اردو اور فارسی کے نظائرِ خادعہ

حسان خان نے 'ادبیات و لسانیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 7, 2014

  1. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,789
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    جناب سید عاطف علی، معاصر معیاری عربی میں 'تعمیر' عموماً کس معنی میں استعمال ہوتا ہے؟ مجھے عربی فرہنگوں میں اِس لفظ کے ذیل میں 'بِنا کرنا' اور 'ترمیم و اصلاح کرنا' دونوں معانی نظر آئے ہیں۔
    عربی میں اِس لفظ کا ایک معنی 'طُولِ عُمر' بھی ہے۔
     
  2. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    4,928
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    عربی میں ان ہی معنی میں مستعمل ہے بنانا بنا کر کھڑآ کرنا وغیرہ اور طول عمر بھی ۔ تدمیر کے مقابل ااکثر آتا ہے ۔ بنانا بگاڑنا ۔۔۔۔جبکہ اردو میں مثبت عمل یا حرکت یا فکر کا تاثر بھی رکھتا ہے اور تخریب کے مقابل آت ا ہے۔۔۔
    جیسے ۔۔۔۔۔مری تعمیر میں مضمر ہے اک صورت خرابی کی ۔ ہیولا برق خرمن کا ہے خون گرم دہقاں کا۔غالب۔
    ایک گیم دیکھیں کاسل بلڈنگ ۔قلعہ تعمیر کرنے کا ۔
    العاب تدمير وتعمير القلعه مراحل
     
    آخری تدوین: ‏اکتوبر 28, 2016
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,789
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    زبردست/زبردستی

    فارسی میں 'زبردست' اور 'زبردستی' بالترتیب 'چیرہ دست و ماہر' اور 'چیرہ دستی و مہارت' کے معنوں میں استعمال ہوتے ہیں۔

    "سلطان حسین بایقرا خود شاعری زبردست، خطاطی توانا و انسانی فرهیخته بود۔"
    سلطان حُُسین بایقرا خود ایک ماہر شاعر، ایک توانا خطّاط اور ایک باثقافت انسان تھا۔"

    "نویسنده امثال و اصطلاحاتِ مردمِ کوی و برزن را گاه با زبردستی به کار برده و بدین سان به رسایی و شیوایی و شیرینیِ سخنش افزوده...."
    مصنّف نے گلی محلّوں کے مردُم کی اَمثال و اصطلاحات کو گاہے مہارت کے ساتھ استعمال کیا ہے اور اِس طرح اپنے کلام کی بلاغت و فصاحت و شیرینی میں اضافہ کیا ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏جنوری 9, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  4. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,789
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    مقبول
    افغان فارسی میں، خصوصاً کابُلی گفتاری فارسی میں، لفظِ 'مقبول' زیبا و جمیل و خوبصورت کے معنی میں استعمال ہوتا ہے۔
    تو بسیار مقبول استی. = تم بہت خوبصورت ہو۔


    اگرچہ لغت نامۂ دہخدا میں اِس لفظ کا یہ معنی اور کہنہ ادبی فارسی میں اُس کے استعمال کی چند مثالیں ثبت ہیں، لیکن ایران اور تاجکستان کے لہجوں میں مَیں نے کبھی 'مقبول' کو 'زیبا' کے معنی میں استعمال ہوتے نہیں دیکھا، بلکہ وہاں یہ لفظ قبول شدہ یا موردِ قبول چیز اور پسندیدہ کے معنوں میں کام میں لایا جاتا ہے۔
    فارسی میں لفظِ ہٰذا 'مشہور' کے مفہوم میں مستعمَل نہیں ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏فروری 12, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    584
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    یہ سخنش ہوگا غالباََ
     
    • متفق متفق × 1
  6. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    4,928
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    اردو محاورہ " قبول صورت ہونا" (بمعنی خوبصورت نہ ہونا) بھی اسی کے معنوی اشتقاق کا شاخسانہ لگتا ہے ۔واللہ اعلم۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,789
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    شِعر
    فارسی میں، عربی و تُرکی کی طرح، لفظِ 'شِعر' شاعری یا نظم کے لیے استعمال ہوتا ہے، مثلاً شبلی نعمانی کی کتاب 'شعرالعجم' کے نام کا مفہوم 'عجم کی شاعری' ہے، لیکن موجودہ دور کی اردو میں یہ لفظ عموماً دو مصرعوں پر مشتمل 'بیت' کے معنی میں استعمال کیا جاتا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    11,789
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    کمینه
    زمانِ حاضر کی اردو میں 'کمینہ' بدخِصلت و بدنِہاد شخص کے لیے دُشنام کے طور پر استعمال ہوتا ہے، جبکہ فارسی میں یہ 'کمترین'، یا پھر عام طور پر 'حقیر و ناچیز و خاکسار' کے مفہوم میں استعمال کیا جاتا ہے۔ تاجکستان سے ایک مثال ملاحظہ کیجیے:
    "به عقیدهٔ کمینه، مناسبت و برخوردِ حکومت با مخالفین عِوض و مطابق با شیوه‌هایِ مُتمدّنِ جهانِ مُعاصر بشود."
    ترجمہ: "[اِس] حقیر کی رائے میں، حکومت کی مُخالفین کے ساتھ مناسبت اور طرزِ سلوک تبدیل، اور مُعاصر دنیا کے متمدّن طریقوں کے مطابق ہو جانا چاہیے۔"

    قفقازی آذربائجان کی ایک تُرکی/فارسی شاعرہ فاطمہ خانم کا تخلُّص 'کمینہ' تھا، اور اِس سے اُن کی مُراد اپنی فُروتنی و تواضُع ظاہر کرنا تھی۔ چونکہ فارسی میں دستوری تذکیر و تأنیث نہیں ہے، اِس لیے یہ لفظ مذکّر و مؤنّت ہر دو کے لیے استعمال ہو سکتا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1

اس صفحے کی تشہیر