حال ایسا نہیں کہ تم سے کہیں - محبوب خزاں

کاشفی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 29, 2018

  1. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    غزل
    (محبوب خزاں)
    حال ایسا نہیں کہ تم سے کہیں
    ایک جھگڑا نہیں کہ تم سے کہیں


    زیر لب آہ بھی محال ہوئی
    درد اتنا نہیں کہ تم سے کہیں


    تم زلیخا نہیں کہ ہم سے کہو
    ہم مسیحا نہیں کہ تم سے کہیں


    سب سمجھتے ہیں اور سب چپ ہیں
    کوئی کہتا نہیں کہ تم سے کہیں


    کس سے پوچھیں کہ وصل میں کیا ہے
    ہجر میں کیا نہیں کہ تم سے کہیں


    اب خزاںؔ یہ بھی کہہ نہیں سکتے
    تم نے پوچھا نہیں کہ تم سے کہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  2. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    13,258
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    خوبصوووورت!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر