فارسی ابیات کی لفظی تحلیل و تجزیہ

حسان خان نے 'ادبیات و لسانیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 11, 2016

  1. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,394
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    دلِ ما خون شود از غم اگر خونِ کسی ریزی
    که می‌دانیم ای بدخو همین با ما کنی آخر

    (قتیل لاهوری)
    جب بھی تُو کسی کا خون بہاتا ہے تو ہمارا دل غم سے خون ہو جاتا ہے، کیونکہ ہم جانتے ہیں کہ اے بدخو ہمارے ساتھ بھی آخر تُو یہی کچھ کرے گا۔
    (مترجم: محمد وارث)

    ما = ہم
    دلِ ما = ہمارا دل
    شُدن = ہو جانا
    خون شُدن = خون ہو جانا
    شَو = شُدن کا بُنِ مضارع
    شَوَد = ہو جائے، ہو جاتا ہے
    دلِ ما خون شَوَد = ہمارا دل خون ہو جائے / ہو جاتا ہے
    از = سے، کے باعث
    از = غم سے، غم کے باعث
    کَس = شخص
    کَسی = کوئی شخص، ایک شخص
    خونِ کَسی = کسی شخص کا خون
    ریختن = بہانا
    خون ریختن = خون بہانا
    خونِ کَسی ریختن = کسی شخص کا خون بہانا
    ریز = 'ریختن' کا بُنِ مضارع
    ریزی = تم بہاؤ
    اگر خونِ کَسی ریزی = اگر تم کسی شخص کا خون بہاؤ
    که = کیونکہ
    دانِستن = جاننا
    دان = دانِستن کا بُنِ مضارع
    دانیم = ہم جانیں
    می = علامتِ استمرار و امتداد و تکرار
    می‌دانیم (می + دانیم) = ہم جانتے ہیں
    که می‌دانیم = کہ ہم جانتے ہیں، کیونکہ ہم جانتے ہیں
    ای = اے
    بدخُو = وہ شخص جس کی خُو (خِصلت و فِطرت) بد ہو
    همین (تلفظ: هَمِن) = یہی
    با = ساتھ
    با ما = ہمارے ساتھ
    کردن = کرنا
    کُن = 'کردن' کا بُنِ مضارع
    کُنی = تم کرو (یہاں پر مستقبل کے مفہوم میں استعمال ہوا ہے یعنی 'تم کرو گے')
    همین با ما کُنی = یہی تم ہمارے ساتھ کرو [گے]
    آخر = آخرِ کار، عاقبت الامر، انجامِ کار، بالآخر وغیرہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,394
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    چُنان = اُس طرح، اُس طور، اُس طرز سے
    گُفتن = کہنا
    گُفت = اُس نے کہا
    این = یہ
    را = کو
    این غزل را = اِس غزل کو
    گُفت این غزل را = اُس نے کہا اِس غزل کو
    چُنان گُفت این غزل را = اُس طرح کہا اِس غزل کو
    مولوی = مولانا رومی
    در جوابِ مولوی = مولانا رومی کے جواب میں
    صائب = صائب نے
    چُنان گفُت این غزل را در جوابِ مولوی صائب = اِس طرح کہا اِس غزل کو مولوی کے جواب میں صائب نے (یا پھر: صائب نے مولوی کے جواب میں اِس غزل کو اِس طرح/یوں کہا)
    ز = 'از' کا مخفّف
    از = سے، کے باعث
    شادی = شادمانی، خوشی
    ز شادی = شادمانی سے، شادمانی کے باعث
    آمدن = آنا
    آمد = وہ آیا، وہ آ گیا
    سُجود = سجدہ کرنا
    در سُجود آمد = وہ سجدے میں آ گیا، وہ سجدے کی حالت میں آ گیا، وہ سجدہ کرنے لگا
    ز شادی در سُجود آمد = شادمانی سے سجدے کی حالت میں آ گیا
    روحِ شمسِ تبریزی ز شادی در سُجود آمد = شمسِ تبریزی کی روح شادمانی سے سجدے میں آ گئی
     
  3. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,394
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    هر = ہر، جو بھی
    دُود = دہواں
    که = جو
    هر دُود که = ہر [وہ] دُود کہ جو؛ جو بھی دُود
    پیدا = ظاہر، آشکار، نمایاں
    شُدن = ہونا، ہو جانا
    پیدا شدن = ظاہر ہونا، نمایاں ہونا
    شَو = 'شُدن' کا بُنِ‌ مضارع
    شَوَد = [وہ] ہوئے، ہوتا ہے، ہو جائے، ہو جاتا ہے
    پیدا شَوَد = ظاہر ہو، ظاہر ہو جائے، ظاہر ہوتا ہے
    از = سے
    سینهٔ چاکم = میرے سینۂ چاک سے
    ابر = بادل
    ابری (ابر + یائے تنکیر) = کوئی ابر، ایک ابر
    ابری شَوَد = ایک ابر ہو جائے/جاتا ہے، ایک ابر بن جائے/جاتا ہے
    و = اور
    کردن = کرنا
    گریہ کردن = کریہ کرنا
    کُن = 'کردن' کا بُنِ مضارع
    گریہ کُند = [وہ] گریہ کرے، گریہ کرتا ہے
    بر = پر
    خاک = مجازاً قبر کے معنی میں استعمال ہوا ہے
    بر سرِ خاکم = میری قبر کے اوپر، میری قبر کے سر پر، میری قبر کے سِرہانے پر
     
  4. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,394
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    سِفله = پست، فُرومایہ، ناکس
    را = کو
    دادن = دینا
    دِه = 'دادن' کا بُنِ مضارع
    دِهد = وہ دے، وہ دیتا ہے
    عزّت دادن = عزّت دینا
    عزّت دِهد = وہ عزّت دے، وہ عزّت دیتا ہے
    خوار (تلفظ: خار) = ذلیل، زبُوں، حقیر
    کردن = کرنا
    کُن = 'کردن' کا بُنِ مضارع
    کُند = وہ کرے، وہ کرتا ہے
    خوار کردن = ذلیل کرنا
    خوار کُند = وہ ذلیل کر دے/دیتا ہے
    خوارَش کُند = وہ اُس کو ذلیل کر دے/دیتا ہے ('خوار' کے بعد متّصل ہونے والی ضمیرِ مفعولی 'ش' شخصِ سوم کی جانب راجع ہے)
    آخر = آخرِ کار، انجامِ کار، عاقبت الامر
    زدن = مارنا
    زد = اُس نے مارا
    بر زمین زدن = زمین پر مارنا
    بر زمین زد = اُس نے زمین پر مارا
    هوا زد بر زمین = ہوا نے زمین پر مارا
    برداشتن = اُٹھانا، بلند کرنا
    برداشت = اُس نے اُٹھایا، اُس نے بلند کیا
    برداشت بالا = اُس نے بالا اُٹھایا
    چون = جب، جس وقت
    کفِ خاکی (کفِ خاک + یائے تنکیر) = کوئی کفِ خاک، اِک کفِ خاک
     
  5. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,394
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ما = ہم
    را = کو
    دهانِ یار را = دہانِ یار کو
    ما دهانِ یار را = ہم نے دہانِ یار کو
    از = سے
    از غُنچه = غُنچے سے
    از غُنچه بهتر = غُنچے سے بہتر
    گُفتن = کہنا
    گُفته‌ایم = ہم نے کہا ہے
    از غُنچه بهتر گُفته‌ایم = ہم نے غُنچے سے بہتر کہا ہے
    هم = بھی
    غنچه هم = غُنچہ بھی
    این = یہ
    حَرف = سُخن، بات
    خواهد گُفت = وہ کہے گا
    این حَرف خواهد گُفت = وہ یہ سُخن کہے گا
    غنچه هم این حَرف خواهد گُفت = غُنچہ بھی یہ سُخن کہے گا
    گر = اگر
    گویا = کہنے/بولنے والا، جو شخص کہتا/بولتا ہو
    شُدن = ہو جانا
    شَو = 'شُدن' کا بُنِ مضارع
    شَوَد = وہ ہو جائے
    اگر گویا شود = اگر وہ گویا ہو جائے، اگر وہ بولنے والا ہو جائے، اگر وہ بولنے لگ جائے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,394
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    شُنیدن = سُننا
    شُنیدم = میں نے سنا
    مردُم = خَلق، لوگ
    افسانه‌گو = افسانہ کہنے والا، جو شخص افسانہ کہتا ہو
    را = کو
    داشتن = رکھنا
    دار = 'داشتن' کا بُنِ مضارع
    داری = تم رکھو، تم رکھتے ہو
    می‌داری = تم رکهتے ہو
    دوست داشتن = دوست رکھنا، محبوب رکھنا، محبّت کرنا, پسند کرنا
    دوست می‌داری = تم دوست رکھتے ہو، تم محبوب رکھتے ہو
    مردُمِ افسانه‌گو را دوست می‌داری = تم افسانہ گو مردُم کو دوست/محبوب رکھتے ہو، تم افسانہ گو مردُم کو محبّت/پسند کرتے ہو
    رُخصت = اجازت، اِذن
    دادن = دینا
    دِه = 'دادن' کا بُنِ مضارع
    دہی = تم دو/دیتے ہو
    اگر رُخصت دهی = اگر تم اجازت دو
    من = مَیں
    هم = بھی
    عجب = عجب، عجیب، حیرت انگیز
    افسانه‌ای (افسانه + یائے تنکیر) = ایک افسانہ، کوئی افسانہ
    دارم = میں رکھتا ہوں، میرے پاس ہے
    افسانه‌ای دارم = میرے پاس ایک/کوئی افسانہ ہے، میں ایک/کوئی افسانہ رکھتا ہوں
     
    آخری تدوین: ‏دسمبر 6, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر