برائے اصلاح :ہم تری یاد کو چپکے سے بلا لیتے ہیں

یاسر علی نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 19, 2020

  1. یاسر علی

    یاسر علی محفلین

    مراسلے:
    261
    الف عین
    محمّد احسن سمیع :راحل:
    محمد خلیل الرحمٰن

    ہم تری یاد کو ،چپکے سے بلا لیتے ہیں
    اس لئے اشک ،جدائی میں بہا لیتے ہیں

    تم تو ساجن ہو، تمہیں کیوں نہ سمائیں دل میں؟
    ہم تو دشمن کو بھی سینے سے لگا لیتے ہیں

    باندھ لیں سینے پہ، تو ہم کو شفا ملتی ہے
    جب ترے نام کا تعویز، بنا لیتے ہیں

    تیرے لوٹ آنے کی، جب کوئی خبر ملتی ہے
    ہم تری راہ میں پلکوں کو بچھا لیتے ہیں

    روبرو بیٹھے ہیں! نظریں نہ ملا پائیں ہم
    اک نظر دیکھ کے ،آنکھوں کو جھکا لیتے ہیں

    جب ترا ہجر بہت حد سے گزرتا ہے تو ہم
    تیری تصویر کو سینے سے لگا لیتے ہیں

    میرا کمرہ تری خوشبو سے مہک اٹھتا ہے
    جب ترے لب، کسی کاغذ پہ بنا لیتے ہیں

    ہم بھٹکتے نہیں میثم شبِ ظلمت میں کبھی
    اک تری یاد کی جو شمع جلا لیتے ہیں
    یاسر علی میثم
     
  2. ڈاکٹر عظیم سہارنپوری

    ڈاکٹر عظیم سہارنپوری محفلین

    مراسلے:
    544
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Twisted
    ہم تری یاد کو چپکے سے بلا لیتے ہیں
    اس لئے اشک جدائی میں بہا لیتے ہیں

    دل دکھا لیتے ہیں کچھ اشک بہا لیتے ہیں

    تم تو ساجن ہو تمہیں کیوں نہ سمائیں دل میں
    ہم تو دشمن کو بھی سینے سے لگالیتے ہیں

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔بسائیں دل میں
     
    • متفق متفق × 1
  3. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,181
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    ہم تری یاد کو ،چپکے سے بلا لیتے ہیں
    اس لئے اشک ،جدائی میں بہا لیتے ہیں
    ... کاما کی کیا ضرورت ہے؟
    اشک اس لئے بہانا پڑتا ہے تو یاد کو بلانا چہ معنی دارد؟
    اسی لئے شاید ڈاکتر عظیم نے اصلاح کی ہے، لیکن وہ بھی بے ربط ہی لگتی ہے

    تم تو ساجن ہو، تمہیں کیوں نہ سمائیں دل میں؟
    ہم تو دشمن کو بھی سینے سے لگا لیتے ہیں
    .. سمانا واقعی غلط استعمال ہے یہاں، بسانا درست ہے جیسا عظیم میاں نے لکھا ہے
    ساجن البتہ بالی ووڈ برانڈ لفظ ہے، اردو شاعری کا نہیں

    باندھ لیں سینے پہ، تو ہم کو شفا ملتی ہے
    جب ترے نام کا تعویز، بنا لیتے ہیں
    .. درست، اگرچہ 'تو' کا طویل کھینچا جانا روانی کو متاثر کرتا ہے

    تیرے لوٹ آنے کی، جب کوئی خبر ملتی ہے
    ہم تری راہ میں پلکوں کو بچھا لیتے ہیں
    .. درست

    روبرو بیٹھے ہیں! نظریں نہ ملا پائیں ہم
    اک نظر دیکھ کے ،آنکھوں کو جھکا لیتے ہیں
    .. درست

    جب ترا ہجر بہت حد سے گزرتا ہے تو ہم
    تیری تصویر کو سینے سے لگا لیتے ہیں
    ... ہجر کا حد سے گزرنا؟
    جب ترا ہجر بہت شاق گزرتا ہے تو ہم

    میرا کمرہ تری خوشبو سے مہک اٹھتا ہے
    جب ترے لب، کسی کاغذ پہ بنا لیتے ہیں
    .. درست

    ہم بھٹکتے نہیں میثم شبِ ظلمت میں کبھی
    اک تری یاد کی جو شمع جلا لیتے ہیں
    .. ٹھیک
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. ڈاکٹر عظیم سہارنپوری

    ڈاکٹر عظیم سہارنپوری محفلین

    مراسلے:
    544
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Twisted
    باندھ لیں سینے پہ تو ہم کو شفا ملتی ہے
    جب ترے نام کا تعویز بنا لیتے ہیں

    شاید تعویذ سینے پے باندھا نہیں جاتا

    درد جب سے حد سے گزرتا ہے شفا کی خاطر
    ہم ترے نام کا تعوی ذ بنا لیتے ییں


    میرا کمرہ تیری خوشبو سے مہک اٹھتا ہے
    جب ترے لب کسی کاغذ پہ بنا لیتے ہیں

    میرا کی ساتھ بنا لیتے ہیں اس پہ غور فرمائیں


    ہم بھٹکتے نہیں میثم شب ظلمت میں بھی
    اک تری یاد کی جو شمع لیتے ہیں

    بس تری یاد کی اک شمع جلا لیتے ہیں

    ناچیز کے یہ کچھ مشودے ہیں اگر قابل قبول ہوں
    ماہرین کی رائے کے بعد
     
    • متفق متفق × 3
  5. ڈاکٹر عظیم سہارنپوری

    ڈاکٹر عظیم سہارنپوری محفلین

    مراسلے:
    544
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Twisted
    جب ترا ہجر بہت شاق گزرتا ہے تو ہم

    ذرا سی ترمیم واہ کیا زبردست شعر ہو گیا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  6. یاسر علی

    یاسر علی محفلین

    مراسلے:
    261
    تم تو ساجن تو تمھیں کیوں نہ سمائیں دل میں۔۔

    میں نے لغت میں دیکھا تو بسانا کا معنی۔۔آباد کرنا
    یعنی گھر آباد کرنا ،شہر آباد کرنا
    اور
    سمانا کا معنی رچنا ،بسنا،اندر آنا وغیرہ تھے
    جس پر ایک شعر بھی لکھا تھا۔
    واعظ کی بلاغت بھی بڑی چیز ہے لیکن
    سچ بات یہ ہے دل میں سمانا بھی ہے اک چیز

    راہنمائی درکار ہے آخر سمانا کیوں نہیں آسکتا؟
    شکریہ
     
  7. یاسر علی

    یاسر علی محفلین

    مراسلے:
    261
     
  8. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    9,834
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    کسی کے دل میں بسنے کے لیے تو سمانا استعمال ہوسکتا تھا لیکن کسی کو دل میں بسانے کے لیے نہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,181
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    وہ خود دل میں سماتا ہے، آپ اسے سما نہیں سکتے۔ آپ اسے بسا سکتے ہیں
    عظیم کے مشورے صائب ہیں، میرا کمرہ کے شتر گربہ پر صرف نظر کر گیا تھا
     
    • متفق متفق × 1
  10. یاسر علی

    یاسر علی محفلین

    مراسلے:
    261
    بہت شکریہ خلیل صاحب!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  11. یاسر علی

    یاسر علی محفلین

    مراسلے:
    261
    اب دیکھئے گا جناب!


    چوم لیتے ہیں اسے پاس بٹھا لیتے ہیں
    ہم کبھی پھول کو، ہونٹوں پہ سجا لیتے ہیں

    تم تو ساجن ہو، تمہیں کیوں نہ بسائیں دل میں؟
    ہم تو دشمن کو بھی سینے سے لگا لیتے ہیں

    باندھ لیں دل پہ تو کچھ ہم کو شفا ملتی ہے
    یا
    باندھ لیں سینے پہ، تو ہم کو شفا ملتی ہے
    جب ترے نام کا تعویز، بنا لیتے ہیں

    تیرے لوٹ آنے کی، جب کوئی خبر ملتی ہے
    ہم تری راہ میں پلکوں کو بچھا لیتے ہیں

    روبرو بیٹھے ہیں! نظریں نہ ملا پائیں ہم
    اک نظر دیکھ کے ،آنکھوں کو جھکا لیتے ہیں

    جب ترا ہجر بہت شاق گزرتا ہے تو ہم
    تیری تصویر کو سینے سے لگا لیتے ہیں

    تیری خوشبو سے مہک اٹھے ہمارا کمرہ
    جب ترے لب، کسی کاغذ پہ بنا لیتے ہیں

    ہم بھٹکتے نہیں میثم شبِ ظلمت میں کبھی
    بس تری یاد کی اک شمع جلا لیتے ہیں
    یاسر علی میثم
     
  12. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,181
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    باندھ لیں دل پہ تو کچھ ہم کو شفا ملتی ہے
    بہتر ہے
    تم تو ساجن ہو، تمہیں کیوں نہ بسائیں دل میں؟
    ہم تو دشمن کو بھی سینے سے لگا لیتے ہیں
    ایک تو ساجن کے بارے میں لکھ چکا ہوں
    دوسرے پوری غزل میں محبوب کے لئے تو کا صیغہ استعمال کیا گیا ہے، یہاں تم کیوں
    تو ہے محبوب، تجھے کیوں....
    تو تو محبوب ہے، پھر کیوں...
    دو تجاویز
    باقی درست ہو ہی چکی ہے غزل
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. یاسر علی

    یاسر علی محفلین

    مراسلے:
    261
    بہت بہت شکریہ
     

اس صفحے کی تشہیر