بہادر شاہ ظفر تیرا گر ناخن پا تیرا مائل دھو کے پی جاتا،بہادر شاہ ظفر

ملائکہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 15, 2009

  1. ملائکہ

    ملائکہ محفلین

    مراسلے:
    10,592
    موڈ:
    Daring
    تیرا گر ناخن پا تیرا مائل دھو کے پی جاتا
    تو اس کے ہاتھ پاؤں مل کے کامل دھو کے پی جاتا

    نہ آتا ہاتھ خوں میرا اگر اس تشنہ خوں کے
    تو اپنی تیغ پر خوں کو وہ قاتل دھو کے پی جاتا

    اگلتا زہر پھر کیا کیا وہ تیرا نخت سودائی
    اگر کوئی تیرے رخسار کا تل دھو کے پی جاتا

    اگر ہوسکتا عالم میں حصول علم بے محنت
    تو پھر ساری کتابیں ایک جاہل دھو کے پی جاتا

    اٹھا سکتا جو مجنوں نقش پائے ناقہ لیلیٰ
    تو جوں تعویذ ہول دل وہ بیدل دھو کے پی جاتا

    حلاوت یاد کر کر تیری آب تیغ کی قاتل
    بدن کے زخم اپنے آپ گھائل دھو کے پی جاتا

    ظفر بے شغل ہی ہوجاتا سب کچھ منکشف اس پر
    در فخر جہاں گر کوئی شاغل دھو کے پی جاتا


    بہادر شاہ ظفر
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 6
  2. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,143
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    واہ۔۔۔
    ملائکہ، تیغ کی ایک جگہ املا غلط ہو گئی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. شاہ حسین

    شاہ حسین محفلین

    مراسلے:
    2,901
    بہت ہی زبر دست انتخاب ہے شامل کرنے کا شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    خوبصورت کلاسیکی انتخاب ہے۔ شکریہ!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. ملائکہ

    ملائکہ محفلین

    مراسلے:
    10,592
    موڈ:
    Daring
    آپ لوگوں کا شکریہ

    ملائکہ، تیغ کی ایک جگہ املا غلط ہو گئی ہے۔


    میں نے صحیح کردیا ہے:):):)
     
  6. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,757
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ ملائکہ خوبصورت غزل شیئر کرنے کیلیے!
     
  7. عمران شناور

    عمران شناور محفلین

    مراسلے:
    668
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    حسنِ انتخاب کی داد دیتا ہوں۔ واہ!
    دوسرے شعر میں ’دھو کے‘ کی بجائے ’دھو کہ‘ لکھا ہوا ہے
    درست فرما لیں۔
     

اس صفحے کی تشہیر