املا نامہ (طبع ثانی) ۔ مرتبہ ڈاکٹر گوپی چند نارنگ - تبصرہ

شمشاد نے 'لکھنے پڑھنے میں مدد' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 15, 2009

  1. جیلانی

    جیلانی محفلین

    مراسلے:
    304
    فاتح جی اب بیان کردہ اصولوں کے مطابق
    ماریا لکھنا غلط اور ماریہ صحیح ہے
    اسی طرح راجا لکھنا غلط اور راجہ لکھنا درست ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,663
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    شکریہ جیلانی صاحب۔
    شاید آپ جلدی میں لکھ گئے ہیں لیکن دراصل راجا درست ہے جب کہ راجہ غلط
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. جیلانی

    جیلانی محفلین

    مراسلے:
    304
    اول آپ کے جواب کا شکریہ
    اب آپ ۔۔۔۔۔۔ تمھیں اور تمھیں (تم ہی ں) کی وضاحت بھی کردیں ۔۔۔۔ املا اور استعمال کے لحاظ سے
    اسی طرح تو اور تم استعمال کے لحاظ سے
     
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,074
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    تمہیں درست ہے، تمھیں نہیں، کیونکہ ’مھ‘ کوئی مرکب حرف نہیں ہوتا بھ پھ تھ کی طرح۔
    جہاں تک سوال آپ، تم اور تو کا ہے، تو ’آپ‘ بزرگوں اور تعظیم کے ساتھ مخاطبت میں استعمال ہوتا ہے۔
    ’تم‘ بے تکلفی اور چھوٹوں کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔
    اور ’تو‘ یا تو حقارت کے لئے یا نہایت عظمت کے لئے استعمال ہوتا ہے، کہ خدا کے لئے بھی ‘تو‘ استعمال کیا جاتا ہے۔ اس لئے کہ واحد و یکتا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  5. محمد مسلم

    محمد مسلم محفلین

    مراسلے:
    222
    زبر دست، کیا خوب معلوماتی اور اصلاحی دھاگہ ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. عبیداللہ عبید

    عبیداللہ عبید محفلین

    مراسلے:
    242
    ماشاء اللہ اردو فورمز پر ایسے مباحث دیکھنے کے لیے آنکھیں ترستی ہیں ، اکثر فورمز پر صرف نیٹ پر اردو کی ترویج کو ہی اردو کی ترقی خیال کیا جاتا ہے ، حالانکہ یہ صرف ایک رخ ہے ۔

    اللہ جزائے خیر عطافرمائے بھائی !
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  7. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,074
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    اب اس کتاب کو لیا ہے تدوین کے لئے۔ لیکن معلوم ہوا کہ آخری باب چھوڑ رکھا ہے تم نے۔ پاسکی میں لکھی پی ڈی ایف فائل ملی ہے مجھے یہاں سے۔ لیکن ان دونوں میں کیا امتیازات ہیں؟ یہ اصل رشید حسن خاں کی ہے، نارنگ کی اضافہ شدہ نہیں۔ کیا تم یہ ڈاکیومینٹ ای میل کر سکتے ہو، مع پی ڈی ایف فائل کے؟
     
  8. قرۃالعین اعوان

    قرۃالعین اعوان محفلین

    مراسلے:
    8,646
    موڈ:
    Lurking
    شاندار!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. محمد ساجد

    محمد ساجد محفلین

    مراسلے:
    63
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Question
    بہت بہت شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. مقدس

    مقدس لائبریرین

    مراسلے:
    28,415
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Tired
    املا نامہ طبع ثانی کا مقدمہ اول بھی ٹائپ اور پروف ریڈ کر کے پوسٹ کر دیا گیا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  11. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,663
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    جی آخری باب میں کچھ علامات کی تصاویر ڈالنی ہیں اور کچھ ٹیبلز بنانے ہیں۔ نیز مقدمہ طبع اول بھی مقدس نے ٹائپ کر لیا ہے وہ بھی شامل ہو گیا ہے۔
    اس لنک پر رشید حسن خان کی ایک اور کتاب "اردو کیسے لکھیں" موجود ہے جو "املا نامہ" سے مختلف ہے جب کہ املا نامہ طبع ثانی گوپی چند نارنگ کا مرتب کردہ ہے۔
    مکمل ہونے کے بعد اس کی پروف ریڈنگ اور فارمیٹنگ کر کے اردو لائبریری میں بھی شامل کر دوں گا اور آپ کو ای میل بھی کر دوں گا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  12. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    السلام علیکم
    اعجاز انکل۔ آج میری ایک صاحب سے اردو املا پر کافی بحث ہوئی۔ ان کے مطابق 'تمہیں' کو اب 'تمھیں' لکھنا درست سمجھا جاتا ہے۔ اور اسی طرح تمہارا کو تمھارا اور انہی کو انھی لکھا جاتا ہے۔ پھر انہوں نے آزمائش کو آزمایش لکھنا بھی درست کہا اورط قراءت کے لئے ان کا کہنا تھا کہ الف کے اوپر ہمزہ نہیں ہو گا اور ء بھی اسی طرح الف کے بعد لکھا جائے گا ۔ یعنی 'قراءت' درست املا ہے۔ حوالہ وہ انڈیا کے کسی محقق اور آسی ضیائی صاحب کا دے رہے تھے۔ میں نے ان سے کتابوں کے نام بھی لکھوائے تھے لیکن وہ پرچی دفتر ہی بھول آئی۔ میں نے اسی وقت سوچا تھا کہ آپ سے کنفرم کروں گی۔ تو اب مجھے بتائیں کہ ان الفاظ کی درست املا کیا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,074
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    میں تو اپنی رائے پر قائم ہوں۔ اختلاف رائے تو ممکن ہے ہی۔میں سمجھتا ہوں کہ ھ کوئی الگ حرف نہیں ہے، ہ کی ہی متبادل شکل ہے۔ الگ حرف نہیں۔ اور ہندی حرقف بھ، پھ، تھ ٹھ وغیرہ کے لئے دو چشمی کا استعمال کیا کائے۔ اور اس صورت میں میرا یہ بھی خیال ہے کہ کمپوزنگ میں بھی اس کو مکمل حرف گردانا جائے، اور اعراب بھی اسی طرح لگائے جائیں۔ یعنی ’پھر‘ میں زیر لگانا ہو تو ھ کے بعد آنا چاہئے۔ اگر پ اور ھ کے درمیان لگایا جائے تو پِ ہ ر پڑھا جائے گا۔ پھِ ر پڑھنے کے لئے بعد میں ہی اعراب کی ضرورت ہے۔ میری لغت کی فائل میں میں نے اس قسم کے سارے الفاظ کرلپ کی لسٹ سے نکال دئے ہیں۔ اور درست املا ویسی ہی رکھی ہے جیسی میں چاتا ہوں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. ثاقب حسن

    ثاقب حسن محفلین

    مراسلے:
    30
    جھنڈا:
    Pakistan
    السلام علیکم فاتح الدین بھاٸ۔
    جناب ایک سوال پوچھنا تھا کہ وہ الفاظ جن کا مخفف بنتا ہے جیسے، نگاہ کا نگہ، گناہ کا گنہ، شاہ کا شہ وغیرہ۔تو کیا جب ہم مخفف کو ادا کرتے ہیں تو (ہ) کو بھی ادا کرتے ہیں؟
     
  15. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,663
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    جی بالکل ادا کرتے ہیں۔
     
  16. ثاقب حسن

    ثاقب حسن محفلین

    مراسلے:
    30
    جھنڈا:
    Pakistan
    یعنی بولتے ہوئےاس کو پرَناٶنس کِیا جاتا ہے؟
     
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر