یہ جنگ کیا ہے جو مسلمانوں پر مسلط کی گئی ہے

x boy نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 19, 2014

  1. صرف علی

    صرف علی محفلین

    مراسلے:
    1,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    یہ بھی آپ کی اندھے تعصب کا نتیجہ یے جو حزب اللہ کی حماس کو مدد نظر نہیں آتی ہے ابھی تک جو حماس اسرائیل سے لڑپایا ہے وہ حزب اللہ کے دئے ہوئے ہتھیار ہیں
     
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  2. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    دوسرے الفاظ میں اگر حزب اللہ نے یہ ہتھیار حماس کو نہ دیئے ہوتے تو اتنے شہری اسرائیل کی جوابی کاروائی میں مارے نہ جاتے؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  3. صرف علی

    صرف علی محفلین

    مراسلے:
    1,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  4. صرف علی

    صرف علی محفلین

    مراسلے:
    1,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  5. صرف علی

    صرف علی محفلین

    مراسلے:
    1,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  6. صرف علی

    صرف علی محفلین

    مراسلے:
    1,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    Members of UAE 'aid convoy' revealed as intelligence agents
    Sunday, 20 July 2014 12:17
    1201 268

    1 1474
    [​IMG]
    'Dahlan called one of his followers from Fatah who spoke with Hamas officials and they agreed to let the convoy leave immediately,'

    Forty members of the UAE "aid convoy" which entered the Gaza Strip last week have been revealed as intelligence agents. They were, it is believed, trying to collect information about Hamas and its infrastructure in the besieged territory.
    According to one informed source, a local Palestinian recognised one of the agents as a soldier in the UAE armed forces. He contacted the security forces in Gaza who took the agent in for questioning.

    Other members of the "aid convoy" then made contact with officials in the United Arab Emirates. In turn, they asked disgraced Fatah official Mohamed Dahlan, who now lives in and is sponsored by the UAE government, to try to secure a safe and swift exit for the agents.

    "Dahlan called one of his followers from Fatah who spoke with Hamas officials and they agreed to let the convoy leave immediately," the source said.

    Palestinians in Gaza were surprised by the sudden exit of the UAE personnel on Saturday. The field hospital that they had ostensibly arrived to set-up was left uncompleted.

    Commentators say that suspicions should have been aroused when the convoy was allowed by the Egyptians to enter Gaza through the Rafah crossing, as no other convoys have been allowed to enter since the start of the Israeli attack and invasion. Media reports on Saturday said that the Egyptian army has banned and attacked three international aid convoys trying to enter the enclave.

    Egypt has closed Rafah and does not allow wounded Palestinians to travel abroad for treatment or let much-needed medicine and medical equipment to be taken into Gaza.
    https://www.middleeastmonitor.com/n...ae-aid-convoy-revealed-as-intelligence-agents
     
  7. صرف علی

    صرف علی محفلین

    مراسلے:
    1,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    جب فلسطین کے پاس ہتھیار نہیں تھے کیا اس وقت فلسطن کی عوام کو اسرائیلی لولی پوپ دیتے تھے
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  8. Fawad -

    Fawad - محفلین

    مراسلے:
    2,163
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    مسلۂ فلسطين – امريکی موقف

    يہ کہنا بالکل غلط اور حقائق کے منافی ہے کہ ہم دونوں ميں سے کسی بھی فريق کی جانب سے دانستہ بے گناہ شہريوں کی ہلاکت کے اقدام کی تائيد کرتے ہيں يا اسی طرح کے واقعات کو منصفانہ سمجھتے ہيں۔

    اس وقت ہماری اولين ترجيح زمين پر کشيدگی ميں کمی لانا ہے اور ہم تمام فريقين پر زور دے رہے ہيں کہ وہ تناؤ ميں کمی لانے کے ليے مل کر کام کريں اور عام شہريوں کی حفاظت کو يقینی بنائيں۔

    ہم اس بارے ميں بالکل واضح ہيں کہ فلسطينی عوام کے ليے رياست کا خواب فريقين کے مابين براہراست مذاکرات کے ذريعے ہی ممکن ہے۔

    امريکی حکومت کی جانب سے اسرائيل کی حمايت کے ضمن ميں تمام تر تنقيد، سوالات اور آراء پڑھی ہيں۔ جيسا کہ ميں نے پہلے بھی فورمز پر متعدد بار واضح کيا ہے کہ امريکی حکومت اس عالمی کوشش کا حصہ ہے جس کی بنياد اسرائيل اور فلسطين کے عوام کی خواہشات کے عين مطابق خطے ميں پائيدار امن کے قيام کا حصول ممکن بنانا ہے۔

    ہم خطے ميں ايک مربوط امن معاہدے کے لیے کوشاں ہيں جس ميں فلسطين کے عوام کی اميدوں کے عين مطابق ايک خودمختار اور آزاد فلسطينی رياست کے قيام کا حصول شامل ہے۔ اس ايشو کے حوالے سے امريکہ پر زيادہ تر تنقید اس غلط سوچ کی بنياد پر کی جاتی ہے کہ امريکہ کو دونوں ميں سے کسی ايک فريق کو منتخب کرنا ہو گا۔ يہ تاثر بالکل غلط ہے کہ امريکہ اسرائيل کی غيرمشروط حمايت کرتا ہے۔ ہم اسرائيل کے بہت سے اقدامات پر تحفظات رکھتے ہيں۔

    ميں يہ بھی ياد دلا دوں کہ سال 2008 ميں غزہ ميں حملے کے بعد امريکہ نے اقوام متحدہ کی سيکورٹی کونسل کی قرارداد نمبر 1860 کی مکمل حمايت کی تھی جس کے تحت مستقل اور پائيدار جنگ بندی اور غزہ سے اسرائيلی افواج کے انخلاء کا مطالبہ کيا گيا تھا۔ اسی قرارداد ميں غزہ کے مکينوں کے ليے خوراک اور طبی امداد کی فراہمی کو يقينی بنانے کا مطالبہ بھی شامل تھا۔

    بہت سے رائے دہندگان لگاتار امريکہ کی جانب سے اسرائيل کو دی جانے والی امداد کا ذکر کرتے ہیں ليکن اسی پيرائے اور دليل ميں وہ اس حقيقت کو نظرانداز کر ديتے ہيں کہ امريکی حکومت فلسطين کو معاشی اور ترقياتی مد ميں امداد فراہم کرنے والے ممالک ميں سرفہرست ہے۔ سال 1993 سے يو ايس ايڈ کے توسط سے قريب 3 بلين ڈالرز کی امداد مہيا کی جا چکی ہے۔ اس امداد کے ذريعے جن شعبوں ميں ترقياتی منصوبوں کو سپورٹ فراہم کی گئ ہے ان ميں صاف پانی کی فراہمی، انفراسٹکچر، تعليم، صحت اور معاشی ترقی جيسے اہم شعبہ جات شامل ہيں۔

    امريکی حکومت غزہ ميں بنيادی انسانی ضروريات بشمول خوراک، ادويات، صاف پانی اور علاج معالجے کی سہوليات کی فراہمی کو يقينی بنانے کے لیے پرعزم ہے۔ غزہ ميں ان سہوليات کی فراہمی کو اقوام متحدہ کی "ريليف اينڈ ورکس" ايجنسی اور ديگر بين الاقوامی نجی تنظيموں کے ذريعے ممکن بنايا جاتا ہے۔

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    www.state.gov

    http://www.facebook.com/USDOTUrdu
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  9. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    ایک سوال ہے:
    اگر آپ کمزور ہیں، کیا آپ کو یہ زیب دیتا ہے کہ آپ طاقتور پہلوان کو گالی دیں اور پھر جب مار پڑے تو رونا بھی شروع کر دیں؟
    میں اسرائیل کے حق میں نہیں ہوں اور اسرائیلی جارحیت کے خلاف ہوں، لیکن مجھے یہ بات بھی برداشت نہیں ہوتی کہ حماس چند راکٹ پھینک کر، جس سے نہ کوئی جانی نقصان ہوتا ہے اور نہ ہی مالی، کے بدلے فلسطینی شہریوں کا کتنا جانی اور مالی نقصان کراتی ہے؟
     
    • متفق متفق × 2
  10. صرف علی

    صرف علی محفلین

    مراسلے:
    1,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    آپ کی بات تحیک ہے مگر یہ بھی ایک نفسیاتی طریقہ ہوسکتا ہے کہ آپ کا دشمن جو پہلے جب چاہیے آپ کو ایک چپیڑ مارتا تھا اور چلا جاتا تھا اب تھوڑا سوجتا ہوگا کہ یار یہ مجھے سوئی نا چوبو دے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    شہری آبادی کو کسی بھی قیمت پر تکلیف نہیں اٹھانی چاہئے۔ موجودہ صورتحال میں تو اسرائیل اور حماس مجھے برابر کے ذمہ دار لگ رہے ہیں :(
     
  12. سرپھرا

    سرپھرا معطل

    مراسلے:
    276
    خوش آمدید !
    خلاف ورزی کرنے والے کے خلاگ
    اچھا !!! کیا بات ہے ، حزب اللہ کے دیئے ہوئے ہتھیار سے اسرئیلیوں کا بھاری جانی مالی نقصان ہورہا ہے :biggrin::biggrin:
    اسرئیل نے پسپائی اختیار کی اور غزہ پر حملے سے باز آیا کیونکہ حزب اللہ جو مدد کررہی ہے ۔۔۔:grin::grin:
    حد ہوتی ہے بے تکی دلیل کی بھی ۔۔۔۔
     
  13. سید اسد محمود

    سید اسد محمود محفلین

    مراسلے:
    981
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Tolerant
    حماس اور حزب اللہ صرف بہانے ہیں اسرائیلی جارحیت اور توسیع پسندی کو جائز قرار دینے کے اصل مقصد غزہ کی زمین پر قبضہ کرنا ہے اسلئے آئی ڈی ایف صرف اور صرف شہری آبادیوں اور معصوم شہریوں کو نشانہ بناتی ہے تاکہ غزہ کے باسی مصر یا سمندر کے راستے غزہ سے فرار ہو جائیں۔ تاریخ شاہد ہے اسرائیل نے اسطرح لاتعداد فلسطینی مسلمان آبادیوں پر قبضہ کیا ہے۔ مگر مسلہ یہ ہے کہ غزہ میں زیادہ تر بے وسائل لوگ آباد ہیں جو فلسطین میں کہیں نا کہیں سے بے دخل ہو کر غزہ میں آ پھنسے ہیں وہ جانیں تو دے سکتے ہیں لیکن اپنا گھر بار چھوڑ نہیں سکتے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. سید اسد محمود

    سید اسد محمود محفلین

    مراسلے:
    981
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Tolerant
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    دیکھئے محترم، اسرائیل کی توسیعی پالیسیاں کسی سے مخفی نہیں ہیں اور انہیں بین الاقوامی طور پر ان کے سب سے بڑے حمایتی امریکہ تک کی حمایت نہیں ملتی اس بارے۔ لیکن آپریشن یا بمباری کے بارے جہاں تک بات ہو رہی ہے تو یہ دیکھئے کہ 360 مربع کلومیٹر میں اٹھارہ لاکھ سے زیادہ افراد آباد ہیں اور فی مربع کلومیٹر 13000 نفوس۔ اگر اسرائیل اتنا ہی اندھا دھند بمباری کر رہا ہے تو ہلاکتیں ہزاروں روزانہ ہونی چاہئے تھیں۔ لیکن پھر بھی اگر جانی نقصان اتنا کم ہو رہا ہے (اگرچہ ایک بے گناہ ہلاکت بھی ناقابلِ برداشت ہے) تو اس کا مطلب یہ بھی ہے کہ اسرائیلی ڈیفنس فورسز شہری آبادی کو بلا امتیاز نشانہ نہیں بنا رہیں بلکہ چن چن کر وہ مطلوبہ ٹارگٹ پر حملے کر رہے ہیں اور یہ بات تو آپ بھی جانتے ہیں کہ حماس کے گوریلے ہمیشہ حملے کر کے شہری آبادی میں آن چھپتے ہیں اور جب کاروائی ہوتی ہے تو بے گناہ شہری مفت میں مارے جاتے ہیں
    باقی تاریخ دیکھ لیجئے، انگریزوں کے بعد مصر اور اردن نے فلسطین پر قبضہ جمایا ہوا تھا اور جب اسرائیل سے شکست کھائی تو پھر اسرائیل نے اس پر قبضہ کیا، تاہم یہ قبضہ بھی ویسے ہی غیر قانونی ہے جیسا کہ مصری یا اردنی قبضہ تھا
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  16. x boy

    x boy محفلین

    مراسلے:
    6,208
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    موڈ:
    Breezy
    بات دل کو لگتی ہے
    حماس بھی صحیح نہیں اور اسرائیل بھی،
    فلسطین سے زیادہ تو کراچی میں کراچی کے بتھہ خورو، مافیا، منشیات فروشوں، اسلحہ فروشوں اور یہاں پر قابض نام نہاد ٹھیکیداروں نے ایک سال قتل کیے روز ٹارگیٹ کلین اور اسطرح کے لوگوں کی وجہ سے درجن دو درجن جانے اسطرح جاتی ہیں جیسے ہاتھ سے مرغی کا انڈا گرگیا ہو۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. x boy

    x boy محفلین

    مراسلے:
    6,208
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    موڈ:
    Breezy
    آئی ڈی پیز
    [​IMG]
    وی آئی پیز

    [​IMG]
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  18. صرف علی

    صرف علی محفلین

    مراسلے:
    1,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  19. x boy

    x boy محفلین

    مراسلے:
    6,208
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    موڈ:
    Breezy
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  20. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    اسپر ایک لطیفہ یاد آگیا۔ ایک پتلا اور کمزور سا آدمی ایک موٹے پہلوان کے اوپر چڑھ کر بچاؤ بچاؤ کی آواز بلند کر رہا ہے۔ راہ گیروں نے تفسار کیا کہ اسکو مات تو تم نے دی ہوئی ہے اور مدد کیلئے بھی تو ہی بلا رہے ہو، آخر یہ ماجرا کیا ہے؟ جسپر وہ بڑے اطمینان سے بولا: اُٹھے گا تو مارے گا! :)۔ یہی لطیفہ ایک کارٹون کی شکل میں:


    اسرائیل 2004-2005 میں غزہ کی پٹی کا انخلاء کر چکا ہے تاکہ دنیا کو باور کرایا جا سکے کہ اسرائیل-فلسطین میں امن کا نہ ہونا اسرائیلی قبضہ نہیں حماس کی دہشت گردی ہے:
    http://en.wikipedia.org/wiki/Israeli_disengagement_from_Gaza


    درست۔ یہ چارٹ ہے اسرائیلی بمباری میں ابتک مرنے والوں کا انکی عمر کے حساب سے:
    http://www.israellycool.com/2014/07...s-killed-so-far-in-operation-protective-edge/
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1

اس صفحے کی تشہیر