پی ٹی ایم رہنما محسن داوڑ کی ساتھیوں کے ہمراہ میرانشاہ میں چیک پوسٹ پر فائرنگ

جاسم محمد نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 26, 2019

  1. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,325
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    بھائیوں، پارلیمنٹ، سینیٹ اور انتخابی نمائندگی سے کس نے انکار کیا ہے؟

    بات غیرقانونی چیک پوسٹوں اور غیرانسانی سلوک کی ہورہی ہے۔ پاکستانی فوج کا کلئیرنس کے اعلان کے بعد قبائل علاقوں میں چیک پوسٹس غیرقانونی ہیں۔
    آپ دہشتگردانہ رویہ اختیار نہ کریں عوام آپ کو کچھ کہے گی نہیں۔ جو لوگ ان واقعات کو لسانی رنگ میں دیکھتے ہیں ان کو اپنا سوچ بدل دینا چاہیے۔
    فوج کو حدبندی کا اختیار کس نے دیا ہے۔ جو بھی اقدام ہو عوامی نمائندوں سے مشاورت کے بعد اٹھایا جائے۔
     
  2. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,325
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    یہ تو آپ ہندؤں بنیے سے پوچھ لیتے تو بہتر ہوتا۔ آپ کی بہادری سے انکار نہیں ہوسکتا۔
     
  3. چودھری مصطفی

    چودھری مصطفی محفلین

    مراسلے:
    403
    عوامی نمائندے صوبائی اور قومی اسمبلی میں موجود ہیں، وہ اپنی رائے دہی استعمال کر سکتے ہیں ۔ اس گروہ نے بذات خود انتخابات کے راستے سے انکار کیا۔
    کیا حالات ایسے ہیں کہ فوج کی غیر موجودگی میں امن قائم رہے؟
    افغانستان سے دراندازوں کو روکا جا سکے؟
    طالبان کو دوبارہ منظم ہونے سے روکا جا سکے؟
    ہم نہیں سمجھتے کہ ایسا ہے۔
    البتہ میں یہ ضرور سمجھتا ہونا کہ یہ تمام فیصلے وزیر اعظم اور پارلیمنٹ کو کرنے چاہییں نہ کہ فوج کو۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  4. چودھری مصطفی

    چودھری مصطفی محفلین

    مراسلے:
    403
    آپ ہندو بنیے پہ حملہ کر لے دیکھ لیجئے پتا چل جائے گا کتنے پانی میں ہین۔
     
  5. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    8,774
    آئین پاکستان افواج کو قانونایہ حق دیتا ہے کہ وہ کسی بھی علاقہ کو سیکورٹی حصار ڈکلیئر کر کے وہاں چیک پوسٹس، چھاؤنیاں بنا سکتے ہیں۔ اور اس کام کیلئے انہیں حکومت وقت یا عدالت سے کچھ بھی پوچھنے کی ضرورت نہیں ہے۔
    فوج قبائیلی علاقہ سول حکومت کے قیام کے بعد چھوڑ دے گی۔ یہ ٹرانسیشن فیز ہے جس میں ابھی کچھ وقت لگے گا۔
     
  6. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    8,774
    اگر سیکورٹی سے متعلق فیصلے وزیر اعظم پر چھوڑے جاتے تو آج ملک میں جگہ جگہ طالبان کے دفاتر قائم ہوتے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  7. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,325
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    یہ تب ہے جب ایمرجنسی اور حالات خراب ہو۔ پرامن دور میں ایسا کوئی اختیار نہیں فوج کو کہ وہ کہیں بھی جاکر ڈھیرے ڈال دے۔
     
  8. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,325
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    کب؟
     
  9. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    8,774
    پی ٹی ایم نے انتخابی سیاست کو خیرباد نہیں کہا ہے۔ البتہ انتخابات ہونے تک مسلسل بے صبری کا مظاہرہ ضرور کر رہی ہے۔
    ووٹ پولنگ بوتھ میں پڑتے ہیں، آرمی چیک پوسٹ پر نہیں۔
     
  10. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,325
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    اب کیا کرنا ہے، پاکستانی فوج حفاظت کررہی ہے نا۔ اپنی مسلمان قوم کے خلاف ہتھیار کیسے اٹھا سکتے ہیں۔
    اس کے لیے حامد کرزئی اور اشرف غنی جیسے کٹھ پتلی نہیں، بلکہ ان بنیوں کو سبق سکھانے والوں کا جانشین چاہیے۔
     
  11. چودھری مصطفی

    چودھری مصطفی محفلین

    مراسلے:
    403
    منظور پشتین کے بیان موجود ہیں جو پی ٹی این انتخابات میں حصہ نہیں لے گی، اور محسن داوڑ اور علی وزیر اپنی ذاتی حیثیت سے انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں۔
     
  12. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    8,774
    اگر یہ سچ ہے تو پھر سیکورٹی اداروں کا پی ٹی ایم سے متعلق مؤقف درست ثابت ہوا ہے۔
    انتخابی سیاست میں حصہ لئے بغیر صرف احتجاج، مظاہروں اور آرمی چیک پوسٹس پر حملے کر کے عوام کی مشکلات حل نہیں کی جا سکتی۔
     
  13. چودھری مصطفی

    چودھری مصطفی محفلین

    مراسلے:
    403
    قبلہ جذباتیت سے حقیقت نہیں بدلتی۔
    آج کا دور وہ ہے کہ ایک ۲۵ سال کی عورت نیل پولش لگاتی ہے، میک آپ کرتی ہے، اور پھر بی۔۵۲ میں بیٹھ کر ۲۰-۲۵ منٹ میں کار پٹ بمبنگ کر کے چلی جاتی ہے، اور زمین پہ بیسیوں مرد، عورت اور بچے ہلاک ہو جاتے ہیں۔
    ہم سب کا فائدہ امن، استحکام اور تکنیکی ترقی میں ہے۔
    ورنہ جنگیں تو چل ہی رہی ہیں۔
     
  14. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,325
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    کیا تحریک اور احتجاج کے لیے سیاسی ہونا ضروری ہے؟
    کوئی بھی پاکستانی چاہے اس کا تعلق کسی سیاسی جماعت سے ہو یا نہ ہو، احتجاج کا حق رکھتا ہے۔ میرے اور آپ کے بیان سے کچھ نہیں ہوتا۔
     
  15. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,325
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    اچھا تو یہ تھی آپ کا بھارت کے ناقابل شکست ہونے کی وجہ۔ آپ شائد جنگ جیتنے اور تباہی مچانے کا فرق نہیں سمجھتے۔
     
  16. dxbgraphics

    dxbgraphics محفلین

    مراسلے:
    5,085
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    افغان دراصل خیبرپختونخوا میں ایک قوم ہے نہ کہ افغانستان والے افغان۔ اور نادرا ریکارڈ میں بھی باقاعدہ افغان کے نام سے ہی قومیت بتائی اور درج کی جاتی ہے
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  17. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    16,633
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • غمناک غمناک × 1
  18. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    8,774
    پھر لبٹرڈ کہتے ہیں کہ ان لوگوں کو غدار نہ کہو۔ یہ تو اصل حب الوطن ہیں۔
     
  19. چودھری مصطفی

    چودھری مصطفی محفلین

    مراسلے:
    403
    بالکل رکھتا ہے لیکن احتجاج کرتے ہوئے کسی کے کام میں مداخلت کا حق نہیں رکھتا۔ چوکیوں پہ جا کر فوجیوں کو دھمکانا اور پتھراؤ کرنا احتجاج نہیں بلکہ اکسانا ہے۔
     
  20. چودھری مصطفی

    چودھری مصطفی محفلین

    مراسلے:
    403
    آپ کے نزدیک جیت کا معیار کچھ اور ہو گا، میرے نزدیک جنگ کے نتائج اور اثرات اس کا تعین کرتے ہیں۔
     

اس صفحے کی تشہیر