1. اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں فراخدلانہ تعاون پر احباب کا بے حد شکریہ نیز ہدف کی تکمیل پر مبارکباد۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    $500.00
    اعلان ختم کریں

مجاز مجاز لکھنوی ::::: عقل کی سطْح سے کُچھ اور اُبھر جانا تھا ::::: Majaz Lakhnavi

طارق شاہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 16, 2015

  1. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,616
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm

    غزلِ

    [​IMG]
    عقل کی سطْح سے کُچھ اور اُبھر جانا تھا
    عِشق کو منزلِ پَستی سے گُزر جانا تھا

    جلوے تھے حلقۂ سر دامِ نظر سے باہر
    میں نے ہر جلوے کو پابندِ نظر جانا تھا

    حُسن کا غم بھی حَسِیں، فکر حَسِیں، درد حَسِیں
    اس کو ہر رنگ میں، ہر طور سنْور جانا تھا

    حُسن نے شوق کے ہنگامے تو دیکھے تھے بہت
    عِشق کے دعوئے تقدِیس سے ڈر جانا تھا

    یہ تو کیا کہیے، چلا تھا میں کہاں سے ہمدم !
    مجھ کو یہ بھی نہ تھا معلوُم کِدھر جانا تھا

    حُسن اور عِشق کو دے طعنۂ بیداد مجاز
    تم کو تو صِرف اِسی بات پہ مر جانا تھا

    مجاز لکھنوی
    (اسرارالحق مجاز)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1

اس صفحے کی تشہیر