احمد ندیم قاسمی تجھے اظہار محبت سے اگر نفرت ہے

Umair Maqsood نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 13, 2016

  1. Umair Maqsood

    Umair Maqsood محفلین

    مراسلے:
    64
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    تجھے اظہار محبت سے اگر نفرت ہے
    تو نے ہونٹوں کو لرزنے سے تو روکا ہوتا
    بےنیازی سے مگر کانپتی آواز کے ساتھ
    تو نے گھبرا کے میرا نام نہ پوچھا ہوتا
    تیرے بس میں تھی اگر مشعل جذبات کی لو
    تیرے رخسار میں گلزار نہ بھڑکا ہوتا
    یوں تو مجھ سے ہوئیں صرف آب وہوا کی باتیں
    اپنے ٹوٹے ہوئے فقروں کو تو پرکھا ہوتا
    یونہی بے وجہ ٹھٹھکنے کی ضرورت کیا تھی
    دم رخصت اگر یاد نہ آیا ہوتا
    تیرا غماز بنا خود تیرا اندازِ خرام
    دل نہ سنبھلا تھا تو قدموں کو سنبھالا ہوتا
    اپنے بدلے میری تصویر نظر آجاتی
    تُو نے اُس وقت اگر آئینہ دیکھا ہوتا
    حوصلہ تجھ کو نہ تھا مجھ سے جُدا ہونے کا
    ورنہ کاجل تیری آنکھوں میں نہ پھیلا ہوتا

    احمد ندیم قاسمی
     
    • زبردست زبردست × 1
  2. توقیر عالم

    توقیر عالم محفلین

    مراسلے:
    293
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused

اس صفحے کی تشہیر