عمران خان کی ٹیم

محمد خلیل الرحمٰن نے 'سیاست' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 9, 2021

  1. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,703
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    آپ نے تو اسے خوش آئند ہی کہنا ہے، کچھ عرصہ جان جو چُھوٹی رہے گی۔
    آج ماشاء اللہ جمعہ ہے ایک سیٹ تو نماز کے بعد مسجد کے باہر تقسیم کیا جا سکتا ہے۔ بقیہ دو کے بارے میں کیا کہتے ہیں محبان وطن !

    اٹھارہ انیس ہزار ہیں، دس بارہ تو نکل ہی آئیں گے۔ :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  2. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,703
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بالکل۔۔۔ یہ100 فیصد بغض عمران بلکہ بغض پاکستان کہلائے گا۔

    مندوخیل نے محترمہ آپا صاحبہ سے ایسی بات کی ہی کیوں کہ محترمہ آپا صاحبہ کو انتہائی مجبوری کی حالت میں (بالکل اس طرح جیسے کچھ حالات میں حرام حلال ہو جاتا ہے) اپنے پوتر ہاتھ کو استعمال کرنا پڑ گیا۔ مندوخیل پر تو سیکشن 6 کے تحت مقدمہ درج ہونا چاہییے۔
     
    آخری تدوین: ‏جون 10, 2021
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,703
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    مانا ۔۔ پائین خود بہت بڑی سائنسی ہستی ہیں پر ٹیکنالوجی اتنی بھی جدید نہیں ہوئی۔ :cool:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  4. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,703
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    پیرنی کہنا یا کہلانا تو کوئی باعث ندامت و شرمندگی وغیرہ نہیں۔ زوجیت خان صاحب میں آنے سے پہلے وہ اپنے حلقہ احباب میں پنکی پیرنی کے نام سے ہی مشہور تھی۔

    البتہ جادوگرنی و دیگر القابات غیر مناسب ہیں لیکن انھیں مخالف سپورٹران کے الزامی ہتھیاروں میں رکھا جا سکتا ہے کہ بلاول کو بلو رانی اور مریم کو نانی و دیگر وغیرہ کے طنزیہ ناموں سے پکارنے کا سلسلہ پیر صاحب نے خود ہی شروع کیا / کروایا تھا۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  5. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,703
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یہ کہاں سے نکال لائے ہیں، خلیل صاحب کی ساری تپسیا خاک میں ملا دی۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  6. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    30,833
    خود کلامی :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    30,833
    آل پاکستان خلائی مخلوق اتھارٹی
    [​IMG]
     
    • زبردست زبردست × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  8. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    30,833
    ہر سیاسی چھیڑ کے پیچھے ایک حقیقی تاریخ ہوتی ہے۔ آپ کی پارٹی کی نائب صدر مریم نواز پی ڈی ایم تحریک کے دوران فوج کو ان الفاظ میں للکارا کرتی تھی: “ڈرتے ہیں بندوقوں والے ایک نہتی لڑکی سے” :)
    اب مزے کی بات یہ ہے کہ مریم نواز اس سے قبل اپنے غنڈوں کیساتھ نیب دفتر پر پتھراؤ کروا چکی تھی اور عمر کے لحاظ سے کہیں سے بھی “لڑکی” نہیں لگتی۔ یہیں سے نانی والی چھیڑ کا آغاز ہوا تھا۔
    باقی بلاول کو بلو رانی کہنا انتہائی نامعقول ہے۔ یہ براہ راست ان کی مردانہ جنس کو نشانہ بنانے والی بات ہے۔ اس کا آغاز وزیر داخلہ شیخ رشید نے کیا تھا۔ الفاظ شاید کچھ یوں تھے: “دور سے دیکھو تو بلاول لگتا ہے، قریب سے دیکھو تو بلو رانی لگتی ہے” :)
     
    • زبردست زبردست × 2
  9. سیما علی

    سیما علی لائبریرین

    مراسلے:
    20,495
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    :applause::applause::applause::applause::applause::applause::applause::applause::applause::applause::applause::applause:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  10. خالد محمود چوہدری

    خالد محمود چوہدری محفلین

    مراسلے:
    14,878
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    ہم ہی میں سے کچھ ہیں جو اپنی ماں پر احسان جتاتے ہیں کہ ہم نے تمہاری کوکھ سے پیدا ہو کرتم پر احسان کیا ہے تیری اوقات کیا ہم نے تمہارے ہاں پیدا ہو کر تمہیں ماں بنایا ہے
     
    • متفق متفق × 2
    • غمناک غمناک × 1
  11. سیما علی

    سیما علی لائبریرین

    مراسلے:
    20,495
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    یہ وہی لوگ ہیں جو ملک پر بھی احسان کرتے ہیں کہ ملک ہم سے ہے اور باہر جاکر بھی ملک کا نام بدنام کرتے ہیں بھول جاتے ہیں کہ لاکھ امریکن پاسپورٹ لے لیں اوریجن میں پاکستان ہی لکھا رہے گا لال اور نیلے پاسپورٹ سے کچھ فرق نہیں پڑنے والا۔۔۔۔۔۔
     
    • زبردست زبردست × 2
    • متفق متفق × 1
  12. علی وقار

    علی وقار محفلین

    مراسلے:
    957
    :ROFLMAO:
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  13. علی وقار

    علی وقار محفلین

    مراسلے:
    957
    یہ بات میں مروت میں آ کر بھول گیا تھا۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  14. علی وقار

    علی وقار محفلین

    مراسلے:
    957
    اپنے تئیں محب وطن بننا اور دیگر کی حب الوطنی پر شبہات کا اظہار کرنا مناسب نہیں۔ ہجرت کے کرب سے گزرنا بہرحال ایک سانحہ ہے اور اس سانحہ عظیم کے اثرات ہمارے ملک کی تاریخ پر پڑے ہیں۔ جس مقصد کے لیے ہجرت کی گئی تھی، اس کو پورے نہ ہوتے دیکھ کر زیادہ دکھ ہجرت کرنے والوں کو ہوتا ہے اور وہ اس کرب کا اظہار کر سکتے ہیں۔ اس میں احسان کا کوئی معاملہ نہیں ہے۔ ایسا نہیں ہے کہ وہ کرب کا اظہار کریں گے تو وہ احسان جتائیں گے۔ یہ بات سامنے کی ہے کہ جو تکلیف سے گزرتا ہے، اسے بات کہنے کا حق زیادہ ہوتا ہے۔ شاید یہ نفسیاتی معاملہ بن چکا ہے کہ جب ہجرت کرنے والے اپنے غم کا اظہار کرتے ہوں گے تو انہیں یہ جتلایا جاتا ہو گا کہ ہجرت کی ہی کیوں تھی؟ کیا کوئی احسان کیا ہم پر؟ تو تب سے غالباََ اس بات کے سننے سے پہلے ہی وہ مدافعانہ انداز اختیار کرتے ہوئے اوور ری ایکٹ کرتے ہوئے بات کو اس طرف لے گئے کہ اب ہم میں نے یہ بات کرنی ہی نہیں ہے کہ ایسا جواب سننے کو ملے۔ یہ نفسیاتی حوالے سے ایک فطری سی بات ہے۔ البتہ، مجھے یہ ضرور کہنا ہے کہ ہجرت کرنے والے مجھ سے زیادہ افضل ہیں کہ ان کے آباء و اجداد خون بہا کر یہاں آئے، اور یہ ان کی عظمت ہے کہ وہ خود کو اس وطن میں میرے برابر سمجھیں۔ اس میں احسان کا کوئی معاملہ نہیں ہے۔ وطن سے محبت کا مطلب یہ نہیں ہے کہ انسان کے احساسات و جذبات کو مکمل طور پر مائنس کر دیا جائے اور یہ سمجھ لیا جائے کہ وطن سے محبت کے علاوہ انسان کے ذہن میں کسی احساس کو جگہ ہی نہ دی جائے۔ ایک فرد کی زندگی میں احساسات کئی خانوں میں تقسیم ہوتے ہیں اور وطن سے محبت کا جذبہ ہر ایک کے اندر منفرد تصور کے ساتھ موجود ہوتا ہے۔ ہر ایک کو ایک ہی طرح سے سوچنے پر مجبور کرنا نادانی ہے اور ایسی حب الوطنی سے ہم بے زار ہی بھلے جہاں قدم قدم پر اس کا اظہار کر کے مقتدر حلقوں سے بصورت ستائش اس کا سرٹیفکیٹ بھی لینا پڑے۔
     
    • زبردست زبردست × 6
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  15. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,703
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہترین، خوبصورت۔

    چند دن پہلے ہی ایک ہم جماعت جو نیوزی لینڈ کی ایک جامعہ میں پروفیسر ہیں، کی فیس بک وال پر ایک تحریر پڑھنے کر ملی۔ جس کا آخری جملہ کچھ یوں تھا۔

    Critical Thinking ملک دشمن نہیں ہوتی اور خامیوں کا اظہار غیر ملکی ایجنڈا نہیں ہوتا۔

    اور اسی ایک سطر پر میں نے رائے دی تھی کہ تنقیدی، مبصرانہ یا طنزیہ اظہار خیال کو ہمارا معاشرہ ابھی تک 'شریکا' سمجھتا ہے.
     
    • زبردست زبردست × 1
  16. علی وقار

    علی وقار محفلین

    مراسلے:
    957
    :thumbsup4:
     
    • دوستانہ دوستانہ × 2
  17. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    39,942
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Aggressive
    آخری جملے اور آپ کے دوست کے نیوزی لینڈ ہونے کا بہت گہرا تعلق ہے
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  18. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,703
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ہو سکتا ہے، لیکن شاید مجھے صحیح ادراک نہیں۔ اس کرسمس / نیو ائیر پر آیا تو اس سے کچھ موم بتیاں ضرور روشن کرواؤں گا۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  19. سید رافع

    سید رافع محفلین

    مراسلے:
    2,335
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    وطن وہاں کے بسنے والوں کے وعدوں سے وجود میں آتا ہے۔ یہ وعدے وفا ہوتے رہنے چاہیں۔ جو کوئی کسی بھولے وعدے کی یاد دلائے اسکی سننی چاہیے۔ اسی صورت میں وطن پھیلتا یا سکڑتا ہے۔ پاکستان پہلے بڑا تھا اب سکڑ گیا۔

    یونیسکو کی رپورٹ پڑھ رہا تھا کہ 42 فیصد بچے جو پانچ سال کے ہوتے ہیں انکی رجسٹریشن ہوتی ہے. مطلب کہ 58 فیصد رجسٹرڈ نہیں ہوتے۔ ان رجسٹرڈ بچوں میں سے ہر سو میں 67 زندہ رہتے ہیں اور 33 مر جاتے ہیں۔

    ایسا وطن جو اپنے بچوں کو صحتمند نہ کر سکے زندہ نہ رکھ سکے وہاں حکومت وقت کو القاب سے نوازنا تو چھوٹی بات معلوم ہوتی ہے۔

    Pakistan (PAK) - Demographics, Health & Infant Mortality - UNICEF DATA
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  20. سید رافع

    سید رافع محفلین

    مراسلے:
    2,335
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ابھی کچھ دنوں پہلے بحریہ ٹاون کراچی پر سندھ کی قوم پرست جماعتوں کی جانب سے مظاہرہ، توڑ پھوڑ اور نعرے بازی ہوی۔ دوستوں میں کراچی کے شہریوں کی حُب الوطنی کی بات نکلی۔ میں نے اپنے دوستوں سے کہا:

    کراچی مشرقی و مغربی پاکستان کی قیادت کاچنا ہوا اور قائداعظم کا منتخب کردہ دارلحکومت تھا۔

    ایوب کا دور آتے آتے قومی ترجیحات جو کہ قائداعظم اور لیاقت علی خان نے تجویز کیں تبدیل ہو گئیں۔ بس اب یہ ملک ان ترجیحات کے ماتحت ہے۔

    آپ تصور کریں کہ پاکستان کا اسٹیٹ بینک اسی اردو کمیونٹی کے ایک صاحب زاہد حسین نے چار ماہ میں بنا کر دے دیا۔

    اب جبکہ پلوں کے نیچے سے بہت سا پانی گزر چکا ہے آپ کو ازسر نو خطے کی سیاست اور دھاروں کا جائزہ لینا ہو گا۔ تلخ حقائق کو تسلیم کرتے ہوئے نیا لائحہ عمل بنانا یو گا۔

    صاف بات ہے جو پاکستان کو کینسر کہہ کر جاگیردارنہ نظام ختم کرنے کی بات کرے اس پر حیرت ہی کی جا سکتی ہے کہ ایسی سخت گرہ کو کھولنے کا کیا سطحی طریقہ!

    رینجرز کیوں آئے جب آپ کے انکے درمیان اچھی خاصی چپقلش ہو چکی۔ ابھی بھی ان کے نمائندے منتخب ہو رہے ہیں۔ اسکا کیا مقصد ہے؟ مقصد یہ ہے کہ وہی سب ہو جو پہلے ہوتا رہا۔ کوئی نیا دماغ نئی سوچ نئی ترقی کی بات قوم میں پنپ نہیں پائی! آپ نے انکی سوچ کو اسمبلی میں مسترد نہیں کیا۔

    سندھ پولیس اور رینجرز سندھ حکومت کے ماتحت ہے۔ وہ خود سے کچھ نہیں کر سکتی۔ یہ ہاتھ مروڑنے کا عمل ہے۔ اس سے زائد کچھ نہیں۔

    مٹی کے بچے جب بنیں گے جب آپ سیاچن سے سو شہید کراچی لائیں یا سو شہید ٹرائبل ایریا سے لائیں۔ آپکی ترجیحات قومی نہیں لسانی ہیں۔ عالمی نہیں ایک خطے کی زبان سے متعلق ہیں۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2

اس صفحے کی تشہیر