اخفائے راز و ضبطِ غمِ بے بہا کا نام

عاطف ملک نے 'آپ کی شاعری (پابندِ بحور شاعری)' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 28, 2019

  1. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,240
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    اخفائے راز و ضبطِ غمِ بے بہا کا نام
    لینے لگا ہوں آج میں پھر سے وفا کا نام

    جو میرے جی میں آئے کروں گا وہی حضور
    گویا ہوائے نفس ہے میرے خدا کا نام

    دل پر نہیں ہے زور ، مگر ضبط میرا دیکھ
    لب پر نہ آئے گا کبھی اس بے وفا کا نام

    کیا چیز ہے کہ حسنِ تخیل کہوں جسے!
    شعروں میں شعریت ہے بھلا کس بلا کا نام!

    دل میں مرے بسے ہوں ہزاروں صنم تو کیا
    ہونٹوں سے اپنے لے تو رہا ہوں خدا کا نام

    اک بار استجاب سے محروم کیا ہوئے
    عاطفؔ لبوں پہ آ نہ سکا پھر دعا کا نام

    عاطفؔ ملک
    جولائی ۲۰۱۹​
     
    • زبردست زبردست × 5
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. فلسفی

    فلسفی محفلین

    مراسلے:
    2,584
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    واہ ڈاکٹر صاحب، تنہائی کام دکھا رہی ہے۔ بہت خوب
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  3. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    25,382
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بہت خوب
     
  4. ابن توقیر

    ابن توقیر محفلین

    مراسلے:
    3,720
    بہت خوب جناب۔
     
  5. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    9,888
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    خوبصورت خوبصورت۔
     
  6. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    3,150
    کیا بات ہے
    بہت منجھی ہوئی شاعری ہے
     
  7. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی لائبریرین

    مراسلے:
    18,770
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    عمدہ اور شاندار غزل
    یہ شعر تو بہت پسند آیا ۔
    لاجواب زبردست۔
     
  8. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,240
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    جزاک اللہ۔
    تمام احباب کا بہت بہت شکریہ:)
     
    • دوستانہ دوستانہ × 4

اس صفحے کی تشہیر