اقبال عظیم اک خطا ہم ازرہِ سادہ دلی کرتے رہے

فاروقی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 29, 2008

  1. فاروقی

    فاروقی معطل

    مراسلے:
    1,748
    اک خطا ہم ازرہِ سادہ دلی کرتے رہے
    ہر تبسم پر قیاسِ دوستی کرتے رہے

    ایسے لوگوں سے بھی ہم ملتے رہے دل کھول کر
    جو وفا کے نام پہ سوداگری کرتے رہے

    خود اندھیروں میں بسر کرتے رہے ہم زندگی
    دوسروں کے گھر میں لیکن روشنی کرتے رہے

    اپنے ہاتھوں آرزوؤں کا گلا گھونٹا کئے
    زندہ رہنے کے لیے ہم خود کشی کرتے رہے


    اس طرح اقبال گزری ہے ہماری زندگی
    زہرِ غم پیتے رہے اور شاعری کرتے رہے

    (پروفیسر اقبال عظیم)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  2. محسن حجازی

    محسن حجازی محفلین

    مراسلے:
    2,513
    موڈ:
    Breezy
    واہ! بہتر ہوتے جا رہے ہیں!
    لیکن اب کہ رنگ ایسا ہے کہ پڑھا نہیں جا رہا! :grin:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. فاروقی

    فاروقی معطل

    مراسلے:
    1,748
    بھئی رنگ کی شکایت تو ایڈمن حصرات سے کرنی چاہیے تھی آپ کو . . . . بہر حال میں نے نظر ثانی کر دی ہے. . .اب خوش ...اچھا تو مسکرائے تھوڑا سا.. . . . . .

    بہتر ہونے والی بات نے تو "مزا" ہی دے دیا. . .
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. نوید صادق

    نوید صادق محفلین

    مراسلے:
    2,278
    بہت خوب!!
    ہو سکے تو اقبال عظیم مرحوم کا مزید کلام پوسٹ کریں، کمال کے شاعر تھے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  5. جیا راؤ

    جیا راؤ محفلین

    مراسلے:
    1,888
    واہ واہ جناب
    مطلع تو بہت ہی اچھا لگا !
     
  6. فاروقی

    فاروقی معطل

    مراسلے:
    1,748
    ہاں ہاں مطلع آج صاف تھا اس لیے . . اچھا لگا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. نوید صادق

    نوید صادق محفلین

    مراسلے:
    2,278
    یہ اور بھی اچھا لگا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  8. جیا راؤ

    جیا راؤ محفلین

    مراسلے:
    1,888
    ہمیں مطلع ابر آلود پسند ہے۔:rolleyes:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. فاروقی

    فاروقی معطل

    مراسلے:
    1,748
    پر اپنی بات سے "پھر" رہی ہیں آپ . . . یہ کوئی اچھی عادت شمار نہیں ہوتی..
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. جیا راؤ

    جیا راؤ محفلین

    مراسلے:
    1,888
    ہم 'پھرنے' والوں میں سے نہیں !:rolleyes:
     
  11. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ فاروق صاحب خوبصورت غزل شیئر کرنے کیلیئے!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. فاروقی

    فاروقی معطل

    مراسلے:
    1,748
    ہاں ہاں شاید گھومنے والوں میں ہیں آپ :hatoff::roll:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. جیا راؤ

    جیا راؤ محفلین

    مراسلے:
    1,888
    بجا فرمایا:)
     
  14. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    24,847
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    مکمل غزل

    اک خطا ہم ازرہِ ساده دلی کرتے رہے
    ہر تبسم پر قیاسِ دوستی کرتے رہے

    ایسے لوگوں سے بھی ہم ملتے رہے دل کھول کر
    جو وفا کے نام پر سوداگری کرتے رہے

    خود اندھیروں میں بسر کرتے رہے ہم زندگی
    دوسروں کے گھر میں لیکن روشنی کرتے رہے

    سجدہ ریزی پائے ساقی پر کبھی ہم نے نہ کی
    اپنے اشکوں سے علاجِ تشنگی کرتے رہے

    اپنے ہاتھوں آرزوؤں کا گلا گھونٹا کیے
    زندہ رہنے کے لیے ہم خودکشی کرتے رہے

    ہر طرف جلتے رہے بجھتے رہے جھوٹے چراغ
    اور ہم سامانِ جشنِ تیرگی کرتے رہے

    حالِ دل کہہ دیں کسی سے، بارہا سوچا مگر
    اس ارادے کو ہمیشہ ملتوی کرتے رہے

    خود کو دیتے بھی رہے ترکِ تعلق کا فریب
    اور درپردہ کسی کو یاد بھی کرتے رہے

    اس طرح اقبالؔ گزری ہے ہماری زندگی
    زہرِ غم پیتے رہے اور شاعری کرتے رہے

    ٭٭٭
    اقبالؔ عظیم
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر