فارسی شاعری خوبصورت فارسی اشعار مع اردو ترجمہ

محمد وارث نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 7, 2008

  1. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    تابوتِ من آهسته ز کویش گذرانید
    چون نیست امیدی که بیایم دگر اینجا
    (آهی سبزواری)
    میرے تابوت کو اُس کے کوچے سے آہستہ آہستہ گذاریے۔ چونکہ کوئی امید نہیں ہے کہ میں پھر دوبارہ یہاں آؤں گا۔

    مأخذِ شعر: عبرة الغافلین، میرزا محمد رفیع سودا دهلوی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    19,449
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    عنایتے کہ تو را بُود اگر مبدل شد
    خلل پذیر نباشد ارادتے کہ مراست


    شیخ سعدی شیرازی

    تیری وہ عنایتیں کہ جو مجھ پر تھیں اگر بدل گئی ہیں تو (یقین جان) کہ وہ ارادت جو مجھے تجھ سے ہے وہ خلل پذیر نہیں ہے، اُس میں کسی قسم کی کوئی تبدیلی نہیں ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 1
  3. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    به پیشِ او چو نشینم رود به فکر فرو
    که از برم به کدامین بهانه برخیزد
    (داعی اصفهانی)
    میں اُس کے سامنے جب بیٹھتا ہوں تو وہ [اِس] فکر میں مُستَغرَق ہو جاتا ہے کہ وہ میرے پہلو سے کس بہانے سے اٹھے۔
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 21, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  4. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    (دوبیتی)
    جدا از رویت ای ماهِ دل‌افروز
    نه روز از شو شناسم نه شو از روز
    وصالت گر مرا گردد میسّر
    همه روزم شود چون عیدِ نوروز
    (منسوب به بابا طاهر عُریان همدانی)
    اے ماہِ دل افروز! تمہارے چہرے سے جدا ہو کر میں [پریشان حالی کے باعث] روز اور شب کے درمیان تمیز نہیں کر پاتا۔ اگر تمہارا وصال مجهے میسّر ہو جائے تو میرے تمام روز عیدِ نوروز کی مانند ہو جائیں۔
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 21, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 1
  5. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    تا جهان باقی و آیینِ محبت باقی‌ست
    شعرِ حافظ همه جا وردِ زبان خواهد بود
    (شهریار تبریزی)

    جب تک جہاں باقی اور رسمِ محبت باقی ہے، شعرِ حافظ ہر جا وردِ زباں رہے گا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  6. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    من که دارم ز فیضِ ربِّ کریم
    جان ز ایران و تن ز پاکستان
    (ظهیر احمد صدیقی)

    ربِّ کریم کے فیض سے میرا تن پاکستان سے اور میری جان ایران سے ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  7. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    شهریارا چه غمم هست که چون خواجهٔ خویش
    "بندهٔ عشقم و از هر دو جهان آزادم"
    (شهریار تبریزی)
    اے شہریار! مجھے کیا غم ہے کہ میں اپنے خواجہ (آقا) کی طرح بندۂ عشق ہوں اور ہر دو جہاں سے آزاد ہوں۔
    × مصرعِ ثانی خواجہ حافظ شیرازی کا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  8. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    مولانا عبدالرحمٰن جامی کے ایک تلمیذ ملّا عبدالغفور لاری کا انتقال بروزِ یکشنبہ، پنجم شعبان، ۹۱۲ھ میں ہوا۔ اُن کی وفات پر کسی شاعر نے یہ قطعۂ تاریخ لکھا:
    چو شد عبدالغفور آن کاملِ عصر

    به عُقبیٰ غرقهٔ دریایِ غُفران
    سر آمد روزگارِ دین و دانش
    فرو رفت آفتابِ علم و عرفان
    چو خواهی روز و ماه و سالِ فوتش
    بگو 'یکشنبهٔ پنجم ز شعبان'

    × یکشنبهٔ پنجم ز شعبان = ۹۱۲ھ

    ترجمہ:
    جب وہ کاملِ عصر عبدالغفور عُقبیٰ میں دریائے مغفرت میں غرق ہو گیا تو دین و دانش کا زمانہ ختم ہو گیا اور علم و عرفاں کا آفتاب غروب ہو گیا۔ اگر تم اُس کے فوت کا روز و ماہ و سال چاہو تو کہو 'یکشنبۂ پنجم ز شعبان'۔ (یعنی: پنجم شعبان کا یکشنبہ)
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 21, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  9. ظہیر عباس ورک

    ظہیر عباس ورک محفلین

    مراسلے:
    311
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    ﺳﺮﻭﺩ ﺭﻓﺘﮧ ﺑﺎﺯ ﺍٓﯾﺪ ﮐﮧ ﻧﺎﯾﺪ؟
    ﻧﺴﯿﻤﮯ ﺍﺯ ﺣﺠﺎﺯ ﺍٓﯾﺪ ﮐﮧ ﻧﺎﯾﺪ؟
    ﺳﺮ ﺍٓﻣﺪ ﺭﻭﺯ ﮔﺎﺭ ﺍﯾﮟ ﻓﻘﯿﺮﮮ
    ﺩﮔﺮ ﺩﺍﻧﺎﺋﮯ ﺭﺍﺯ ﺍٓﯾﺪ ﮐﮧ ﻧﺎﯾﺪ؟


    علامہ اقبال رحمۃاللہ علیہ
    (ﺧﺪﺍ ﺟﺎﻧﮯ) ﻭﮦ ﭘﮩﻠﮯ ﻭﺍﻻ ﺩﻭﺭ ﺍٓﺋﮯ ﮔﺎ ﯾﺎ ﻧﮩﯿﮟ؟
    ﺣﺠﺎﺯ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﺳﮯ ﭨﮭﻨﮉﯼ ﮨﻮﺍ آئے ﮔﯽ ﯾﺎ ﻧﮩﯿﮟ؟
    ﺍﺱ ﻓﻘﯿﺮ ‏( ﺍﻗﺒﺎﻝ ‏) ﮐﺎ ﻭﻗﺖ ﺍٓﺧﺮ ﺍٓ ﮔﯿﺎ ﮨﮯ۔
    (ﺩﯾﮑﮭﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ) کوئی دوسرا ﺩﺍﻧﺎﺋﮯ ﺭﺍﺯ ﺍٓﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻧﮩﯿﮟ؟

    اس رباعی کو میں نے ایک جگہ اس طرح بھی پڑھا ہے۔

    سرود رفتہ باز آید کہ ناید؟
    نسیمی از حجاز آید کہ ناید؟
    سرآمد روزگار این فقیری
    دگر داناے راز آید کہ ناید؟

    ی اور ے کا فرق ہے حقائق کیا ہیں؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  10. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    'ی' اور 'ے' میں فرق محض یہ ہے کہ معیاری فارسی املاء میں 'ے' نہیں ہے اور اُس میں یائے نکرہ والے الفاظ 'ی' سے لکھے جاتے ہیں، جبکہ فارسی کا جو املاء پاکستان میں عموماً رائج ہے، اُس میں یائے نکرہ کو 'ے' سے لکھتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  11. ظہیر عباس ورک

    ظہیر عباس ورک محفلین

    مراسلے:
    311
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    بہت شکریہ!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    19,449
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    در سینۂ خود رازِ غمِ عشق برہمن
    چوں غنچہ بصد پردہ نہفتیم و نگفتیم


    چندر بھان برہمن

    اے برہمن، ہم اپنے سینے میں غمِ عشق کا راز، غنچے کی طرح سو سو پردوں میں چُھپائے رہے اور کسی سے کہا نہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • زبردست زبردست × 1
  13. ظہیر عباس ورک

    ظہیر عباس ورک محفلین

    مراسلے:
    311
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    بر مزارِ ما غریباں نے چراغے نے گُلے
    نہ پرِ پروانہ یابی ۔۔۔۔ نہ سراید بُلبلے

    ملکہ نور جہاں


    ہم غریبوں کے مزار پر نہ کوئی چراغ ہے نہ کوئی پھول۔
    یہاں تو نہ تو کسی جلے ہوئے پروانے کے پر پائے گا نہ بلبل سرائی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    دین و دل بُردی و اکنون پیِ جان آمده‌ای
    بنشین تا به تو آن هم بسپارم بنشین
    (داعی اصفهانی)

    تم دین و دل لے گئے اور اب جان [لینے] کے لیے آئے ہو۔۔۔ بیٹھو تاکہ میں تمہیں وہ بھی سپرد کر دوں، بیٹھو۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  15. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ز رشکِ غیر به جان آمدم، نمی‌دانم
    که از برت به کدامین بهانه برخیزم
    (داعی اصفهانی)

    میں غیر کے رشک سے بے حوصلہ و قریب الموت ہو گیا ہوں۔۔۔ میں نہیں جانتا کہ تمہارے پہلو سے کس بہانے سے اٹھوں۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  16. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    حکایتِ دلِ ویران به پیشِ او نکنم
    که گَردِ غم به دلِ شادمانِ او نرسد
    (داعی اصفهانی)
    میں اُس کے سامنے [اپنے] دلِ ویراں کی حکایت نہیں کہتا، کیونکہ غم کی گَرد اُس کے دلِ شادماں تک نہیں پہنچتی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  17. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    دید مستِ شوقم آ‌ن شوخ و ز من پرهیز کرد
    دامن از دستم کشید و آتشم را تیز کرد
    (داعی اصفهانی)
    اُس شوخ نے مجھے مستِ شوق دیکھا اور مجھ سے دوری کر لی۔۔۔ اُس نے [اپنے] دامن کو میرے دست سے کھینچ لیا اور میری آتش کو تیز کر دیا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 1
  18. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    اگر سررِشتهٔ وصلِ تو را روزی به دست آرم
    شود گر صد قیامت، دامنش از دست نگذارم
    (داعی اصفهانی)
    اگر کسی روز تمہارے وصل کا سررِشتہ میرے دست میں آ جائے تو خواہ صد قیامتیں برپا ہو جائیں، میں اُس کا دامن دست سے نہیں چھوڑوں گا۔
    سَرْرِشْتہ = دھاگے کا سِرا
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 22, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  19. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    عاشق شدم، اسیر شدم، مبتلا شدم
    تا آرزویِ رویِ تو کردم چه‌ها شدم
    (ملا مُشفقی بخاری)
    میں عاشق ہو گیا، اسیر ہو گیا، مبتلا ہو گیا۔۔۔ جیسے ہی میں نے تمہارے چہرے کی آرزو کی، میں کیا کیا ہو گیا!
    × 'تا آرزویِ رویِ تو کردم۔۔۔' کا ترجمہ 'جب سے میں نے تمہارے چہرے کی آرزو کی۔۔۔' بھی کیا جا سکتا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  20. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    9,658
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    رحم اگر نیست مَلِک در دلِ او شکوه مکن
    نیست او را گنهی نالهٔ ما بی‌اثر است
    (مَلِک قُمی)

    اے مَلِک! اگر اُس کے دل میں رحم نہیں ہے تو شکوہ مت کرو؛ اُس کا کوئی گناہ نہیں ہے [بلکہ] ہمارا نالہ بے اثر ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4

اس صفحے کی تشہیر