فراز اگرچہ زور ہواؤں نے ڈال رکھا ہے ۔۔۔ اے عشق جنوں پیشہ

محب علوی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 31, 2007

  1. محب علوی

    محب علوی لائبریرین

    مراسلے:
    11,300
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    اگرچہ زور ہواؤں نے ڈال رکھا ہے
    مگر چراغ نے لو کو سنبھال رکھا ہے

    محبتوں میں تو ملنا ہے یا اجڑ جانا
    مزاجِ عشق میں کب اعتدال رکھا ہے

    ہوا میں نشہ ہی نشہ فضا میں رنگ ہی رنگ
    یہ کس نے پیرہن اپنا اچھا رکھا ہے

    بھلے دنوں کا بھروسا ہی کیا رہیں نہ رہیں
    سو میں نے رشتہ غم کو بحال رکھا ہے

    ہم ایسے سادہ دلوں کو وہ دوست ہو کہ خدا
    سبھی نے وعدہ فردا پہ ٹال رکھا ہے

    حسابِ لطفِ حریفاں کیا ہے جب تو کھلا
    کہ دوستوں نے زیادہ خیال رکھا ہے

    بھری بہار میں اک شاخ پر کھلا ہے گلاب
    کہ جیسے تو نے ہتھیلی پہ گال رکھا ہے

    فراز عشق کی دنیا تو خوبصورت تھی
    یہ کس نے فتنہ ہجر و وصال رکھا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  2. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہت خوب [​IMG]


    محبتوں میں تو ملنا ہے یا اجڑ جانا
    مزاجِ عشق میں کب اعتدال رکھا ہے

    یہ شعر میں نے پہلے بھی پڑھا ہے اور میرے پسندیدہ اشعار میں سے ہے۔۔لیکن یہ نہیں معلوم تھا کہ یہ فراز نے کہا ہے :)
    بہت شکریہ:)
     
  3. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    بہت خوب۔۔۔
     
  4. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,045
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    بہت خوب علوی صاحب۔

    لاجواب غزل ہے۔

    ۔
     
  5. سید زبیر

    سید زبیر محفلین

    مراسلے:
    4,362
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بھلے دنوں کا بھروسا ہی کیا رہیں نہ رہیں
    سو میں نے رشتہ غم کو بحال رکھا ہے
    بہت خوب
     
  6. امیر حمزہ

    امیر حمزہ محفلین

    مراسلے:
    44
    جھنڈا:
    Pakistan
    بہت عمدہ
     
  7. لاريب اخلاص

    لاريب اخلاص محفلین

    مراسلے:
    12,865
    خوب!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر