تیرہویں سالگرہ محفلین کے لیے تعریف کے مبالغہ آمیز پُل باندھے جائیں

محمد عدنان اکبری نقیبی نے 'محفل کی سالگرہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 6, 2018

  1. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,219
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    آپ کو کہنا چاہیے کہ دونوں بہن بھائی اناکسا غورث کے مکتب میں ایمپیڈوکلیز کے کارخانے سے درآمد کردہ بان کی چارپائی پہ دیمو قراطیس کا گاؤتکیہ لگائے فیثا غورث کی مثلث کی مانند ٹانگ پر ٹانگ دھرے افلاطون کی چائے کے ساتھ ارسطو کے بسکٹ اور سقراط کے کباب لیتے ہیں، شعر کہتے ہیں، کباب لیتے ہیں، شعر کہتے ہیں، کباب لیتے ہیں، شعر کہتے ہیں، کباب لیتے ہیں۔۔۔ :D:p:LOL:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
  2. ہادیہ

    ہادیہ محفلین

    مراسلے:
    5,092
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    :roll::hypnotized::ohgoon:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. نایاب

    نایاب لائبریرین

    مراسلے:
    13,422
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Goofy
    واہ میرے بھتیجے کیا خوب مبالغہ کیا ہے ۔ اب ذرا تفصیل سے ان اسمائے گرامی بارے معلومات دیتے ثابت کریں کہ پکے سچے بھتیجے ہیں ۔

    یہ تو سچ ہے محترم بٹیا کباب بناتی ہے اور میں کھائے چلے جاتا ہوں محترم بٹیا کو شعر میں الجھائے ہوئے ۔ جب تک شعر پورا ہوتا پلیٹ خالی ہوتی ہے ۔ بٹیا رانی شعر ہی سناؤ گی یہ کچھ کھلاؤ گی بھی ۔۔۔۔۔
    اللہ سوہنا بٹیا رانی کی سب راہوں کو آسان فرمائے آمین
    یہ تو کبھی سمجھ ہی نہ آیا اسے مزید ذرا تفصیل سے سمجھائیں اور ڈھیر دعائیں پائیں ۔
    بہت دعائیں
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  4. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,219
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    شکر ہے۔ ورنہ میں تو ڈر رہا تھا کہ کہیں برا نہ لگ جائے۔ :)
    سعیِ ناتمام کرتے ہیں! :)
    اناکسا غورث
    اناکسا غورث، یونانی فلاسفرز میں سے ایک، سقراط سے قبل ظہور ہوا۔ کافی اہم نام ہے یونان کی سائنسی فلاسفی میں۔ نوس کا تصور دیا۔ نوس یعنی آفاقی ذہن، ایسا ذہن جو سچ اور جھوٹ میں صحیح صحیح تمیز کر سکے۔ اناکسا کا ماننا تھا کہ ایسا ذہن غیر مادی و غیر طبیعاتی ہے لیکن بعد کے کئی فلسفی اس سے متفق بھی رہے اور مخالف بھی۔ میں نے سنا ہے کہ یہ ان چند اولین فلاسفرز میں سے ایک تھے، جنہوں نے مذہب سے نجات کی راہ اپنائی (نجانے اس میں کتنی حقیقت کتنا افسانہ)۔ لیکن مجھے ان کے جس نظریے میں زیادہ دلچسپی رہی، وہ یہ تھا کہ کائنات اور کائنات کی ہر چیز پارٹیکلز سے مل کر بنی ہے، جب وہ مل جائیں تو چیز وجود میں آ جاتی ہے، الگ ہو جائیں تو فنا۔ حرکت کے متعلق بھی کہتے تھے کہ کوئی چیز ہے، جو چیزوں کو حرکت پہ مجبور کرتی ہے اور اب میں سوچتا ہوں کہ کیا آج کائناتی پھیلاؤ کا سائنسی جزو "ڈارک انرجی" کہیں اناکسا غورث کا وہی "نا معلوم عنصر" تو نہیں تھا!

    ایمپیڈوکلیز
    شاید ان کا دور سقراط سے پہلے کا ہے۔ میرے نزدیک یونانی فلسفے کو سائنسی بنیادوں پہ استوار کرنے والے چند بڑے ستونوں میں سے ایک ہیں یہ۔ عالمِ خاکی کو "آگ، ہوا، پانی اور مٹی" کے نظریے سے روشناس کروایا۔ زمین، سورج، چاند، سمندر وغیرہ کسے وجود میں آئے، ارتقاء کیا ہے، عملِ تنفس کیسے وقوع پذیر ہوتا ہے جیسے کئی سوالات کے جوابات دینے کی کوشش کی۔ میں سمجھتا ہوں کہ سائنس پہ ایک طویل عرصے تک یونان کے اس فلسفی کے کچھ نظریات کا غلبہ رہا۔

    دیمو قراطیس
    ان چند گنے چنے یونانی فلاسفرز میں سے ایک، جن کے تذکرے کے بغیر آج بھی سائنس کی درسی کتب نا مکمل ہیں۔ جدید سائنس کا باوا آدم تصور کیا جاتا ہے انہیں۔ انہی کا کہنا تھا کہ ہر چیز نظر نہ آنے والے ایٹموں سے مل کر بنی ہے، جنہیں مزید تقسیم نہیں کیا جا سکتا۔ کائنات میں لاتعداد اقسام کے ایٹمز ہیں۔ بلکہ یہ کہنا زیادہ درست ہے کہ صرف دو طرح کی چیزیں ہیں کائنات میں، ایٹم یا پھر "خالی" خلا۔ آئن اسٹائن کا عمومی نظریۂ اضافیت اور کوانٹم میکانیات خالی خلا پہ کافی تفصیل سے معلومات مہیا کرتی ہیں۔ ریاضی میں آئیں تو جیومیٹری میں بہت بنیادی نوعیت کا کام کیا انہوں نے، جو آج بھی مانا جاتا ہے۔

    واہ واہ واہ
    نور سعدیہ شیخ آپی! مجھے بھی کباب کھانے ہیں :LOL::p بلکہ شعر سنانے ہیں :ROFLMAO:!

    آمین!
    ثم آمین!

    مسئلہ فیثا غورث کے لئے مشہور۔۔۔ قائمہ زاویہ مثلث یعنی جس میں وتر کا مربع قاعدے اور عمود کے مربع کے جمع کے برابر ہو گا۔ اس سے ایک نتیجہ یہ بھی اخذ کیا جا سکتا ہے کہ کسی مثلث کے اندرونی زاویوں کا حاصل جمع 180 ہو گا۔ اب اللہ بھلا کرے آئن اسٹائن کا اور فرائیڈ مین وغیرہ گا، جو کہہ گئے بلکہ ثابت بھی کر گئے کہ کسی مثلث کے اندورنی زاویے 180 بھی ہو سکتے ہیں، 180 سے کم بھی اور زیادہ بھی۔ :LOL::LOL::LOL: قدرے عجیب بات ہے لیکن ثابت شدہ ہے۔ اس پہ پھر کسی وقت سہی۔

    :love::love::love:
     
    • زبردست زبردست × 1

اس صفحے کی تشہیر