سعد جمشید :::::رنج کا کب عِلاج کرتی ہے ::::: Saad -Jamshed

طارق شاہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 20, 2019

  1. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,618
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    غزل
    سعد جمشید

    رنج کا کب عِلاج کرتی ہے
    زندگی کل اور آج کرتی ہے

    لوگ تیار کیوں نہیں ہوتے
    سادگی احتجاج کرتی ہے

    روز جیتے ہیں ،روز مرتے ہیں
    زندگی کام کاج کرتی ہے

    کیا بُزرگی سفید چڑیا ہے؟
    ہر عمل اندراج کرتی ہے

    شام ِ ہجراں اُداس لوگوں کا
    ہرمرض لاعِلاج کرتی ہے

    آؤ چلتے ہیں اُس کے رستے پر
    زندگی پر جو راج کرتی ہے

    سعد جمشید
    کینیڈا
     
    آخری تدوین: ‏اگست 21, 2019
  2. یاسر شاہ

    یاسر شاہ محفلین

    مراسلے:
    863
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    یہ شعر ساقط الوزن ہے بزرگی کے غلط تلفّظ کی وجہ سے :

    بزرگی کیا سفید چڑیا ہے؟
    ہر عمل اندراج کرتی ہے

    یوں درست ہوجائے گا

    کیا بزرگی سفید چڑیا ہے؟
    ہر عمل اندراج کرتی ہے

    دیکھ لیجیے ٹائپو نہ ہو -
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,618
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    تشکّر نشاندہی کے لئے :)
    کاپی پیسٹ کی تھی
    درست کردی ہے
    شاد رہیں
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر