غزل : تا عمر مرے دیدۂ نمناک میں رہنا - فرحان محمد خان

فرحان محمد خان نے 'آپ کی شاعری (پابندِ بحور شاعری)' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 8, 2019

  1. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,113
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    غزل
    تا عمر مرے دیدۂ نمناک میں رہنا
    تم اس کے مکیں ہو اسی املاک میں رہنا

    مانگی نہیں میں نے کبھی جنموں کی رفاقت
    بس خواب میں آنا مرے ادراک میں رہنا

    ہم میر تقی میر کے بیعت ہیں ازل سے
    واجب ہے ہمیں زلف کے فتراک میں رہنا

    کیوں کر کوئی مطلب ہو اُسے شاہی قبا سے
    آتا ہو جسے جامۂ صد چاک میں رہنا

    یہ ماں کی دعائیں ہیں سنبھالے ہوئے ورنہ
    مشکل ہے بہت عالمِ سفّاک میں رہنا

    بس ایک نصیحت ہے مجھے باپ کی فرحانؔ
    رہنا ہے تو پھر اپنی ہی پوشاک میں رہنا
    فرحان محمد خان
     
    آخری تدوین: ‏دسمبر 9, 2019
    • زبردست زبردست × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  2. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,579
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    بہت خوب! کیا بات ہے فرحان بھائی ! اچھے اشعار ہیں ۔ لطف آیا پڑھ کر۔
    میرا خیال ہے کہ کسی سے بیعت ہونا درست محاورہ ہے ۔ کسی کے بیعت ہونا درست نہیں ہے۔ اسے دیکھ لیجئے ۔
     
    • متفق متفق × 1
  3. محمّد احسن سمیع :راحل:

    محمّد احسن سمیع :راحل: محفلین

    مراسلے:
    249
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    محترمی جناب فرحان صاحب، آداب۔

    ماشاءاللہ اچھی غزل ہے۔ میری طرف سے داد قبول فرمائیں۔ بس مطلع میں مجھے تھوڑا تردد ہوا۔ املاک کا مفہوم تو کافی وسیع ہے جس میں کسی بھی قسم کی ملکیت آسکتی ہے، جبکہ مکیں تو مکان یا گھر میں رہنے والا ہوتا ہے، سو ’’املاک کا مکیں‘‘ مجھے کچھ غیر مناسب لگ رہا ہے، ممکن ہے یہ میرے فہم کا نقص ہو۔

    ایک چھوٹی سی تجویز ہے، امید ہے ناگوار نہیں گزرے گی۔ مقطعے سے ماقبل کے شعر میں ’’یہ ماں کی دعائیں‘‘ کو اگر ’’بس ماں کی دعائیں‘‘ کرلیا جائے تو بیان میں اور تاکید اور شدت پیدا ہوجائے گی۔ آپ کا کیا خیال ہے؟

    ایک بار پھر داد و مبارکباد۔

    دعاگو،
    راحلؔ
     
    • متفق متفق × 1
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,960
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    املاک کا مکین نہیں کہا گیا، دیدہ کا مکیں کہا گیا ہے اور دیدۂ نم ناک کو املاک کہا گیا ہے۔ مجھے تو یہی صورت بہتر لگ رہی ہے ۔ البتہ ماں والے شعر میں مکمل اتفاق رکھتا ہوں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,960
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    تعریف تو کرنی ہی بھول گیا عزیزی فرحان کی عمدہ غزل کی!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. محمّد احسن سمیع :راحل:

    محمّد احسن سمیع :راحل: محفلین

    مراسلے:
    249
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    جی بالکل، مجھ سے یہ چوک ہوئی، میں نے اس ربط پر غور نہیں کیا :)
     

اس صفحے کی تشہیر