بیگم کلثوم نواز لندن میں انتقال کر گئیں

محمد عدنان اکبری نقیبی نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 11, 2018

  1. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    34,467
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Cheeky
    ٹویٹر پر جانے کی ضرورت نہیں تھی۔ یہیں دیکھ لیتیں
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  2. خالد محمود چوہدری

    خالد محمود چوہدری محفلین

    مراسلے:
    9,727
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    انا للہ و انا الیہ راجعون
    اللہ تعالیٰ مغفرت فرمائے۔ آمین
     
    • متفق متفق × 1
  3. سین خے

    سین خے محفلین

    مراسلے:
    1,515
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Aggressive
    سوشل میڈیا کے علاوہ سیاسی رہنماوَں کا رویہ بھی بے انتہا افسوسناک رہا۔ ابھی تک شائد صرف اعتزاز احسن کی معافی سامنے آئی ہے۔سیاسی رہنماوَں اور عوام کو اپنے رویے پر نظرِ ثانی کرنے کی انتہائی سخت ضرورت ہے۔
     
    • متفق متفق × 4
  4. مریم افتخار

    مریم افتخار مدیر

    مراسلے:
    4,079
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    انا للہ و انا الیہ راجعون
     
    • متفق متفق × 1
  5. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,045
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    انا للہ وانا الیہ راجعون۔
    اللہ تعالی مغفرت فرمائے۔ جنت الفردوس میں جگہ دے۔ ان کی قبر کو روشن، ہوادر، کشادہ اور ٹھنڈا رکھے۔ اس میں جنت کی کھڑکیاں کھول دے۔ لواحقین کو صبرِ جمیل عطا فرمائے اور مرحومہ کے لئے انھیں صدقئہ جاریہ بنا دے۔ آمین!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,045
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    مرحومہ ایک سال سے اذیت میں تھیں۔ بہت افسوس اور دکھ ہوتا تھا ان کی اذیت کا سوچ کے۔
     
  7. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    5,081
    ایسے افراد کی اخلاقی تربیت میں یقینی طورپر کوئی نہ کوئی کسر باقی رہ گئی ہے۔کیا کیا جائے؟
     
    • غمناک غمناک × 2
    • متفق متفق × 1
  8. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,045
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    ان کو اچھے طریقہ سے سمجھانے اور ان کے لئے دعا کی ضرورت ہے۔ کئ لوگ سمجھ بھی جاتے ہیں۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  9. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,045
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    طنز و طعنہ لوگوں کو اپنے منفی رویوں میں پختہ کر دیتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  10. سین خے

    سین خے محفلین

    مراسلے:
    1,515
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Aggressive
    میں اخلاقی تربیت کا تو نہیں کہوں گی کیونکہ بہت ہی پڑھے لکھے، سلجھے ہوئے اور اچھے کردار کے مالک افراد بھی اس سوشل میڈیائی بدتمیزی کے رواج کی لپیٹ میں آتے نظر آرہے ہیں۔

    اصل مسئلہ سیاسی لیڈروں اور ان کی سوشل میڈیائی ٹیموں کا ہے۔ یہ اگریسو ہوئے اور ساتھ میں انھوں نے اپنی سوشل میڈیائی ٹیموں کو گند مچانے کی کھلی چھٹی دے دی۔

    اگر کوئی مخالف پارٹی کا کسی دوسری پارٹی کے بارے میں تمیز سے بھی سوال کرتا ہے تو اس پر مذکورہ پارٹی کے افراد جو کہ زیادہ تر فیک آئی ڈیز ہیں، حملہ کر دیتے ہیں۔ سمجھنے کی ضرورت یہ ہے کہ جو جان بوجھ کر اس بدتمیزی کے طوفان کو کھڑا کیا گیا ہے، اس سے بچا جائے۔ یہ لیڈرز صرف عوام کی رائے کو manipulate کرنے کی کوشش میں مصروف ہیں اور افسوس کی بات یہ ہے کہ ہم اس سارے کھیل میں استعمال ہو چکے ہیں۔

    یہ صرف نفسیاتی حربے ہیں جن کے ذریعے عوام کی رائے اپنے حق میں تبدیل کی جاتی ہے۔ اب جس کے ساتھ بدتمیزی ہوتی ہے اور بار بار ہوتی ہے ذرا اس کی دماغی حالت سوچیں کچھ عرصے بعد کیسی ہو جائے گی؟ وہ بھی انسان ہے، وہ بھی بدتمیزی پر اتر آئے گا اور پھر ایک وقت آتا ہے کہ صحیح اور غلط کے درمیان جو باریک سی لکیر ہوتی ہے وہ بھی آنکھوں سے اوجھل ہو جاتی ہے۔

    ایک یہ بھی سوچ کچھ سالوں سے سامنے لائی گئی ہے کہ بڑے مجرموں کو جب تک ٹف ٹائم نہیں دیا جائے گا تب تک کچھ بھی حاصل نہیں ہو سکتا ہے۔ اب اس سب میں ایک عام سا ووٹر اور سپورٹر بھی پس جاتا ہے۔ اب وہ ذاتی زندگی میں کتنا ہی ایماندار اور نیک کیوں نہ ہو، اس نے چاہے کبھی کسی کا حق نہ مارا ہو یا ہاتھ پیر سے کسی کو کبھی تکلیف نہ پہنچائی ہو وہ بہرحال ایک منٹ میں غدار ٹہرا دیا جاتا ہے اور ملک کی پوری بربادی اس کے سر ڈال دی جاتی ہے کہ اس کے ووٹ کی وجہ سے یہ ہوا۔ یہ ذمہ دار ہے اس ملک کی بربادی کا۔ ایک وقت آتا ہے کہ وہ بھی یہی رویہ دوسروں کے لئے اپنا لیتا ہے۔

    اصل مسئلہ درپردہ جاری اس کھیل کو سمجھنے کا ہے۔

    بات یہ ہے کہ ہم کسی کی سوچ کو ذبردستی بدل نہیں سکتے۔ البتہ اگر لاجک سے بات کی جائے اور الزام تراشیوں سے بچا جائے تو ہو سکتا ہے کہ کسی کی سوچ وقت کے ساتھ بدل جائے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • متفق متفق × 3
  11. سین خے

    سین خے محفلین

    مراسلے:
    1,515
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Aggressive
  12. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,477
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    سب سے عجیب بات فیکے نے کی۔ سیاست اور ریاست کی اسے کچھ سمجھ نہیں، کل سے چپ چاپ وہ ٹی وی دیکھتا رہا، آج بولا تو صرف ایک جملہ:
    صاحب! جینا اور مرنا تو بس امیر آدمی کا ہے۔
    (یوسف سراج)
     
    • غمناک غمناک × 1
  13. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    1,633
    یہی معاملہ ہے۔ پچھلے چند دنوں سے ایسی بہت سی طنزیہ پوسٹس دیکھنے کو ملی۔ کم از کم کسی کے دُکھ کے موقع پر سیاست نہیں کرنی چاہئے۔ بیشک وہ آپ کا سب سے بڑاسیاسی حریف و ناقد کیوں نہ ہو۔ انسانیت سے بڑا مذہب اور کوئی نہیں۔
    ----------------------------------
    مائیں سب کی سانجھی ہوتی ہیں، سوائے عمران خان اور بینظیر کے بچوں کے، ان کی ماؤں کے خلاف چاہے جہاز سے تصویریں گرائیں، چاہے حاملہ ہونے کے باوجود ائیرپورٹ پر گرفتار کروا دیں۔۔۔
    ان کے علاوہ سب کی مائیں سانجھی ہوتی ہیں!!! بقلم خود باباکوڈا
    ----------------------------------
    اخلاقی گراوٹ کا جواب اخلاقی گراوٹ سے دینا انتہا درجہ کی زیادتی ہے۔ اس فعل کی بھرپور مذمت کرنی چاہئے۔
     
  14. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,045
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    اس مراسلہ کو پسندیدہ کی ریٹنگ دینے لگی تھی لیکن اس میں بھی ایک طنز موجود ہے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  15. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    9,045
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    نواز شریف کے خاندان کی موجودہ صورتحال کو ماسوائے ہمدردی اور عبرت کے کسی بھی اور تناظر میں نہیں دیکھنا چاہیے۔
    اللہ سب کی مشکلات دور کرے۔ سب کو ہدایت عطا فرمائے۔ آمین!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  16. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,638
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    آپ کا وہ حساب ہے کہ سگریٹ کا اشتہار دکھا کر آخر میں ڈسکلیمر دے دیا کہ سگریٹ نوشی صحت کے لیے مضر ہے۔ اخلاقی گراوٹ کا مقابلہ اخلاقی گراوٹ سے کرنا غلط ہے تو آپ ایسی پوسٹس کاپی پیسٹ ہی نہ کریں۔
    باقی رہی کسی بھی انسان کے ماضی کی غلط بات کی تو وہ اس کا عمل ہے۔ اس کی سزا ایک بیمار اور اس دنیا سے رخصت ہونے والے کو کیوں ملے۔
    وہی نواز شریف جس پر یہ فضول حرکت کرنے کا الزام ہے اسی نواز شریف کی پی پی پی والے اور بے نظیر کے بچے اس بات کا اعتراف کرتے ہیں کہ بے نظیر کے قتل کے موقع پر وہ سب سے پہلے اظہار یکجہتی کرنے والوں اور ان کے خاندان سے تعزیت کرنے والوں میں شامل تھے۔ اسی نواز شریف نے عمران خان کے گرنے پر ان کی عیادت کی تھی اور حامد میر کو گولی لگنے پر بھی۔ پھر کلثوم نواز کی تو ہر کوئی تعریف کرتا ہے۔ حتی کہ گیلانی اور تاثیر خاندان جو ان کے سیاسی مخالفین ہیں ان کے بچوں کے اغوا پر جس طرح انھوں نے بطور ماں ان کی والداوں کو حوصلہ دیا وہ لوگ ہر فورم پر اس کا اعتراف کرتے ہیں۔


    میں نہ تو نواز شریف کی پارٹی سے ہوں اور نہ ہی یہ ان کے بہت بڑے کارنامے ہیں لیکن میرا خیال ہے کہ ایسے مواقع پر تمام تر مخالفت کو بھلا کر اخلاق اور حسن سلوک سے کام لینا چاہیے۔ اور نواز شریف نے ان مواقع پر ایسا ہی کیا۔
    باقی اللہ کی پکڑ سے ڈرنا چاہیے اور دوسروں کے انجام و حالات سے عبرت بھی حاصل کرنی چاہیے۔
     
    • زبردست زبردست × 2
    • متفق متفق × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  17. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    1,633
    جی ہاں۔ امید ہے نئی حکومت ماضی کے حکمرانوں سے سبق سیکھ کر وہی غلطیاں دوبارہ نہیں دہرائے گی۔
     
  18. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    1,633
    جاتی امراء : بیگم کلثوم نواز، میاں شریف کے پہلو میں سپرد خاک
    سابق خاتون اول بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ شریف میڈیکل سٹی میں ادا کردی گئی، مولانا طارق جمیل نے نماز جنازہ کی امامت کی اور مرحومہ کیلئے دعا کرائی، سابق وزیراعظم نواز شریف، شہباز شریف، سابق صدر ممنون، اسپیکر قومی اسمبلی، گورنر پنجاب سمیت دیگر سیاستدان اور مذہبی رہنماؤں نے بھی شرکت کی۔ بیگم کلثوم نواز کو میاں محمد شریف کے پہلو میں سپرد خاک کردیا گیا۔
    سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ شریف میڈیکل سٹی میں ادا کی گئی، مولانا طارق جمیل نے نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد دعا کرائی، سابق وزیراعظم نواز شریف، شہباز شریف، سیاسی و مذہبی رہنماء، سماجی و کاروباری شخصیات، عزیز و اقارب سمیت مسلم لیگ ن کے ہزاروں کارکنوں نے بھی شرکت کی۔
    بیگم کلثوم نواز کا جسد خاکی جاتی امراء سے ایمبولینس کے ذریعے جنازہ گاہ پہنچایا گیا، نماز جنازہ کے بعد شریف میڈیکل سٹی میں خاندانی قبرستان میں میاں شریف کے پہلو میں سپرد خاک کردیا گیا۔
    [​IMG]
    نماز جنازہ کیلئے ہزاروں افراد کی موجودگی کے باعث کچھ بدنظمی بھی دیکھنے میں آئی، اس موقع پر علاقے میں سیکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے گئے تھے۔
    بیگم کلثوم نواز 11 ستمبر کو طویل علالت کے بعد لندن میں انتقال کر گئی تھیں، لندن کی ریجنٹ پارک مسجد میں ان کی نماز جنازہ ادا کی گئی تھی، جس میں مرحومہ کے بیٹے حسن اور حسین نواز، اسحاق ڈار، چوہدری نثار سمیت دیگر اہم شخصیات اور عزیز و اقارب نے شرکت کی تھی۔
    حسن اور حسین نواز پاکستان میں مقدمات کے باعث اپنی والدہ کی تدفین میں شرکت کیلئے وطن واپس نہیں آئے جبکہ اسحاق ڈار کے بھی آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں وارنٹ گرفتاری جاری ہونے پر پاکستان نہیں آئے۔
     

اس صفحے کی تشہیر