ﻣﺠﮫ ﺳﮯ ﺑﻨﺘﺎ ﮨﻮﺍ ﺗُﻮ ﺗﺠﮫ ﮐﻮ ﺑﻨﺎﺗﺎ ﮨُﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

عاطف ملک نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 3, 2019

  1. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,084
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    ﻣﺠﮫ ﺳﮯ ﺑﻨﺘﺎ ﮨﻮﺍ ﺗُﻮ ﺗﺠﮫ ﮐﻮ ﺑﻨﺎﺗﺎ ﮨُﻮﺍ ﻣَﯿﮟ
    ﮔﯿﺖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﺗُﻮ ﮔﯿﺖ ﺳﻨﺎﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

    ﺍﯾﮏ ﮐﻮﺯﮮ ﮐﮯ ﺗﺼﻮُّﺭ ﺳﮯ ﺟُﮍﮮ ﮨﻢ ﺩﻭﻧﻮﮞ
    ﻧﻘﺶ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﻮﺍ ﺗُﻮ ﭼﺎﮎ ﮔُﮭﻤﺎﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

    ﺗﻢ ﺑﻨﺎﺅ ﮐﺴﯽ ﺗﺼﻮﯾﺮ ﻣﯿﮟ ﮐﻮﺋﯽ ﺭﺳﺘﮧ
    ﻣﯿﮟ ﺑﻨﺎﺗﺎ ﮨﻮﮞ ﮐﮩﯿﮟ ﺩُﻭﺭ ﺳﮯ ﺁﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

    ﺍﯾﮏ ﺗﺼﻮﯾﺮ ﮐﯽ ﺗﮑﻤﯿﻞ ﮐﮯ ﮨﻢ ﺩﻭ ﭘﮩﻠﻮ
    ﺭﻧﮓ ﺑﮭﺮﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﺗُﻮ ﺭﻧﮓ ﺑﻨﺎﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

    ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﻟﮯ ﺟﺎﺋﮯ ﮐﮩﯿﮟ ﺩُﻭﺭ ﺑﮩﺎﺗﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﺗُﻮ
    ﺗﺠﮫ ﮐﻮ ﻟﮯ ﺟﺎﺅﮞ ﮐﮩﯿﮟ ﺩُﻭﺭ ﺍُﮌﺍﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

    ﺍﮎ ﻋﺒﺎﺭﺕ ﮨﮯ ﺟﻮ ﺗﺤﺮﯾﺮ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮ ﭘﺎﺋﯽ
    ﻣﺠﮫ ﮐﻮ ﻟﮑﮭﺘﺎ ﮨﻮﺍ ﺗُﻮ ﺗﺠﮫ ﮐﻮ ﻣﭩﺎﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

    ﻣﯿﺮﮮ ﺳﯿﻨﮯ ﻣﯿﮟ ﮐﮩﯿﮟ ﺧﻮﺩ ﮐﻮ ﭼُﮭﭙﺎﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﺗُﻮ
    ﺗﯿﺮﮮ ﺳﯿﻨﮯ ﺳﮯ ﺗﺮﺍ ﺩﺭﺩ ﭼُﺮﺍﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

    ﮐﺎﻧﭻ ﮐﺎ ﮨﻮ ﮐﮯ ﻣِﺮﮮ ﺁﮔﮯ ﺑﮑﮭﺮﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﺗُﻮ
    ﮐﺮﭼﯿﻮﮞ ﮐﻮ ﺗﺮﯼ ﭘﻠﮑﻮﮞ ﺳﮯ ﺍُﭨﮭﺎﺗﺎ ﮨﻮﺍ ﻣَﯿﮟ

    ﻋﻤّﺎﺭ ﺍﻗﺒﺎﻝ
     
    • زبردست زبردست × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,493
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    ایسی غزلوں کو مکرمی سرور عالم راز سرورؔ صاحب "گجل" کہا کرتے ہیں ۔ اس غزل میں تمام اشعار تو نہیں لیکن بیشتر "گجل" کے معیار پر پورا اترتے ہیں ۔ لفظوں کے الٹ پھیر میں شاعر سے معنوی کے علاوہ متعدد لسانی لغزشات بھی سرزد ہوگئی ہیں ۔ بطور مشتے نمونہ از خروارے: نہ صرف یہ کہ مطلع دو لخت ہے بلکہ ستم یہ کہ پہلے مصرع میں مزاحیہ معنوی تعقید پیدا ہوگئی ہے ۔ جب کوئی شخص کسی دوسرے کے بارے میں یہ کہتا ہے کہ میں اُسے بنارہا ہوں یا وہ مجھے بنارہا ہے تو اس کے معنی بیوقوف بنانے کے ہوتے ہیں ۔
    چھٹے شعر میں شاعر کہہ رہا ہے کہ عشق میں وہ اپنے محبوب کو مٹارہا ہے ۔ یہ عاشقی کا شاید نیا روپ ہے ۔ اب تک یہ تو سنتے آئے تھے کہ عشق میں خود کو مٹادیا جاتا ہے لیکن محبوب کو مٹانے کا یہ پہلا تجربہ نظر سے گزرا ہے ۔
    عاطف بھائی ، کہاں سے ہاتھ لگا آپ کے یہ شاہکار! :):):)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  3. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,084
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    معلوماتی
    یہ بات میرے ذہن میں بھی آئی تھی۔:p
    ہم نے سوچا ہے کہ اس بار نیا کام کریں(n)
    اردو شاعری کی سب سے بڑی ویب گاہ ریختہ سے:)
    اس غزل کا تیسرا شعر کافی مشہور ہے عوام میں۔مجھے بھی وہی پسند ہے۔اور پسند تو پھر پسند ہوتی ہے ظہیر بھائی:battingeyelashes:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,493
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    اس بات سے انکار نہیں کہ تیسرا شعر غنیمت ہے ۔ اور پسند کے بارے میں آپ کی بات سے صد فیصد اتفاق کرتا ہوں ۔ لیکن عوام کی بات رہنے دیں ۔ عوام کی بات نہ کریں ورنہ پھر میں دیوانِ ٹریفک سے آپ کو وہ وہ اشعار سناؤں گا کہ بس رہے نام سائیں کا ۔ :):):)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  5. عاطف ملک

    عاطف ملک محفلین

    مراسلے:
    1,084
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    یہ دیون تو نام سے ہی خوفناک لگ رہا ہے۔نہیں جی، ہماری تقصیر معاف کی جاوے اور ہمیں دیوانِ ٹریفک سے امان کا پروانہ جاری کیا جائے:eek:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  6. ظہیراحمدظہیر

    ظہیراحمدظہیر محفلین

    مراسلے:
    2,493
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    چند سال پہلے یہاں شکاگو میں ایک دکان پر ایک کتاب بنام ’’دیوانِ ٹریفک‘‘ نظر سے گزری تھی۔ ایک صاحب نے پاکستان میں ٹرکوں، بسوں اور رکشوں کا باقاعدہ پیچھا کرکے اور ان میں سفر کرکے ان پر لکھے سینکڑوں اشعار جمع کئے اور انہیں کتابی شکل دیدی ۔ وہیں کھڑے کھڑے میں نے کتاب دیکھی تھی ۔ بعض تو بہت ہی دلچسپ اور مزیدار اشعار تھے۔ ایک قطعہ کچھ اس قسم کا تھا ( دوسرا مصرع یاد نہیں آرہا) ۔
    لگے جو تُکا تو تیر ہوجائے
    ۔۔۔۔۔۔۔۔مشیر ہوجائے
    بُرا مت کہو کسی موالی کو
    نجانے کب کوئی وزیر ہوجائے

    :):):)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2

اس صفحے کی تشہیر