زندگی

فرحت کیانی نے 'اشعار اور گانوں کے کھیل' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 15, 2007

  1. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    زندگی تُو نے مجھے قبر سے کم دی ہے جگہ
    پاؤں پھیلاؤں تو دیوار سے سر لگتا ہے!!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,701
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
  3. محب علوی

    محب علوی لائبریرین

    مراسلے:
    12,111
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    کہاں کے عشق و محبت کہاں کے ہجر و وصال
    یہاں تو لوگ ترستے ہیں زندگی کے لیے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  4. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہت شکریہ :)
     
  5. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہت خوب :)
     
  6. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    کبھی پلکوں پہ آنسو ہیں، کبھی لب پہ شکایت ہے
    مگر اے زندگی پھر بھی، مجھے تجھ سے محبت ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,701
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    زندگی پہ گلزار صاحب کی ایک نظم یاد آگئی

    زندگی کیا ہے جاننے کے لیے
    زندہ رہنا بہت ضروری ہے
    آج تک کوئی بھی رہا تو نہیں ۔۔

    آگے بھی ہے پر ابھی اتنی ہی یاد ہے۔
     
  8. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    شکریہ ضبط اور کوشش کریے گا اگر پوری نظم لکھ سکیں پلیز :)
     
  9. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,701
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    یہ نظم میں پہلے بھی محفل پہ پوسٹ کر چکا ہوں۔

    فرحت کی فرمائش پر دوبارہ۔

    [align=right:1d2fc98794]
    زندگی کیا ہے، جاننے کے لیے
    زندہ رہنا بہت ضروری ہے
    آج تک کوئی بھی رہا تو نہیں
    ساری وادی اُداس بیٹھی ہے
    موسمِ گُل نے خودکشی کر لی
    کس نے بارود بُویا باغوں میں
    آؤ ہم سب پہن لیں آئینے
    سارے دیکھیں گے اپنا ہی چہرہ
    سب کو سارے حسیں لگیں گے یہاں
    ہے نہیں جو دِکھائی دیتا ہے
    آئینے پر چھپا ہوا چہرہ
    تجربہ آئینے کا ٹھیک نہیں
    ہم کو غالب نے یہ دُعا دی تھی
    تم سلامت رہو ہزار برس
    یہ برس تو فقط دنوں میں گیا
    لب میرے میر نے بھی دیکھے ہیں
    پنکھڑی اِک گُلاب کی سی ہے
    بات سُنتے تو غالب ہوجاتے
    ایسے بکھرے ہیں رات دن جیسے
    موتیوں والا ہار ٹوٹ گیا
    تم نے مجھ کو پیرو کے رکھا تھا ۔۔۔[/align:1d2fc98794]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہت خوب :) [​IMG]
    اور بہت شکریہ
    خوش رہیے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    زندگی تجھ سے ہر اک سانس پہ سمجھوتہ کروں!!
    شوق جینے کا ہے مجھ کو ، مگر اتنا تو نہیں
     
  12. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    204,724
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کیا خیال ہے اس سے آگے ایسے اشعار لکھے جائیں جن میں لفظ “ زندگی “ آتا ہو۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,701
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    اچھا خیال ہے۔ پھر اس دھاگے کو شعر و شاعری میں موؤ کروا دیں۔
     
  14. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,701
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    شکریہ فرحت اور سمائلی بہت پسند آیا۔
     
  15. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused

    کیوں نہیں۔۔ :) بہت اچھا خیال ہے
     
  16. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    :) سمائلی کی طرف سے شکریہ :)
     
  17. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    موت کی حقیقت اور
    زندگی کے سپنے کی
    بحث گو پُرانی ہے۔
    پھر بھی اک کہانی ہے۔

    اور کہانیاں بھی تو
    وقت سے عبارت ہیں۔
    لاکھ روکنا چاہیں
    وقت کو گزرنا ہے۔
    ہنستے ہنستے چہروں کو
    اک دن اجڑنا ہے۔

    راحتیں ہوائیں ہیں
    چاہتیں صدائیں ہیں۔
    کیا کبھی ہوائیں بھی
    دسترس میں رہتی ہیں!
    کیا کبھی صدائیں بھی
    کچھ پلٹ کے کہتی ہیں!

    پیار بھی نہیں رہنا
    اور پیار کا دکھ بھی
    آنسوؤں کے دریا کو
    ایک دن اترنا ہے۔
    خواہشوں کو مرنا ہے
    وقت کو گزرنا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    204,724
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    زندگی کو کوئی جانے بھی تو جانے کیسے
    اِس کہانی میں تو کردار بہت ملتے ہیں
    (فاخرہ بتول)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  19. عمر سیف

    عمر سیف محفلین

    مراسلے:
    36,701
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    زندگی جبرِ مسلسل کی طرح کاٹی ہے
    جانے کس جُرم کی پائی ہے سزا یاد نہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,998
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    ہم زندگی کی جنگ میں ہارے ضرور ہیں
    لیکن کسی محاذ پر پسپا نہیں ہُوئے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر