پیشہ کےدوران جب آپ نے کٹھنائیوں کے باوجود ایمان داری سے کام کیا

جاسمن نے 'پیشہ ورانہ زندگی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 26, 2014

  1. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    15,038
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    رشوت کی آفر تھی
    بہت دباؤ تھا
    تگڑی سفارش تھی
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔لیکن۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    آپ کسی دباؤ کے آگے نہ جھُکے
    کوئی رشوت قبول نہ کی
    کسی کی سفارش کو لفٹ نہ کرائی
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔یا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    آپ نے اپنی جاب بغیر سفارش،رشوت یا دباؤ کے حاصل کی ہو۔۔۔یا اپنا کوئی ایسا جائز کام بغیر کسی ناجائز ہتھکنڈے کے کرایا ہو جو بظاہر ناممکن لگتا ہو۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  2. منصور مکرم

    منصور مکرم محفلین

    مراسلے:
    1,961
    جھنڈا:
    Pakistan
    اسکو تو پاگل پن کہتے ہیں شائد۔

    ہمارے ایک رشتہ دار ہیں۔محکمہ ٹیلیفون میں ڈائریکٹر تھے۔ مسئلہ اسکے لئے یہ بن گیا کہ اسکو ایسے مقام پر تعینات کیا گیا تھا جو بیرونی ممالک کی کمپنیوں سے معاہدے کرتے تھے۔

    ایک چائینہ کمپنی نے منسٹر کے ساتھ سازباز کرکے دو کروڑ زر ضمانت نہ جمع کروانے کی کوشش کی۔کمپنی کی فائل جب اس بندے کے پاس پہنچی تو فورا اس نے اعتراض کیا ،لیکن ادھر نیچے سے اوپر تک سب ملے تھے سوائے اسکے۔

    بات منسٹر تک پہنچی تو انہوں نے لکھ دیا کہ یہ بندہ ہماری ضرورت کا نہیں ہے۔اسلئے اسکو فارغ کردیا جائے۔

    اس بندے کی 30 سالہ نوکری داؤ پر لگ گئی،منسٹر نے نیب چیف کو بھی بتایا کہ اس پر کیس بناؤ۔ چنانچہ یہی ہوا۔

    بندے جھوٹے کیس میں پکڑا گیا، نوکری ختم ۔50 لاکھ تک پینشن ضبط۔ بندہ جیل گیا ۔میں نے بڑی تگ و دو کی اسکے لئے ۔

    بہر حال بندہ نکل آیا۔ لیکن ان چیزوں سے ہاتھ دھو بیٹھا ۔

    کہنا یہ ہے کہ آج کل کے دور میں صدق دل کے ساتھ شائد سرکاری نوکری مشکل ترین کاموں میں سے ہے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 3
    • متفق متفق × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. ناصر علی مرزا

    ناصر علی مرزا معطل

    مراسلے:
    1,234
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    بات ایمان کی مضبوطی کی ہے، پھر کامیابی کا تصور کیا ہے، کیا کامیابی اس چیز کا نام ہے کہ بندہ دنیا کی نعمتوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ؟؟ نہیں ایک مسلم کے لیے کامیابی کا معیار مادی دنیا سے الگ ہے کامیابی نام ہے کہ بندہ اپنا دامن بچا کر سچائی کے راستے پر گامزن رہے ۔ اور اللہ اور اسکے رسول :pbuh: کے احکامات کی پیروی کرتا رہے
    میرا تجربہ اور ایمان ہے کہ جو بھی کام خلوص دل سے صرف اللہ کی رضا اور خوشنودی حاصل کرنے کے لیے کیا جائے، اس کے اثرات حیرت انگیز ہوتے ہیں، پریشانیوں سے نکلنے کے ان دیکھے وسائل پیدا ہو جاتے ہیں۔
    بات صرف خلوص دل کی ہے،
    اگر ہم کبھی اپنا محاسبہ کریں اور سوچیں کہ آج کے دن میں ،۲۴ گھنٹوں میں ،، میں نے کوئی ایسا کام کیا ہے جو صرف اللہ کی رضا حاصل کرنے لیے ہو۔ شاید میرے سمیت بہت سے افراد کے لیے اس کا جواب مایوس کن ہو۔

    میرے پاکستانی مینجر نے آج سے ۳۰ سال قبل ریلوے کی نوکری اس ہی بنا پر چھوڑ دی تھی کہ ان کو ایک کام میں رشوت کی آفر ہوئی تھی لیکن انہوں نے اس عمل کا حصہ بننے سے انکار کر دیا اور نوکری چھوڑ دی کہ ان کو پتہ چل گیا تھا کہ اگر وہ ان کے ساتھ شامل نہ ہوئے تو جان سے ہاتھ دھونے پڑیں گے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  4. dxbgraphics

    dxbgraphics محفلین

    مراسلے:
    5,388
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ایمانداری سے کام کرنا مشکل نہیں۔ البتہ جہاں جان کا خطرہ ہو وہاں دو ہی راستے ہوتےہیں کھائیں یا سائیڈ پر ہوجائیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  5. x boy

    x boy محفلین

    مراسلے:
    6,208
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    موڈ:
    Breezy
    ایسے جگہہ سے آہستہ آہستہ اہتمام کے ساتھ ہٹ جائیں جہاں آپ کو اللہ کی پکڑ پڑجانے کا ڈر ہو،،
    کسی نے ایک مفتی کو لکھا کہ جناب میں پاکستانی ٹی وی چینلز میں نیوز پڑھتا ہوں چونکہ ان چینلز کا کام و زریعہ معاش اچھے برے دونوں ہیں جس کی وجہ سے میں اپنے تنخواہ کو شک کی نگاہ سے دیکھتا ہوں ، کیا میں یہ نوکری چھوڑ دوں، جواب میں مفتی صاحب نے لکھا کہ نوکری مت چھوڑیں یہ کام کرتے رہیں اور ساتھ ساتھ اپنے لئے دوسری نوکری جو اس سے بہتر ہو ڈھونڈتے رہئے ۔ اگر متبادل تنخواہ یا اس سے اچھی تنخواہ والی مل جائے تو اس کو خیر باد کہہ دیں۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    15,038
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    پہلے بچے کو اللہ نے اپنے پاس بُلا لیا۔ سول ہسپتال تھا۔پھر بھی خرچہ تقریباََ 18000روپے ہو گیا۔ایک اللہ کے نیک بندے نے بغیر کسی لالچ کے ساڑھے آٹھ ہزار کا بل بنوا دیا۔وہ میڈیکل بل کلرک کے ہاتھ خزانے بھجوایا تو کٹ کٹا کر ساڑھے چار ہزار کا رہ گیا۔پھر مٹھائی مانگی گئی۔ کہا کہ اوّل تو مٹھائی اپنے جاننے والوں کو کھلائی جاتی ہے۔ دوئم بچہ تو اللہ نے واپس لے لیا۔
    بل ویسے ہی واپس آ گیا۔ دوسری بار بھیجا۔ دو سو روپے مانگے گئے۔ تیسری بار بھیجا تو پھر دو سو کی رشوت نہ دینے سے واپس آ گیا۔ پھر پھاڑ کر پھینک دیا۔
    کچھ لوگوں نے بے وقوف کہا۔ 2002 میں ساڑھے چار ہزار ایک اچھی رقم تھی۔
    اللہ کا شکر ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  7. تلمیذ

    تلمیذ لائبریرین

    مراسلے:
    3,914
    موڈ:
    Cool
    یہ مواقع سنگ دلی، حُب دنیا اور خوف خدا کے درمیان کشمکش کے ہوتے ہیں اور ذات باری کی توفیق اور فضل سے ہی بندہ اس گرداب سے نکل سکتا ہے۔
     
    • متفق متفق × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    سرکاری نوکری میں رشوت کی پہلی آفر دو کروڑ کی ہوئی اور پھر آخری مرتبہ 18 کروڑ کی۔۔۔ اس کے بعد ہم نے وہ ملازمت چھوڑ دی۔
    اب سوچتا ہوں کہ لے ہی لیتا۔۔۔ چلو اگلی بار ان شاء اللہ تعالیٰ ہو العزیز:)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  9. محمود احمد غزنوی

    محمود احمد غزنوی محفلین

    مراسلے:
    6,435
    موڈ:
    Torn
    ان آفرز کے بدلے میں آپ سے کن خدمات کی ادائیگی کا تقاضا کیا گیا تھا۔ کچھ اس پر بھی روشنی ڈالئیے اگر مناسب ہو تو۔۔۔۔:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. ناصر علی مرزا

    ناصر علی مرزا معطل

    مراسلے:
    1,234
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    آخری لائن مذاق لگتی ہے، اگر ایسا ہوتا تو
    آپ پہلی بار ہی یہ کام کر دیتے، میرا خیال ہے کہ آپ نہیں کریں گے
     
  11. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    آپ کو میں زندہ اچھا نہیں لگتا کیا؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 5
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    میں نے ہر گز کوئی مذاق نہیں کیا۔۔۔
    میں نے لکھا ہے کہ "اگر" اللہ نے چاہا تو۔۔۔
    کیا اللہ ایسا چاہے گا؟
     
    • زبردست زبردست × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. محمد اسلم

    محمد اسلم محفلین

    مراسلے:
    701
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Sleepy
    بھئی اللہ نے جو چاہا کر دیا ،،،، اب بات ہمارے چاہنے یا نہ چاہنے کی ہے۔
     
  14. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    میرے والد کا جب بائی پاس کا آپریشن ہوا تو ان دنوں میں پاکستان سے باہر تھا، بلکہ بائی پاس کے فوراً بعد باہر چلا آیا تھا۔ بعد میں مختلف پیچیدگیاں پیدا ہوئیں تو ان کا انتقال ہو گیا۔ ان کے پینشن کے کاغذات یا میڈیکل اخراجات ری امبرس کرانے کی بات آئی تو اس وقت میڈیکل سپرنٹنڈنٹ وغیرہ سارے ابو کے گاڑھے بلکہ لنگوٹیئے دوست تھے۔ چھوٹا بھائی بتاتا ہے کہ جب اس وہ بل لے کر ان کے پاس دستخط کے لئے گیا تو انہی لوگوں نے منہ پر کہا کہ اتنے پیسے دیں گے تو بل منظور ہوگا ورنہ نہیں اور ساتھ ہی جتا بھی دیا کہ آپ کے والد بے شک رشوت کے مخالف تھے اور ہمارے دوست بھی، لیکن ہمارا تو کام ہی اسی پر چل رہا ہے۔ بھائی سے میں نے کہا کہ گولی مارو، چند لاکھ کے لئے کیا ان دو ٹکے کے آدمیوں کی منت کرنا یا انہیں پیسے کھلانا۔ ابو کی زندگی موت کا مسئلہ ہوتا تو بھی سوچا جا سکتا تھا، اب وہ ویسے بھی نہیں رہے تو ان لوگوں سے کوئی تعلق نہیں رکھنا۔ عجیب بات یہ دیکھیں کہ اسی میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کے بھائی کا بھی چند ماہ بعد بائی پاس آپریشن ہوا اور اس کے اخراجات کو انہوں نے سرکاری کھاتے سے ادا کرانے کی کوشش کی اور ان کے اپنے ساتھیوں نے ان سے پیسے مانگے اور یہ ڈٹ گئے کہ حرام کھایا جاتا ہے، کھلانے کی عادت نہیں۔ نتیجہ یہ نکلا کہ سگے بھائی کی آپریشن کے بعد دوسرے آپریشن کو روکے رکھا گیا اور چند دن بعد وہ فوت ہو گیا۔ ایسے شقی القلب انسان بھی ہوتے ہیں
    بعد میں جنرل مشرف کی صدارتی ویب سائٹ کا پتہ چلا تو میں نے ایسے ہی شکایت درج کرا دی۔ تین دن بعد مشرف کے ملٹری سیکریٹری کا فون آیا تھا یہاں میرے پاس۔ اس نے چند بنیادی تفصیلات پوچھی تھیں اور شاید ہفتے کے اندر اندر سارے پیسے امی کے اکاؤنٹ میں ٹرانسفر ہو گئے تھے۔ جنرل مشرف کی حمایت کرنا اس لئے مجھے اچھا لگتا ہے :)
     
    • معلوماتی معلوماتی × 5
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  15. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    یہ آپکا ذاتی معاملہ ہے۔ لیکن ایک فوجی آمر چاہے فرشتہ ہی کیوں نہ ہو، عوامی نمائندگی کے بغیر عسکری طاقت کے بل بوتے پر عوامی سیاسی قوت بننے کی ناکام کوشش کرتا ہے۔ یہ میں اسلئے کہہ رہا ہوں کیونکہ صدام ، قذافی، حسنی مبارک اور اب السیسی یہی ڈرامے بازی دیگر مسلم اکثریت ممالک میں کر چکے ہیں۔ فوجی آمر کا صدق دل سے قوم پرست ہونا کوئی اچھنبے کی بات نہیں۔ کسی بھی ملک کی فوج غداروں کو بھرتی نہیں کرتی۔ لیکن اسکا کام ملکی سرحدوں کی حفاظت ہے نہ کہ قومی سیاست اور اداروں میں مداخلت۔ اگر پاکستانی جمہوریت آج ناکام ہے تو اسمیں سب سے بڑا کردار ہماری عسکری قیادت کا ہے جو 1953 کے قادیانی مخالف فسادات کے بعد سے بہانے بنا کر یہاں اقتدار پر براجمان ہو جاتی ہے:
    http://en.wikipedia.org/wiki/1953_Lahore_riots

    اس حوالہ سے عمران خان اور تحریک انصاف کا مؤقف بالکل معقول ہے کہ ایک خراب جمہوریت کا حل آمریت نہیں بلکہ اس سے بہتر جمہوریت ہے۔ جمہوریہ بھارت کی مثال آپکے سامنے ہے۔ 1 ارب آبادی والے ملک میں حالیہ الیکشن میں حزب اختلاف نے بغیر دھاندلی کے الزامات کے الیکشن کے نتائج کو بخوشی قبول کیا۔ اسکے برعکس 1970 کے عام انتخابات سے مسلسل جمہوریہ پاکستان میں ہر الیکشن کے بعد ہارنے والی سیاسی جماعتیں دھاندلی کا الزام لگاتی ہیں۔ یعنی ان فوجی آمروں کی مداخلت کی وجہ سے نظام جمہوریت پر سے اعتماد صرف عوام کا نہیں اٹھا، بلکہ دیگر سیاسی جماعتیں بھی اسکا شکار ہو چکی ہیں۔
     
    آخری تدوین: ‏مئی 30, 2014
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  16. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    15,038
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    نوکری کے لئے اپلائی کیا تو اعلیٰ ملازمت پر فائز ایک شخص نے آفر کی تھی سفارش کی۔ الحمداللہ۔ اللہ نے بغیر کسی دُنیاوی وسیلے کے نوکری دی۔
     
    آخری تدوین: ‏جون 3, 2014
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  17. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    آپ کے ماموں واقعی مرزائی ہیں؟ عام طور پر مرزائی تحقیر کے لئے کہتے ہیں، جیسے مسلمانوں کو محمڈن کہنا۔ احمدی کہہ لیجئے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. رانا

    رانا محفلین

    مراسلے:
    2,832
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    اگر کسی نے اپنے دوست کی دوستی کا لحاظ کرتے ہوئے سفارش کی آفر کرہی دی ہو تو کبھی نہیں سنا کہ کسی نے کہا ہو کہ ایک "سُنی" یا "شعیہ" نے مجھے سفارش کی آفر کی تھی!! اوپر اتنے مراسلے پوسٹ ہوئے ہیں لیکن کسی نے بھی متعلقہ بندے کے مذہب کا حوالہ نہیں دیا کہ کوئی سینس ہی نہیں بنتا۔
     
    • متفق متفق × 2
  19. نایاب

    نایاب لائبریرین

    مراسلے:
    13,421
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Goofy
    جب بھی اس دھاگے پر نگاہ پڑتی ہے ۔ شرمندگی سی شرمندگی ہوتی ہے ۔
    مگر " بے ایمانی " چیز ہے ایسی چھوڑی نہیں جاتی ۔۔۔۔۔۔۔۔
    یا پھر " چھٹتی نہیں یہ کافر منہ سے لگی ہوئی "
    اس پردیس میں اپنے پیشے میں تو ایمانداری کا جذبہ تو ڈھونڈے سے نہیں ملتا ۔
    بس جو گاہک ایماندار دکھے ہے اسی پہ اپنی چھری تیز چلے ہے ۔
    اور جو خرانٹ ملے ہے ۔۔ وہ ہمیں چھری پھیر دے ہے ۔
    ویسے بھی اپنے معاشرے میں یا یہاں کے معاشرے میں ایمانداری والا " ہما " خال خال ہی دکھائی پڑا ۔۔۔
    بڑے بڑے مشہور سکہ بند ایمانداروں کو لاکھوں ٹھکراتے اور چند ٹکوں پہ بکتے دیکھا ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 2
    • متفق متفق × 1
  20. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    15,038
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    ایسا ہی ہے نایاب بھائی! آپ نے سچ کہا۔
     
    آخری تدوین: ‏جون 3, 2014
    • معلوماتی معلوماتی × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر