ٹیکسلا میوزیم اور دھرماراجیکا اسٹوپا کی سیر

عبدالقیوم چوہدری نے 'اراکین کے سفرنامے' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 26, 2019

  1. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    گو اس زمرے کو استعمال کرتے ہوئے میں یہ کتھا پیش کر رہا ہوں ورنہ یہ سارا ’سفر نامہ‘ دو گھنٹے سے بھی کم وقت پر محیط ہے۔ :)

    ہوا یہ کہ مجھے ایک درمیانے سے ’صاحب‘ (یعنی نا چھوٹا افسر نا بڑا افسر ) سے ملنے اسلام آباد کی ایک یونیورسٹی میں جانا تھا۔ لگ بھگ گیارہ بجے انھیں کال کیا تو وہ کہنے لگے ’میں تو آج ٹیکسلا آیا ہوا ہوں اور سارا دن یہیں گزرنا ہے، آپ چاہیں تو مجھے یہیں مل سکتے ہیں‘۔ یہ سن کر میرا تو وہ حال ہوا جو کسی بلی کے بھاگوں وغیرہ کا کس محاورے میں ذکر ہے۔ ان کا موجودہ محل وقوع جانا تو علم ہوا کہ صاحب |UET ٹیکسلا میں دن بِتا رہے ہیں۔

    کچھ ہی دیر میں اپنے ایک عزیز کے ساتھ وہاں جا پہنچا اور ان سے ملاقات کر لی۔ کوئی گھنٹہ بھر بعد واپسی شروع ہوئی تو راستے میں ٹیکسلا میوزیم کے پاس سے گزرتے ہوئے اپنے اس عزیز سے پوچھا کہ ’کیا اس نے میوزیم دیکھ رکھا ہے‘، بولے ’نہیں۔۔ یا شاید کہیں بچپن میں دیکھا ہو‘۔ پھر پوچھا ’ اگر وقت ہے تو پھر سے دیکھ لیں‘ ۔۔ بولے، ’دیکھ لیتے ہیں‘۔ اور ہم نے وہیں رک جانے کا فیصلہ کیا۔ موٹر سائیکل سٹینڈ پر لگائی اور اندر جا گھسے۔

    اندر جاتے ہی بائیں ہاتھ ٹکٹ گھر ہے۔ دو ٹکٹ مانگے اور مالیت پوچھی۔ جواب آیا 40 روپے۔ میز پر رقم رکھی، ٹکٹ اٹھائے اور آگے نکل لیے۔ سامنے یہ عمارت موجود تھی۔
    [​IMG]
    گوگل امیج

    اندر داخل ہوئے تو دائیں طرف ایک صحتمند خاتون کرسی پر بیٹھی دکھائی دیں۔ ان کے پاس سے گزر کر تین چار قدم ہی آگے بڑھے ہوں گے کہ مقامی لب و لہجے میں آواز آئی ’ ٹِکُٹ کِیندے نیں!‘ ۔۔ میں نے جواب دیا ’جی آ‘۔ جواباً بولیں ’ماں تکاؤ دا‘۔۔ ہم نے جھٹ واسکٹ کی جیب سے نکال کر حوالے کیے۔ انھوں نے بغیر دیکھے انھیں تقریباً درمیان سے پھاڑا اور پھر سے ہمارے ہاتھ میں تھما دئیے۔ ہم دوبارہ سے آہستہ آہستہ آگے بڑھنے لگ گئے۔

    کوئی دو سال قبل آخری چکر لگا تھا تو یہ علم ہوا کہ میوزیم کے اندر تصویر بنانا منع ہے۔ اس بار اندر گھومتے پھرتے لوگوں کو سامنے سمٹ بھی اور چوری چھپے بھی تصاویر بناتے دیکھا تو کچھ دیر تو سوچتا اور گھومتا ہی رہا کہ بناؤں یا نہ بناؤں ۔۔۔۔ لیکن پھر ایک طرف کا چکر کاٹ کر واپس اسی خاتون کے قریب پہنچے تو دریافت کیا ’فوٹو کِھچ سکنے آں‘ تو بولیں۔۔۔ اُنج تے جازت نئی، پر چَمُک (فلیش) بند کر کے تے آواز بند کر کے پاویں بنا کینو‘ ۔۔ اس وقت تک آدھے سے زیادہ میوزیم گھوم چکے تھے سو جو بنا پائے وہ حاضر خدمت ہیں۔ :)
     
    • زبردست زبردست × 6
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    [​IMG]
    [​IMG] [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • زبردست زبردست × 4
  3. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    [​IMG] [​IMG] [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 3
  4. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    [​IMG] [​IMG] [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 3
  5. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    [​IMG] [​IMG] [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 3
  6. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    [​IMG] [​IMG] [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 4
  7. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 4
  8. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,894
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    چوہدری جی اگر ہر تصویر کے ساتھ تھوڑی معلومات بھی دیتے جائیں تو کیا ہی اچھی بات ہوگی ۔ہمارے علم میں ان کی قیمتی ہونے کی وجہ بھی سمجھ آجائے گی ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    تمام آلات، برتن، مورتیاں وغیرہ قبل از مسیح سے لیکر 3 سے 5 سو سال بعد از مسیح تک کے وقت کی ہیں۔ مزید باریک چھان بین کے لیے پھر کسی دن چکر لگانا پڑے گا۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 4
    • زبردست زبردست × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  10. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    جو آدھے سے زیادہ میوزیم کیمرے کی دسترس سے بچ گیا اسے کسی اور دن پر موقوف کیا کہ ارادہ ایک نزدیکی کھنڈر تک جانے کا تھا۔ باہر نکلے تو ایک تصویر اور بنائی۔میوزیم ایک وسیع وعریض باغ میں بنا ہوا ہے، نہایت پرسکون اور آرام دہ جگہ ہے۔ جگہ جگہ بینچ لگے ہوئے اور دل چاہ رہا تھا کہ یہاں کچھ دیر مزید قیام کیا جائے اور اس خاموشی کو مزید اندر اتارا جائے لیکن ’ سکوں محال ہے قدرت کے کارخانے میں‘ ۔۔۔ سو باہر نکلتے ہی بنی۔

    [​IMG]
     
    • زبردست زبردست × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  11. فلسفی

    فلسفی محفلین

    مراسلے:
    2,584
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    یہ کون سی زبان ہے؟ پوٹھوہاری؟
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  12. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    14,251
    گوگل ٹرانسلیٹ کر کے دیکھیں :)
     
  13. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یہ پوٹھوہاری اور ہندکو کا مکسچر ہے۔ ویسے اسے ہم گھیبی لہجہ کہہ سکتے ہیں جو پوٹھوہاری کا ایک ذیلی لہجہ ہے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 3
  14. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    سٹینڈ سے موٹر سائیکل نکالی اور عزیز سے پوچھا کہ ایک دو جگہ اور گھوم لیں۔ ان کی طرح سے اثبات میں جواب ملا تو دھرماراجیکا اسٹوپا کی طرف دھیان گیا جو میوزیم سے بمشکل دو سوا دو کلومیٹر ہے۔
    [​IMG]


    میوزیم سے باہر نکلیں تو بائیں ہاتھ ’بِھڑ ماؤنڈ‘ نامی کھنڈرات ہیں۔ کیونکہ بچپن میں ہم یہاں بے شمار کرکٹ میچ کھیل چکے تھے سو اسے فہرست سے نکال باہر کیا کہ اس کا چپہ چپہ ہم نے چھان رکھا تھا۔
    [​IMG]
    [​IMG]
    گوگل امیج
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  15. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,475
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    یونیورسٹی کی بھی سیر کرا دیتے۔ وہاں گئے پندرہ بیس سال گزرے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  16. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    37,475
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    جب آخری بار میوزیم گیا تھا تو جگہ جگہ لکھا تھا کہ تصویر بنانا منع ہے لیکن میوزیم ہی کا ایک کارندہ ادھر ادھر دیکھ کر کہ کوئی بڑا دیکھ تو نہیں رہا مجھے مشورہ دے رہا تھا کہ تصویر لے لوں
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  17. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    14,251
    یہ کھنڈرات کسی زمانہ میں بدھمت کے علم و معرفت کے مراکز ہوتے تھے۔ خیر آپ کرکٹ کھیلیں :)
     
  18. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    14,251
    کرپشن قوم کے رگ رگ میں رچ بس گئی ہے۔ فیصل مسجد اسلام آباد میں ایک بار ایسا ہی واقعہ میرے ساتھ ہو چکا ہے۔
     
  19. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یونیورسٹی نے تبدیلی کے ساتھ ملکر آجکل میرے سمیت بہت سوں کے گوڈے گٹے لوائے ہوئے ہیں، ہر دوسرے تیسرے ہفتے چکر لگانا پڑتا ہے۔ اب تو ماشاءاللہ سے بہت سی نئی عمارات، انٹرینس گیٹ اور مکمل چار دیواری بن چکی ہے۔ امید ہے کہ اگلے ہفتے پھر چکر لگ جائے گا۔ تفصیل سے تصویر کشی کا وقت نکالوں گا، انشااللہ۔
     
  20. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,223
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    پھر سے موٹر سائیکل سٹارٹ کی اور دھرماراجیکا کی طرف چل پڑے۔ یہ سڑک کچھ آگے حساس علاقے کی طرف جاتی ہے تو یہاں پبلک ٹرانسپورٹ نام کی کوئی شے نہیں تھی۔ خالم خالی سڑک، فروری کی سنہری روپہلی دھوپ کی تپش، سہ پہر کا وقت، اردگرد ہر طرف سبزہ ہی سبزہ، فاصلے پر بنے ہوئے چھوٹے بڑے مکانات اور ہلکی ہلکی ہوا۔ مزا ہی آ گیا۔ موٹر سائیکل بالکل آہستہ آہستہ چلاتے 5، 6 منٹ میں دھرماراجیکا اسٹوپا کے بورڈ کے پاس جا بریک لگائی۔

    اسٹوپا سڑک سے کچھ دور ہے اور موٹر سائیکل یا گاڑی وہاں تک نہیں لےجائی جا سکتی سو وہیں دروازے کے پاس موٹر سائیکل کھڑا کیا اور ایک گیٹ سے اندر کی طرف ہو لیے۔ اندر اسٹوپا تک جانے کی لیے کنکریٹ کا فٹ پاتھ بنا ہوا تھا۔ آہستہ آہستہ چلتے ہوئے آگے بڑھتے گئے، پہلے کچھ سیڑھیاں جو پہاڑی پتھر کو تراش کر ٹائلز کی صورت تھیں، نیچے کی طرف لے گئیں اور پھر ہر پانچ سات قدم کے بعد 45کے زاویے پر بل کھاتی 8، 10 سیڑھیاں۔ میں نے گننا شروع کر دیں، 88 نکلی۔ آخری سیڑھی کے پاس ایک نوجوان ہاتھ میں رسید بک ٹائپ کچھ پکڑے ہمارا ہی منتظر تھا۔ سمجھ گئے کہ یہاں بھی ٹِکُٹ لینا پڑے گا۔ پھر سے 40 روپے دئیے اور آخری سیڑھی سے اسٹوپا کی نسبتاً ہموار سطح پر قدم رکھا۔
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 6

اس صفحے کی تشہیر