آزادیِ نسواں۔۔۔ آخری حد کیا ہے؟؟؟

سید عمران نے 'ہمارا معاشرہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 22, 2019

  1. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,218
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    شعر کی تشریح اور شماریات دو مختلف امور ہیں۔ اور میرا مقصد صرف آپ کو توجہ دلانا تھا۔ اس طرح کے مباحث میں تفصیلی گفتگو کرنا میری عادت نہیں۔ بالمشافہ مل کر بات کی جا سکتی ہے لیکن آن لائن فورم پر ابحاث میں ایکٹولی حصہ لینا میرے لیے مشکل ہے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  2. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,384
    "عورت نشہ ہے، فریب ہے، سراب ہے، رسوائی ہے اور وہ سب کچھ ہے جو انسان کو بدی کی طرف راغب کرتا ہے۔
    عورت پاکیزگی ہے، عصمت ہے، سراپا تقدیس ہے اور سب کچھ ہے جو انسان کو انسانیت کے معراجِ کمال پر لے جاتا ہے۔ جس آسانی سے یہ ایمان کو غارت کرسکتی ہے اُسی آسانی سے یہ اُسے عطا بھی کرسکتی ہے۔۔"

    (اقتباس: گومی اور پنڈت از کرشن چندر)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    12,305
    جھنڈا:
    Pakistan
    آپ کی من پسند تاویلات پر کیوں ایمان لایا جائے؟؟؟
    دینی علوم میں مہارت پر آپ کی کیا قابلیت ہے؟؟؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    12,305
    جھنڈا:
    Pakistan
    کیا وجہ ہے کہ آپ دوسروں کو جو برا بھلا کہتے ہیں جواب میں آپ کو بھی ان ہی اعزازات سے نہ نوازا جائے؟؟؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  5. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    12,305
    جھنڈا:
    Pakistan
    اسلامی علوم پر آپ کی تحقیق شروع سے آخر تک غلط ہے...
    دوسروں کو بھاشن دینے سے پہلے کسی سے پوچھیں کہ میری غلطیاں کتنی ہیں ہھر ان تصحیح کریں!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  6. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    12,305
    جھنڈا:
    Pakistan
    ہاہاہا...
    دین کا مذاق اڑانے کے ساتھ مذاق بھی اچھا کرلیتے ہیں!!!
     
    • غمناک غمناک × 1
  7. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    12,305
    جھنڈا:
    Pakistan
    لچر لوگوں اور ان کے ہمنواؤں کا عورت مارچ میں حسب روایت فحاشی پن...
    پاکستانی معاشرہ میں امریکی عریانیت لانے کی سعی مذمومہ!!!
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • غمناک غمناک × 1
  8. عدنان عمر

    عدنان عمر محفلین

    مراسلے:
    1,250
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    disgusting
     
    • غمناک غمناک × 1
  9. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    9,949
    اس میں کوئی شک نہیں کہ ہمارے معاشرے میں یہ تحریک ان نعروں کے باعث اپنی موت آپ مر جائے گی۔ شاید ان کو کسی کی مخالفت کی ضرورت نہیں ہے۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • غمناک غمناک × 1
  10. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    18,344
    عورت مارچ میں مختلف نظریاتی فکر کی خواتین موجود تھیں۔ چند ایسے متنازعہ پلے کارڈز کی وجہ سے اسے کل پر پرکھا نہیں جا سکتا ۔ مجموعی طور پر مارچ کے شرکاء نے پتھراؤ ہونے کے باوجود بہت سنجیدگی کا مظاہرہ کیا۔
     
  11. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    18,344
    یہ پلے کارڈز کیوں نہیں دکھائے؟ کیونکہ یہ متنازعہ نہیں تھے؟
    [​IMG]
    [​IMG]
    [​IMG]
    [​IMG]
    [​IMG]
     
    • متفق متفق × 1
  12. محمد سعد

    محمد سعد محفلین

    مراسلے:
    2,474
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    یار آپ بھی حقیقت ٹی وی کو سنجیدہ لیتے ہو؟ :ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO::ROFLMAO:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  13. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    9,949
    ہر پچ پر ایک ہی طرز کی بلے بازی نہیں کی جا سکتی۔ یہ ہماری پیشن گوئی ہے کہ اس طرح کی نعرے بازی چلتی رہی تو بہت جلد یہ تحریک یا اس کے نمائندہ افراد ایسے عناصر سے برات کا اظہار کرتے دکھائی دیں گے۔ ویسے، اب اس تحریک کی نمائندگی کے لیے کوئی جماعت بھی قائم ہونے کا امکان دکھائی دے رہا ہے۔ دیکھیے، پہل کون کرے!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. محمد سعد

    محمد سعد محفلین

    مراسلے:
    2,474
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    جن کا دعویٰ ہے کہ وہ اس بات کے قائل ہیں کہ عورتوں کو ان کے جائز حقوق ملنے چاہئیں لیکن مسئلہ ان کو صرف چند مخصوص بینروں سے ہے، ان کو ایک زبردست حل بتاتا ہوں۔
    آپ ایسے بینر بنا کر جو آپ عورت مارچ میں دیکھنا چاہتے ہیں، مارچ کا حصہ بنیں۔ جب بینروں کی ایک بڑی تعداد اخلاقی ہو گی تو مبینہ غیر اخلاقی بینرز خود ہی کسی کونے کھدرے میں گم ہو جائیں گے۔
    سادہ اکثریت سے ان خیالات کو مات دے دیں جنہیں آپ پسند نہیں کرتے۔ بات ہی ختم۔
    پتھر ماریں گے تو اپنے پاؤں پر کلہاڑی ہی ماریں گے۔ عورت مارچ کو مقبولیت ملے گی اور آپ بدنامی کی گہرائیوں میں گرتے چلے جائیں گے، یہاں تک کہ وہ لوگ بھی آپ کو سنجیدہ لینا چھوڑ دیں گے جو ابھی جیسے تیسے کر کے آپ کی صفائیاں پیش کر رہے ہیں۔
    کوئی عقل سے کام لیں۔ اتنی راکٹ سائنس نہیں ہے اس میں۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  15. زیدی

    زیدی محفلین

    مراسلے:
    45
    میں نے کہیں نہیں کہا کہ میری من پسند تاویلات پہ ایمان لایا جائے۔ اول سے آخر میں تو ہر مراسلے میں اللہ کی اطاعت کی بات کر رہا ہوں۔ آپ کا یہ سوال کرنا ہی اس بات کو ظاہر کرتا ہے کہ آپ خدا کے علاوہ بھی کسی کی تاویلات پہ ایمان لانا ایمان کا حصہ تصور کرتے ہیں۔ اب جو قران واضح طور پر فرماتا ہے وہ یہ ہے۔
    وَاتَّبَعْتُ مِلَّ۔ةَ اٰبَآئِىٓ اِبْ۔رَاهِيْ۔مَ وَاِسْحَاقَ وَيَعْقُوْبَ ۚ مَا كَانَ لَنَ۔آ اَنْ نُّشْرِكَ بِاللّ۔ٰهِ مِنْ شَىْءٍ ۚ ذٰلِكَ مِنْ فَضْلِ اللّ۔ٰهِ عَلَيْنَا وَعَلَى النَّاسِ وَلٰكِنَّ اَكْثَرَ النَّاسِ لَا يَشْكُ۔رُوْنَ (یوسف - 38 )
    اور میں اپنے باپ دادا ابراہیم اور اسحاق اور یعقوب کے مذہب کا تابع ہو گیا ہوں، ہمیں یہ جائز نہیں کہ اللہ کے ساتھ کسی کو بھی شریک کریں، یہ ہم پر اور سب لوگوں پر اللہ کا فضل ہے لیکن بہت لوگ شکر نہیں کرتے۔
    يَا صَاحِبَىِ السِّجْنِ ءَاَرْبَابٌ مُّتَفَرِّقُوْنَ خَيْ۔رٌ اَمِ اللّ۔ٰهُ الْوَاحِدُ الْقَهَّارُ (یوسف-39)
    اے قید خانہ کے رفیقو! کیا کئی جدا جدا معبود بہتر ہیں یا اکیلا اللہ جو زبردست ہے۔
    مَا تَعْبُدُوْنَ مِنْ دُوْنِهٓ ٖ اِلَّآ اَسْ۔مَآءً سَ۔مَّيْتُمُوْهَآ اَنْتُ۔مْ وَاٰبَآؤُكُمْ مَّآ اَنْزَلَ اللّ۔ٰهُ بِ۔هَا مِنْ سُلْطَانٍ ۚ اِنِ الْحُكْمُ اِلَّا لِلّ۔ٰهِ ۚ اَمَرَ اَلَّا تَعْبُدُوٓا اِلَّآ اِيَّاهُ ۚ ذٰلِكَ ال۔دِّيْنُ الْقَيِّ۔مُ وَلٰكِنَّ اَكْثَرَ النَّاسِ لَا يَعْلَمُوْنَ (یوسف-40)
    تم اس کے سوا کچھ نہیں پوجتے مگر چند ناموں کو جو تم نے اور تمہارے باپ داداؤں نے مقرر کر لیے ہیں اللہ نے ان کے متعلق کوئی سند نہیں اتاری، حکومت سوائے اللہ کے کسی کی نہیں ہے، اس نے حکم دیا ہے کہ اس کے سوا کسی کی عبادت نہ کرو، یہی سیدھا راستہ ہے لیکن اکثر آدمی نہیں جانتے۔

    (سورہ یوسف - عربی متن اور اردو ترجمہ)
    اس سے صرف اور صرف رب کی اطاعت کے علاوہ اکثر کا مفہوم بھی آپ پہ واضح ہو جانا چاہیے۔ کل کو یہ دلیل قابل قبول نہیں ہو گی کہ میں تو اسی تعلیمات پہ عمل کرتا رہا جس پہ فلاں فلاں فلاں نے عمل کیا۔ رب کی تعلیمات کے علاوہ کوئی چیز حجت نہیں ہے۔
    قران انسان کے لیے اترا ہے اور اللہ نے اسے انسان کے لیے ہی آسان کیا ہے۔ اب اللہ اس سلسلے میں جو فرماتا ہے وہ یہ ہے۔
    الٓ۔رٰ ۚ تِلْكَ اٰيَاتُ الْكِتَابِ الْمُبِيْنِ (یوسف-1)
    ا ل ر، یہ روشن کتاب کی آیتیں ہیں۔
    اِنَّ۔آ اَنْزَلْنَاهُ قُرْاٰنًا عَرَبِيًّا لَّعَلَّكُمْ تَعْقِلُوْنَ (یوسف-2)
    ہم نے اس قرآن کو عربی زبان میں تمہارے سمجھنے کے لیے نازل کیا۔
    نَحْنُ نَقُصُّ عَلَيْكَ اَحْسَنَ الْقَصَصِ بِمَآ اَوْحَيْنَ۔آ اِلَيْكَ هٰذَا الْقُرْاٰنَ ۖ وَاِنْ كُنْتَ مِنْ قَبْلِ۔هٖ لَمِنَ الْغَافِلِيْنَ (یوسف-3)
    ہم تیرے پاس بہت اچھا قصہ بیان کرتے ہیں اس واسطے کہ ہم نے تیری طرف یہ قرآن بھیجا ہے، اور تو اس سے پہلے البتہ بے خبروں میں سے تھا۔
    وَلَقَدْ يَسَّرْنَا الْقُرْاٰنَ لِل۔ذِّكْرِ فَهَلْ مِنْ مُّدَّكِرٍ (القمر-17)
    اور البتہ ہم نے تو سمجھنے کے لیے قرآن کو آسان کر دیا پھر کوئی ہے کہ سمجھے۔
    وَلَقَدْ يَسَّرْنَا الْقُرْاٰنَ لِل۔ذِّكْرِ فَهَلْ مِنْ مُّدَّكِ۔رٍ (القمر-22)
    اور البتہ ہم نے قرآن کو سمجھنے کے لیے آسان کر دیا ہے پھر ہے کوئی کہ سمجھے۔
    وَلَقَدْ يَسَّرْنَا الْقُرْاٰنَ لِل۔ذِّكْرِ فَهَلْ مِنْ مُّدَّكِ۔رٍ (القمر-32)
    اور البتہ ہم نے قرآن کو سمجھنے کے لیے آسان کر دیا ہے پھر ہے کوئی سمجھنے والا۔
    وَلَقَدْ يَسَّرْنَا الْقُرْاٰنَ لِل۔ذِّكْرِ فَهَلْ مِنْ مُّدَّكِ۔رٍ (القمر-40)
    اور البتہ ہم نے سمجھنے کے لیے قرآن کو آسان کر دیا ہے پھر ہے کوئی سمجھنے والا۔
    (سورہ القمر - عربی متن اور اردو ترجمہ)
    رب بار بار ہر طریقے سے انسان کو سمجھا رہا ہے۔ سیدھے لفظوں میں مثالیں دے کر واقعات بیان کر کے لیکن حضرت انسان اسے خود سے پیچیدہ سے پیچیدہ تر بناتا جائے گا تو رب کو بروز قیامت جواب بھی خود ہی دے گا۔
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 9, 2020
    • زبردست زبردست × 1
  16. زیدی

    زیدی محفلین

    مراسلے:
    45
    مجھے آپ کی اور آپ کے سو کالڈ علماء کی سند کی ضرورت نہیں ہے۔ وہ صحیح ہے یا غلط یہ طے کرنے کا حق صرف اور صرف میرے خالق کو ہے نہ کی کسی حضرت انسان کو۔ جہاں تک بھاشن کی بات ہے وہ تو آپ صبح و شام چیخ چیخ (؟؟؟-!!!) کر دیتے رہتے ہیں اگر آپ کی باتوں میں اثر ہوتا تو سب سے پہلے قبول کرنے والا اسے میں ہوتا لیکن کیا ہے کہ اثر صرف رب کے کلام میں ہے اپنی من پسند اسلامی تاویلات اور تشریحات میں نہیں۔ جس انسان میں یہ جرات نہ ہو کہ غلط کو غلط کہہ سکے صرف اس لیے کہ وہ اس سے نسبت قائم رکھنا چاہتا ہے وہ کیا کسی کو اسلام سکھائے گا۔ رب کے نزدیک وقعت صرف اسی انسان کی ہے جو صرف اور صرف اللہ کو مانے رب کے نزدیک اس بات کی کوئی اہمیت نہیں کہ کون کسی کا باپ (حضرت ابراہیم کے والد) ہے یا بیٹا (حضرت نوح کا بیٹا) یا بیوی (فرعون کی بیوی)۔
    وَاِذْ قَالَ اِبْرَاهِيْ۔مُ لِاَبِيْهِ اٰزَرَ اَتَتَّخِذُ اَصْنَامًا اٰلِ۔هَةً ۚ اِنِّ۔ىٓ اَرَاكَ وَقَوْمَكَ فِىْ ضَلَالٍ مُّبِيْنٍ (الانعام-74)
    اور جب ابراہیم نے اپنے باپ آزر سے کہا کہ کیا تو بتوں کو خدا جانتا ہے، میں تجھے اور تیری قوم کو صریح گمراہی میں دیکھتا ہوں۔
    (سورہ الانعام - عربی متن اور اردو ترجمہ)
    وَنَادٰى نُ۔وْحٌ رَّبَّهٝ فَقَالَ رَبِّ اِنَّ ابْنِىْ مِنْ اَهْلِىْ وَاِنَّ وَعْدَكَ الْحَقُّ وَاَنْتَ اَحْكَمُ الْحَاكِمِيْنَ (ھود-45)
    اور نوح نے اپنے رب کو پکارا کہ اے رب! میرا بیٹا میرے گھر والوں میں سے ہے اور بے شک تیرا وعدہ سچا ہے اور تو سب سے بڑا حاکم ہے۔
    قَالَ يَا نُ۔وْحُ اِنَّهٝ لَيْسَ مِنْ اَهْلِكَ ۖ اِنَّهٝ عَمَلٌ غَيْ۔رُ صَالِ۔۔حٍ ۖ فَلَا تَسْاَلْنِ مَا لَيْسَ لَكَ بِهٖ عِلْمٌ ۖ اِنِّ۔ىٓ اَعِظُكَ اَنْ تَكُ۔وْنَ مِنَ الْجَاهِلِيْنَ (ھود-46)
    فرمایا اے نوح! وہ تیرے گھر والوں میں سے نہیں ہے، کیونکہ اس کے عمل اچھے نہیں ہیں، سو مجھ سے مت پوچھ جس کا تجھے علم نہیں، میں تمہیں نصیحت کرتا ہوں کہ کہیں جاہلوں میں نہ ہو جاؤ۔
    (سورہ ھود - عربی متن اور اردو ترجمہ)
    وَضَرَبَ اللّ۔ٰهُ مَثَلًا لِّلَّ۔ذِيْنَ اٰمَنُوا امْرَاَتَ فِرْعَوْنَ ۢ اِذْ قَالَتْ رَبِّ ابْنِ لِىْ عِنْدَكَ بَيْتًا فِى الْجَنَّ۔ةِ وَنَجِّنِىْ مِنْ فِرْعَوْنَ وَعَمَلِ۔هٖ وَنَجِّنِىْ مِنَ الْقَوْمِ الظَّالِمِيْنَ (التحریم-11)
    اور اللہ ایمان داروں کے لیے فرعون کی بیوی کی مثال بیان کرتا ہے، جب اس نے کہا کہ اے میرے رب میرے لیے اپنے پاس جنت میں ایک گھر بنا اور مجھے فرعون اور اس کے کام سے نجات دے اور مجھے ظالموں کی قوم سے نجات دے۔
    (سورہ التحریم - عربی متن اور اردو ترجمہ)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  17. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    8,664
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    کیا ہی اچھا ہو اگر دوسرے کی ذات پر کمنٹ کرنے کے بجائے اس کے تبصروں پر اعتراض کیا جائے اور انہیں غلط ثابت کرنے کی سعی کی جائے!!!
     
    • متفق متفق × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  18. زیدی

    زیدی محفلین

    مراسلے:
    45
    تجسس کا ہونا ہر بچے میں ایک فطری عمل ہے اور کوئی بھی بچہ پہلے دن سے سخت لہجے میں پیدا نہیں ہوتا۔ لہجے میں سختی حالات و واقعات کے مطابق آتی ہے۔ ہم میں سے کوئی بھی ایسا نہیں ہو گا جس نے بچپن میں اپنے ماں باپ سے سوالات نہ پوچھے ہوں۔ مذہب کے متعلق دل میں اٹھنے والے سوالات میں نے کئی سو کالڈ علماء سے کیے اس وقت میرے لہجے میں سختی کا عنصر بالکل نہیں تھا لیکن وہ عالم جس کی اپنی تجسس کی حس مری ہوئی ہو اور وہ خود بت پرستی پہ مائل ہو کسی کے ایمان پہ الزام اور بہتان لگانے کے علاوہ کیا کر سکتا ہے؟ مدرسوں کی حالت دیکھ لیں کہ جہاں جانے والوں بچوں کو مار مار کر ان کی تجسس کی حس ختم کرنے کی کوشش کی جاتی ہے اور پھر اسے بت پرست بنانے کی بھرپور سعی کی جاتی ہے۔ اب یہاں نمونے کے طور پر آپ کو ہی دیکھ لیا جائے۔ کتنے سوالات کے آپ نے تسلی بخش جواب دیے؟ ابھی تک تو فتووں اور الزام تراشی کے علاوہ آپ نے کسی بھی بات کا جواب نہیں دیا۔
     
    • متفق متفق × 2
  19. بافقیہ

    بافقیہ محفلین

    مراسلے:
    453
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Volatile
    آیات کو اس طرح توڑ مروڑ کر پیش کرنا بالکل صحیح نہیں۔۔۔
    تمام حدیں توڑدیں جناب! اللہ کی آیتوں کو تو نہ توڑیں۔۔۔ میں کمنٹ نہیں کرتا۔ ورنہ ایسی سخت کہتا کہ ۔۔۔۔۔۔۔ :sad:
     
    • متفق متفق × 1
    • غمناک غمناک × 1
  20. ابن جمال

    ابن جمال محفلین

    مراسلے:
    459
    کمال ہے اسی فورم پر لکھاجاتاہے کہ اقبال کےا عمال کو دیکھیں یااقوال کو،اس وقت فورم کے دانشور حضرات کو نہیں لگتاکہ ذات پر کمنٹ کیاجارہاہے؟
     
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر