1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $413.00
    اعلان ختم کریں

آپ کے علاقے کے ٹریفک کے قوانین اور معلومات

سید عاطف علی نے 'روز مرہ کے معمولات سے' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 27, 2018

  1. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,689
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    ہمارے ہاں اوور ہیڈ پل اس لیے بنائے جاتے ہیں کہ نیچے سے روڈ کراس کرنے والے لوگوں کو دھوپ کے وقت سایہ اور بارش کے وقت چھت مل سکے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 7
  2. ربیع م

    ربیع م محفلین

    مراسلے:
    3,540
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Lonely
    ہمارے ہاں بسوں میں سفر کرتے وقت منزل مقصود پر بروقت پہنچنے کیلئے دعا کی جاتی ہے کہ یا اللہ آج بساں دی ریس لگ جاوے.
     
    • پر مزاح پر مزاح × 7
    • زبردست زبردست × 2
  3. ربیع م

    ربیع م محفلین

    مراسلے:
    3,540
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Lonely
    فیصل آباد سے شکر گڑھ یا سیالکوٹ جانے والی گاڑیاں اپنی تیز رفتاری میں مشہور ہیں ان کے ڈرائیورز کا مشہور مقولہ ہے کہ مالک کا حکم ہے پورے ٹائم تے سٹئیرنگ تے ڈرائیور اڈے وچ پہنچ جان
     
    • پر مزاح پر مزاح × 7
  4. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    36,968
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    اس لڑی کا عنوان بدل کر “پاکستانی ٹریفک کی مادر پدر آزادی” رکھ دیں
     
    • پر مزاح پر مزاح × 6
    • زبردست زبردست × 1
    • متفق متفق × 1
  5. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    "ہارن بقدرِ جثہ" مروج ہے ہمارے یہاں۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 6
  6. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    نیز اس کے نیچے ریڑھیوں اور اوپر "جہازوں" کو پارکنگ پلیس مل سکے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
  7. شاہد شاہ

    شاہد شاہ محفلین

    مراسلے:
    2,568
    ڈنمارک آکر ٹریفک کا سب سے عجیب قانون یہ پتا چلا کہ کاروں کی ہیڈ لائٹس ہر وقت کھلی رہنی چاہئے۔ چاہے دن دھیاڑا ہو اور گاڑی کی اپنی چلتی ہیڈ لائٹس نہ نظر آئیں تب بھی انکو بجلی کی فراہمی منقطع نہیں کی جا سکتی۔ اس قانون کی توجیہہ یہ ہے کہ اس سے چلتی گاڑی اور پارک شدہ گاڑی میں فرق معلوم ہوتا ہے۔ مزید
     
    • معلوماتی معلوماتی × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  8. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    زیادہ تر اشارے (یعنی ٹریفک سگنل) جگہوں کے ریفرنس کے لئے ہوتے ہیں، نہ کہ ٹریفک کو روکنے یا ریگولیٹ کرنے کے لئے۔ جیسے
    ناز سینما والے اشارے سے اگلی گلی میں دائیں مڑیں گے تو سامنے نادرا کا دفتر ہے۔
    ریگل چوک والے اشارے کے ساتھ ہی دال چاول کی ریڑھی لگتی ہے۔ بہت لذیذ دال چاول ہوتے ہیں۔
    وغیرہ وغیرہ
     
    • پر مزاح پر مزاح × 7
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  9. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    18,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    ڈی آر ایلز کا ذکر ہے یا فل ہیڈ لائٹس کا؟
     
    • متفق متفق × 2
  10. شاہد شاہ

    شاہد شاہ محفلین

    مراسلے:
    2,568
    فل ہیڈ لائٹس جناب۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 3
  11. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    7,064
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    کہیں کہیں محفلین علاقے کا نام شامل بھی کر رہے ہیں۔ تا ہم محفلین کے نام کے ساتھ ان کا علاقہ بھی لکھا ہوتا ہے جس سے قدرے اندازہ ہوجاتا ہے کہ کہاں کی بات ہو رہی ہے۔
     
  12. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    7,064
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    یہاں رفتار کا جرمانہ پچیس کلومیٹر فی گھنٹہ کےفرق تک تین سو ریال ہے۔ اس سے زیادہ پانچ سو یا چھے سو ہے ۔
    سرخ اشارے کو توڑنے کا جرمانہ تین ہزار ریال ہے۔
    غلط جگہ یا غلط طریقے سے پارکنگ پو سو ریال ہے۔
    نیز اگر کوئی جرمانہ ایک ماہ تک ادا نہ تو دگنا بھی ہو جاتا ہے اور پھر مزید نہیں بڑھتا۔
     
  13. عزیزامین

    عزیزامین محفلین

    مراسلے:
    8,027
    جھنڈا:
    Canada
    موڈ:
    Happy
    میرا مطلب ہے دھاگے کا نام دنیا بھر کے قوانین یا معلومات عالم ہوتا جس میں ایک موضوع پر ایک لڑی ہوتی؟یا کسی کو نیا ایسا دھاگہ بنانا چاہیے؟
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  14. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    11,857
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    ہمارے بہاولپور میں ٹریفک سگنلز بھی نہیں تھے اور ٹریفک کنٹرول کرنے والے بھی نہیں ۔
    دو واقعات پتہ چلے۔ میری دوست کے بہنوئی جو دانتوں کے ڈاکٹر ہیں،لاہور گئے۔وہاں ٹریفک سگنل توڑا۔ ٹریفک سارجنٹ نے روکا تو کہنے لگے "اسی بہاوپور توں آئے ہیں۔"اُس نے جانے دیا۔
    ایک اور ملنے والوں نے بھی اسی طرح کا واقعہ بتایا کہ بہاولپور سے تعلق کی بنا پر نہیں بلکہ یہاں ٹریفک سگنلز نہ ہونے سے عادت نہیں تھی تو اس لئے انہوں نے جانے دیا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  15. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    11,857
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    اب ٹریفک زیادہ ہوجانے کی وجہ سے دونوں ہیں۔
     
  16. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,689
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    یعنی دنیا بھر میں ٹریفک قوانین کی پابندی کی ایک بڑی وجہ بھاری جرمانہ اور آٹومیٹک چالان سسٹم ہے۔
    اور یہ دونوں ہمارے ہاں مفقود ہیں۔
    اسلام آباد میں ایک دفعہ چالان بڑھائے گئے، خاص طور پر پبلک ٹرانسپورٹ والوں کے لیے۔ جس پر ٹرانسپورٹ مافیا حرکت میں آ گیا اور پورا شہر مفلوج ہو گیا۔ پھر واپس کم کرنا پڑا
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  17. عزیزامین

    عزیزامین محفلین

    مراسلے:
    8,027
    جھنڈا:
    Canada
    موڈ:
    Happy
    اگر معلومات عالم کے نام سے ایک زمرہ بن جائے تو بہت اچھا ہے
     
  18. اے خان

    اے خان محفلین

    مراسلے:
    4,193
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    ہمارے ہاں صوابی میں رکشے والے والے کو چھ سے زیادہ سواریوں پر جرمانہ کیا جاتا ہے۔جرمانہ ادا کرنے کے بعد پھر آٹھ سواریوں کی اجازت ہوتی ہے صرف ایک دن کے لئے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 10
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  19. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    7,180
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    معلوماتِ عالم کا ایک لنک حاضر ہے ۔

    ویکیپیڈیا، آزاد دائرۃ المعارف
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  20. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    7,180
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    یادش بخیر جب کراچی کی سڑکوں پر لگے ٹریفک سگنلز کام کرتے تھے، انہیں عوامی زبان میں سنگل کہا جاتا تھا۔

    اب ہر چوراہے پر ٹریفک کانسٹیبل کھڑا اشارے کرتا ہے لیکن رکنا یا وہاں سے تیزی کے ساتھ گزر جانا اب اُس کے کنٹرول میں نہیں بلکہ آپ کی اپنی صوابدید پر ہے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 6

اس صفحے کی تشہیر