زندگی

فرحت کیانی نے 'اشعار اور گانوں کے کھیل' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 15, 2007

  1. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    22,068
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    زندگی سے زندگی بھر پھر مٹایا کیجیے
    ایک ہی لحظہ میں وہ فتنہ اٹھا جاتا ہے دل
    نظرؔ لکھنوی
     
  2. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    22,068
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    خدا کا خوف، غمِ زندگی، کہ ذکرِ فنا
    بتا وہ چیز کہ دل کو ترے گداز کرے
    نظرؔ لکھنوی
     
  3. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    22,068
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    مسخ ہو کر رہ گیا ہر ایک بابِ زندگی
    دید کے قابل نہیں اب تو کتابِ زندگی

    راہِ حق میں جھیل کر دو دن عذابِ زندگی
    ہو گئے اہلِ محبت کامیابِ زندگی

    عاشقِ ناکام ہوں یا عاشقانِ با مراد
    غور اگر کیجے تو دونوں ہی خرابِ زندگی

    اہلِ دنیا میں رہا میں، گوشۂ صحرا میں تُو
    میں کہ تُو؟ زاہد بتا، ہے فیض یابِ زندگی

    تیز گامی دیکھتے کیا ہم کہ سوتے ہی رہے
    آ کے چلتا بھی بنا دورِ شبابِ زندگی

    ٹوٹتے رہنے کا منظر دیکھتا رہتا ہوں میں
    موت کی لہروں پہ ہے رقصاں حبابِ زندگی

    کلّیہ توحید کا معلوم جو تجھ کو نہیں
    ٹھیک لگ سکتا نہیں تجھ سے حسابِ زندگی

    توشۂ اعمال کچھ کر لے مہیا اے نظرؔ
    ایک دن ہونا ہے آخر احتسابِ زندگی
    ٭٭٭
    محمد عبد الحمید صدیقی نظرؔ لکھنوی​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    22,068
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    جان و دل سی شے کروں میں کیوں نثارِ زندگی
    مجھ کو حاصل جب نہیں کچھ اختیارِ زندگی

    کھینچ کر رکھ اس کی راسیں اے سوارِ زندگی
    تا غلط رخ پر نہ چل دے راہوارِ زندگی

    خوب ہی مرغوب ہے گو مرغزارِ زندگی
    پر اسی میں گھومتے پھرتے ہیں مارِ زندگی

    یہ حقیقت مجھ سے سن اے کامگارِ زندگی
    رزقِ بہتر پر نہیں دار و مدارِ زندگی

    میں یہ کہتا ہوں یہ مہلت ہے بکارِ آخرت
    میں نہیں دیتا تمھیں درسِ فرارِ زندگی

    زندگی کی کل حقیقت موت سے معلوم کر
    موت کو پایا ہے ہم نے رازدارِ زندگی

    کچھ بھی کہتے رہیے پھر، ہوتا نہیں دل پر اثر
    پھیل جائے جب کسی میں زہرِ مارِ زندگی

    آرزوؤں کے بھنور میں وہ نہیں پھنستا کبھی
    کھل گیا ہے جس پہ رازِ اختصارِ زندگی

    چند سانسوں کا تکلف رنج و غم کے درمیاں
    مجھ کو بھی ہونا تھا دو دن گنہگارِ زندگی

    میرے تیرے ذوق میں اے دل ہے بُعد المشرقین
    جاں نثارِ آخرت میں، تو نثارِ زندگی

    ٹوٹتے دیکھا حباب اور کھل گئی آنکھیں مری
    کر لیا تھا پہلے میں نے اعتبارِ زندگی

    موت کے چنگل سے اس کا بچ نکلنا ہے محال
    موت کو دیکھا ہے ہم نے پہرہ دارِ زندگی
    ٭٭٭
    محمد عبد الحمید صدیقی نظرؔ لکھنوی​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    لوحِ جہاں سے پیشتر لکھا تھا کیا نصیب میں
    کیسی تھی میری زندگی، کچھ تو پتہ چلے مجھے​
     
  6. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    زندگی ڈر کے نہیں ہوتی بسر، جانے دو
    جو گزرنی ہے قیامت، وہ گزر جانے دو
    دیکھتے جانا بدل جائے گا منظر سارا
    یہ دھواں سا تو ذرا نیچے اتر جانے دو
    سعد اللہ شاہ​
     
  7. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    اختر کو زندگی کا بھروسہ نہیں رہا
    جب سے لٹا چکے سر و سامانِ آرزو
    اختر شیرانی​
     
  8. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    عجب تضاد میں کاٹا ہے زندگی کا سفر
    لبوں پہ پیاس تھی بادل تھے سر پہ چھائے ہوئے​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    نہ کر شمار، کہ ہر شے گِنی نہیں جاتی
    یہ زندگی ہے حسابوں سے جی نہیں جاتی
    وسیم بریلوی​
     
  10. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    زندگی اک آنسوؤں کا جام تھا
    پی گئے کچھ اور کچھ چھلکا گئے
    شاہد کبیر​
     
  11. فلسفی

    فلسفی محفلین

    مراسلے:
    529
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    وقت تیرے بنا جو گزرتا ہے وہ
    زندگی کا مصیبت زدہ دور ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. فلسفی

    فلسفی محفلین

    مراسلے:
    529
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    ہم سے محبوب کا نام پوچھا گیا
    منہ سے نکلا فقط زندگی زندگی
     
  13. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    کیا ہے گر زندگی کا بس نہ چلا
    زندگی کب کسی کے بس میں ہے​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    زندگی دھوپ کا میدان بنی بیٹھی ہے
    اپنا سایہ بھی گریزاں، ترا داماں بھی خفا​
     
  15. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    زندگی کم ہے چاہتوں کے لیے
    لوگ کیوں نفرتوں میں جیتے ہیں​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  16. فلسفی

    فلسفی محفلین

    مراسلے:
    529
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    زندگی نے کیا عمر بھر موت کا
    انتظار اس طرح کوئی کرتا نہیں
     
  17. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    آئے، ٹھہرے اور روانہ ہو گئے
    زندگی کیا ہے، سفر کی بات ہے
    حیدر علی جعفری​
     
  18. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    1,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    سر جھکائے ہوئے خاموش ہوں یوسف کی طرح
    زندگی بیچ رہی ہے سرِ بازار مجھے​
     
    • زبردست زبردست × 1

اس صفحے کی تشہیر