اقتباسات شاب جی! آپ بھی شودر ہیں کیا مسلمانوں کے؟

یونس نے 'مطالعہ کتب' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 18, 2013

  1. یونس

    یونس محفلین

    مراسلے:
    309
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    آغا گُل کے افسانے ’’شوُدر‘‘ سے اقتباس :

    ۔۔۔ مندر کے سامنے میدان میں درختوں کا جھنڈ تھا۔گھنے سائے میں درخت کے نیچے آلتی پالتی مارے ہاتھ باندھے آنکھیں بند کیے مادھو بیٹھا تھا۔ اس کا رخ مندر کے کھلے دروازے کی جانب تھا۔ جہں سے کرشن بھگوان کی مورتی دکھائی دے رہی تھی۔ بانسری بجانے والا مکٹ سجائے محبتیں بانٹنے والا‘ جس نے ساڑھے تین ہزار برس قبل وحدت الوجود کا فلسفہ دیا تھا۔
    مادھو کے چہرے پہ سکون تھا۔ عبادت کرتے ہوئے اس کے چہرے پہ ایک حسن اتر آیاتھا۔ اس کی آنکھیں بند تھیں‘ پلکیں بھیگی ہوئی تھیں۔ اس کے آنسو دہکتی ہواؤں نے کسی مہربان ماں کی طرح خشک کر دیے تھے۔ صرف نشان سے رہ گئے تھے۔ جیسے بلوچستان کے خشک دریاجن میں سب کچھ ہوتا ہے ، پانی نہیں ہوتا۔ تپتے پتھروں کی سفیدگزر گاہیں پڑی ہوتی ہیں۔
    میں نے قریب جا کر شفقت سے اس کے سر پہ ہاتھ پھیرا۔ ’’مادھو مادھو!‘‘ اس کامراقبہ ٹوٹ گیا۔ اس نے دھیرے دھیرے آنکھیں کھولیں جن میں خوشیاں تیر رہی تھیں، آنسوؤں میں ڈوبی ڈوبی۔
    ’’مادھو! تم اندر کیوں نہیں چلے جاتے۔ کرشن بھگوان کے قدموں میں؟ جاؤ اندر چلے جاؤ۔ اتنی دور سے عبادت کر رہے ہو؟ شکنتلا کے پاس تو جانا چاہتے ہو اور بھگوان سے دور رہتے ہو جو دلوں میں محبتیں ڈالتا ہے۔جو مکمل محبت ہے۔‘‘
    ’’شاب جی! مجھے لگتا ہے محبت کرنے والے ہمیشہ دور رہتے ہیں۔ میں شودر ہوں میں مندرکے اندر نہیں جا سکتا۔ بھگوان کو دور ہی سے دیکھ سکتا ہوں۔‘‘
    مجھے تاسف ہوا ’’بیچارہ! کاش یہ مسلمان ہوتا، دھڑسے مسجد میں چلا جاتا۔ ہندو مت کیا ہے کہ پوجا کرنے والوں پہ بھی پابندی لگاتا ہے۔‘‘
    میں نے اسکا احساس کمتری مٹانے کے لیے موضوع بدل دیا۔
    ’’شکنتلا کہاں ہے؟‘‘
    ’’اسکے بھائی کا فون تھا وہ خود مجھے لینے کے لیے آرہا ہے۔صبح تک پہنچ جائے گا۔‘‘
    ’’کیا ایسا نہیں ہو سکتا کہ تم شکنتلا کو لے کر میرے پاس آ جاؤ۔‘‘ میں متوقع تنہائی سے خائف تھا۔مادھو ٹال سا گیا۔
    باتیں کرتے ہوئے ہم ساتھ ساتھ چلتے ہندو محلہ سے باہر نکل آئے۔ سورج کی تمازت دم توڑ چکی تھی۔ مسجدوں میں اذانیں بلند ہو رہی تھیں۔ ہم امام بارگاہ کے قریب سے گزرے۔ اگلی مسجد اہلحدیث کی تھی، اس کے بعد اہلسنت کی مسجد تھی، لشکرطیبہ والوں کی مسجد تھی، پھر سپاہ محمد کی مسجداور تھوڑی دور جماعت المسلمین کی مسجد بھی تھی۔ ہر مسجد سے اذانیں بلند ہو رہی تھیں۔ فضامیں تقدیس تھی۔ اذان تو ایک ہی تھی جو ہر مسجد کے مینار سے بلند ہو رہی تھی ، مگر مسجدیں الگ الگ تھیں ، جدا جدا تھیں ، بے شمارتھیں۔ آگے پیچھے دائیں بائیں مساجد تھیں۔ میرے فقہ کی مسجد دور تھی۔ اس لیے میں آگے ہی آگے بڑھتا چلا گیا۔ مادھو ایک ایک مسجد کو عقیدت سے دیکھتا پھر مجھے غور سے دیکھتا، مگر میں بڑھے ہی چلا جا رہا تھا۔ آخر اس سے رہا نہ گیا۔
    ’’شاب جی! اتنی مسجدیں گزریں۔ آپ ایک مسجد میں بھی داخل نہ ہو سکے۔ شاب جی! آپ بھی شودر ہیں کیا مسلمانوں کے؟‘‘

    (ماہنامہ اردو ڈائجسٹ ‘ نومبر 2013 )
     
    • زبردست زبردست × 14
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  2. ماہی احمد

    ماہی احمد لائبریرین

    مراسلے:
    13,298
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Happy
    عمدہ شراکت۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    زبردست۔ منٹو کی یاد تازہ ہو گئی :)
     
    • متفق متفق × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. ابن رضا

    ابن رضا لائبریرین

    مراسلے:
    4,255
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    بہت عمدہ اقتباس شیریک کرنے پر ممنون ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. محمود احمد غزنوی

    محمود احمد غزنوی محفلین

    مراسلے:
    6,435
    موڈ:
    Torn
    بہت خوب۔۔۔تازیانہ
     
    • متفق متفق × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. محمود احمد غزنوی

    محمود احمد غزنوی محفلین

    مراسلے:
    6,435
    موڈ:
    Torn
    جامعہ مسجد حنفیہ بریلویہ رضویہ۔۔۔۔مسجد کمیٹی اور اہلیانِ محلہ کے اتفاق سے قرار پایا ہے کہ اس مسجد میں دیوبندی حضرات کا داخلہ ممنوع ہے :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  7. یونس

    یونس محفلین

    مراسلے:
    309
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  8. تلمیذ

    تلمیذ لائبریرین

    مراسلے:
    3,914
    موڈ:
    Cool
    واہ واہ بھینوؤ کے ماری اے آغا گل ہوراں نے! (اچھی بھگو کے ماری ہے آغا گل جی نے)
    شراکت کے لئے شکر گذاری، جناب یونس صاحب۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  9. تلمیذ

    تلمیذ لائبریرین

    مراسلے:
    3,914
    موڈ:
    Cool
    یہ لوگوں کےاپنے اپنے ایمان و ظرف کی بات ہوتی ہے، ہمارے محلے کی مسجد میں ایک دو شیعہ حضرات کبھی کبھی آ کر اپنے طریقے سے یعنی ہاتھ چھوڑ کر نماز پڑھتے ہیں لیکن آج تک کسی نے اعتراض نہیں کیا۔ (اور اللہ کرے کبھی کوئی اعتراض نہ ہی کرے)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 6
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  10. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,704
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بہت خوب شراکت سر ۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. یونس

    یونس محفلین

    مراسلے:
    309
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  12. یونس

    یونس محفلین

    مراسلے:
    309
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    ایک مسجد میں میں نے خود پڑھا تھا "غیر مقلد (اہلحدیث) حضرات کا داخلہ منوع ہے"
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
    • متفق متفق × 2
    • زبردست زبردست × 1
  13. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,832
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring
    امت کو چھانٹ ڈالا کافر بنا بنا کر
    اسلام ہے فقیہو! ممنوں بہت تمہارا
    (الطاف حسین حالی)
     
    • متفق متفق × 5
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. صائمہ شاہ

    صائمہ شاہ محفلین

    مراسلے:
    4,659
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Cool
    اللہ کے گھر میں اللہ کے بندوں کا داخلہ ممنوع
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 1
    • متفق متفق × 1
  15. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    206,140
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    مسجد تو اللہ کا گھر ہے۔

    اگر ایسا کچھ لکھا ہوا ہے تو پھر وہ مسجد تو نہ ہوئی ناں، وہ تو مُلا کا گھر ہو گا۔

    منصور بھائی نے صحیح کہا ہے منٹو کی یاد تازہ کر دی آغا جی نے۔
     
    • متفق متفق × 4
    • زبردست زبردست × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  16. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    بہت لاجواب اور مناسب وقت پر آپ نے اقتباس شئیرکیا ہے - جزاک اللہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,522
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    روح اور ضمیر کو جھنجھوڑتی ہوئی ایک چشم کشا تحریر
    شراکت کا شکریہ سلامت رہیں
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  18. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,522
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ہمارے محلے کی مسجد کے امام صاحب بریلوی مسلّک سے تعلق رکھتے ہیں ایک بار انہوں نے اہلحدیث حضرات کے اس مسجد میں نماز پڑھنے پر اعتراض کیا مگر اہل محلہ اچھی طرح ان کی چابی ٹائٹ کر دی اس مسجد میں اہل سنت دیوبند اور اہلحدیث مسلّک کے لوگ اکٹھے نماز پڑھتے ہیں کبھی کبھی کوئی اہل تشیع بھی نماز پڑھنے آ جاتا ہے کبھی کسی نے اعتراض نہیں کیا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  19. سید ذیشان

    سید ذیشان محفلین

    مراسلے:
    7,353
    موڈ:
    Asleep
    نہایت ہی عمدہ تحریر۔ (y)

    خیر میں نے تو آج تک کسی مسلک کی مسجد نہیں چھوڑی ہر ایک میں نماز پڑھی ہے۔ :p
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 1
  20. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,704
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    ایسا میں نے بھی پڑھا تھا ۔۔۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1

اس صفحے کی تشہیر