۔مجھے کیا کرنا ہے۔
     
  15. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    معزز اساتذہ اکرام !
    برائے مہربانی اس پر بھی اپنی رائے کا اظہارکریں اور راہنمائی فرمائیں۔ شکریہ
     
  16. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,271
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    شروع میں تو میں یہی سمجھا تھا کہ شاید عزیزی اشفاق پٹھان واقع ہوئے ہیں جو مذکر کی صورت میں بھی 'سا' کی جگی 'سی' استعمال کر گئے ہیں ۔ معلوم یہ ہوا کہ غیر پنجابی ہونے کی وجہ سے میرے فرشتوں کو بھی یہ خیال نہیں آیا کہ یہ پنجابی کا لفظ ہو سکتا ہے حالانکہ میں جانتا تھا کہ سی پنجابی میں تھا، تھی کے لیے استعمال کرتے ہیں لیکن کوئی اردو شاعری میں کر سکتا ہے، یہ گمان سے باہر تھا۔ میں نے تو اسے ہر جگہ 'جیسی' کے معنی میں لیا تھا۔
    بہر حال اب تو 'تھا' ردیف ہے۔ اس لیے وہ بحث ختم!
    پانی پر حباب تھا
    تیرا جو شباب تھا
    .. فاعلم مفاعلن کے افاعیل پر حروف کے اسقاط سے ہی درست باندھا جا سکتا ہے جو ہر جگہ گوارا نہیں کیا جا سکتا
    آب پر حباب تھا
    جو ترا شباب تھا
    بہتر یو گا

    میرا جو خیال تھا
    وہ تو اک سراب تھا
    ... ٹھیک، پہلا مصرع 'جو مرا' کہیں تو وہی معنی نکل سکتے ہیں؟

    زندگی یوں گزری ہے
    جیسے احتساب تھا
    ... یہ عجز بیان کا شکار ہے۔ زندگی خود احتساب نہیں، اس کا گزرنا 'ایک' احتساب ہو سکتا ہے۔

    وہ تو کوئی اور تھا
    یوں لگا جناب تھا
    ... جناب کے ساتھ 'تھا' کا استعمال بیک وقت تعظیم و تحقیر لگتا ہے، اس شعر کو نکال ہی دیں

    رات بھی اندھیری تھی
    رستہ بھی خراب تھا
    اندھیری کی ی اور رستہ کی ہ کا اسقاط ناگوار لگتا ہے

    اپنے کیوں خفا ہوئے
    میں کھلی کتاب تھا
    .. دوسرا مصرع عجز بیان ہے، مکمل بات 'میں تو ایک کھلی کتاب تھا'
    ہونا چاہیے تھا

    فرش پر جو حبس ہے
    عرش پر سحاب تھا
    .. فرش و عرش سے مراد زمین و آسمان ہر جگہ نہیں لیا جا سکتا
     
  17. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    محترمی ومکرمی الف عین صاحب !
    راہنمائی کے لیے بہت بہت شکریہ۔ بس یوں سمجھیے ابھی ہم طفلِ مکتبِ ادب ہیں آپ کی راہنمائی میں سیکھ رہے ہیں۔
     
    آخری تدوین: ‏فروری 27, 2020
  18. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    آ تے آ تے ٹل گیا
    جو بڑا عذاب تھا
    چہرہ کیسے دیکھتا
    منہ پر نقاب تھا
    ان اشعار پر بھی اپنی راہنمائی سے نوازیں۔
     
  19. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,271
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    آ تے آ تے ٹل گیا
    جو بڑا عذاب تھا
    ... درست

    چہرہ کیسے دیکھتا
    منہ پر نقاب تھا
    ... دوسرا مصرع بحر سے خارج ہو گیا ہے
    رخ پہ اک نقاب تھا
    یا
    رخ پہ جو....
    سے درست ہو سکتا ہے
     
  20. Muhammad Ishfaq

    Muhammad Ishfaq محفلین

    مراسلے:
    72
    شکریہ سر۔ ذرا انہیں بھی دیکھ لینا۔
    گھر میں آگ لگنے کا
    دکھ ہی بےحساب تھا
    غم نے یوں بھنا اِسے
    جیسے دل کباب تھا
     

اس صفحے کی تشہیر