1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $413.00
    اعلان ختم کریں

کالعدم جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ سعید گرفتار

جاسم محمد نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 17, 2019

  1. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,228
    کالعدم جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ سعید گرفتار
    ویب ڈیسک 3 گھنٹے پہلے
    [​IMG]
    سی ٹی ڈی پنجاب نے آج صبح حافظ سعید کو لاہور سے گوجرانوالہ جاتے ہوئے گرفتار کیا تھا۔ فوٹو:فائل

    لاہور: انسداد دہشت گردی عدالت نے کالعدم تنظیم جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ سعید کو 7 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر سینٹرل جیل منتقل کرنے کا حکم دیدیا ہے۔

    سی ٹی ڈی نے حافظ سعید کو انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش کیا جہاں ان کے 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ کی استدعا کی گئی جس کو مسترد کرتے ہوئے عدالت نے حافظ سعید کو 7 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر سینٹرل جیل منتقل کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ اس کیس کی تحقیقات جلد سے جلد مکمل کرکے رپورٹ پیش کی جائے۔

    سی ٹی ڈی پنجاب نے کالعدم تنظیم جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ سعید کو آج صبح لاہور سے گوجرانوالہ جاتے ہوئے گرفتار کیا تھا جس کے بعد انہیں نامعلوم مقام پر منتقل کیا گیا۔ حافظ سعید لاہور میں درج دو مقدمات میں 3 اگست تک ضمانت پر رہا تھے اور گوجرانوالہ میں درج مقدمات میں ضمانت کے لیے جارہے تھے کہ سی ٹی ڈی نے انہیں راستے سے گرفتار کرلیا۔

    سی ٹی ڈی ذرائع کے مطابق حافظ محمد سعید کو محکمہ داخلہ پنجاب کی اجازت کے بعد گرفتار کیا گیا ہے، اس کےعلاوہ مزید 20 افراد کی گرفتاری کی منظوری دی گئی ہے جن کی گرفتاری کے لیے کارروائیاں جاری ہیں۔

    حکومت کی جانب سے جماعت الدعوۃ اور فلاح انسانیت فاؤنڈیشن پر پابندی عائد کی جاچکی ہے۔ یکم جولائی کو حافظ سعید اور ان کے دیگر 6 ساتھیوں کے خلاف لشکر طیبہ کا سربراہ ہونے اور دہشت گردی میں ملوث ہونے کے الزامات میں مقدمات بھی درج کیے گئے ہیں۔ ان پر دہشت گردی کو پروان چڑھانے اور دہشت گردوں کی مالی معاونت کیلئے فنڈز اکٹھا کرنے کے الزامات ہیں۔

    حافظ سعید نے اپنے خلاف درج دہشت گردی کے مقدمات پر لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کیا ہے۔ عدالت میں دائر درخواست میں انہوں نے موقف اپنایا کہ ان پر درج ایف آئی آرز ختم کی جائیں، ان کا لشکر طیبہ، القاعدہ یا ایسی کسی بھی تنظیم سے کوئی تعلق نہیں، وہ ریاست کے خلاف اقدامات میں ہرگز ملوث نہیں ہیں، جبکہ انڈین لابی کا حافظ سعید پر ممبئی حملوں میں ملوث ہونے کا الزام حقائق کے منافی ہے۔
     
  2. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    8,624
    کیا پہلی بار یہ خبر سامنے آئی ہے؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  3. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,730
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    ایسی خبروں میں خبر سے زیادہ ٹائمنگ دلچسپ ہوتی ہے۔ :)
    اسی لیے بار بار آتی رہتی ہیں، موقع محل کی مناسبت سے۔
     
    • متفق متفق × 3
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  4. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,047
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    جی او شیرو۔۔۔۔ کوکین شوکین بھی نکلی یا کوئی نہیں ؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 5
  5. وجی

    وجی لائبریرین

    مراسلے:
    24,570
    موڈ:
    Daring
    نہیں نکلی جناب بس عمران صاحب کی امریکہ یاترا اچھی ہو اسی کی تیاریاں ہیں۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • متفق متفق × 1
  6. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,228
    مزے کی بات ہے کہ پاکستانیوں کے ساتھ ساتھ اب بھارتیوں کو بھی یہ گیم پلان اچھی طرح سمجھ آچکا ہے :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  7. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,047
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ایہہ کی گل ہوئی، کسی حقانی وغیرہ کی گرفتاری کرتے تو کوئی بات بھی تھی۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  8. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,228
    ممبئی حملوں کا ماسٹر مائنڈ حافظ وی آئی پی سعید ضمانت مسترد ہونے کے بعد:
     
  9. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    8,624
    ڈونلڈ ٹرمپ نے تہلکہ خیز ٹویٹ کر دی ہے۔ پس ثابت ہوا کہ حافظ سعید کو امریکی دباؤ پر گرفتار کیا گیا۔ سبکی در سبکی! غلامی در غلامی! گرفتار کرنا تھا تو بغیر دباؤ کے کیا جانا چاہیے تھا۔ اس کا مطلب ہے کہ امریکی دباؤ کے سامنے موجودہ حکومت بھی ایک پل میں ڈھیر ہو جائے گی۔ یہ ہے نیا پاکستان! :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  10. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,228

    ماضی میں ان دہشت گرد عناصر کے خلاف کاروائی نہ ہونے دینے میں اصل دباؤ اپنے ہی ملک کے ریاستی اداروں کی طرف سے آتا تھا۔ ڈان لیکس بھول گئے جب نواز شریف نے ان اداروں کو دباؤ میں لانے کیلئے ڈان اخبار میں اعلی سطح کی سیکورٹی میٹنگ کا احوال لیک کروایا تھا؟ تب بھی یہی تنازعہ تھا کہ ن لیگی حکومت ان عناصر کے خلاف قانونی کاروائی کرنا چاہتی ہے جبکہ ادارے انہیں قومی اثاثہ بنانے پر ڈٹ گئے تھے :)
    آپ کو تو بھارت اور امریکہ کا شکر ادا کرنا چاہیے کہ ان کے مسلسل دباؤ میں آکر مقتدر حلقے اپنے قومی اثاثے جو انہوں نے سخت محنت سے بنائے تھے اب ملک (اپنے رقبوں) کی بقا کی خاطر قربان کرنے کیلئے تیار ہو گئے ہیں :)
     
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  11. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    8,624
    :shameonyou:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  12. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,228
    یہ ڈوز دراصل مقتدر حلقوں کو دی گئی ہے کہ اب آپ اپنے قومی اثاثوں کا تحفظ نہیں کر سکتے۔ اگر بین الاقوامی اداروں سے امداد لینی ہے تو ان دہشت گردوں کو سزائیں دیں۔ :)
     
  13. Fawad -

    Fawad - محفلین

    مراسلے:
    2,157
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    امريکی حکومت اس امر سے واقف ہے کہ پاکستانی حکومت نے اقوام متحدہ کی جانب سے دہشت گرد قرار ديے جانے والے حافظ سعيد اور ان کے ساتھيوں کے خلاف دہشت گرد تنظيم لشکر طيبہ اور اس سے منسلک جماعت الدعوۃ اور فلاح انسانيت فاؤنڈيشن کے ليے فنڈز جمع کرنے کی پاداش ميں کيسيز کھولے ہيں۔

    ہم دہشت گرد گروہوں کی کاروائيوں کی روک تھام کے ضمن ميں اس اقدام کو سراہتے ہيں کيونکہ يہ کاروائياں جنوبی ايشيا کے امن اور استحکام کے ليے خطرہ ہيں۔

    ہم پاکستانی وزيراعظم عمران خان کے بيان کردہ ارادے کا خير مقدم کرتے ہيں کہ پاکستان خود اپنے مستقبل کے ليے عسکری گروہوں کو اپنی سرزمين استعمال کرنے کی اجازت نہيں دے گا۔

    ہم دہشت گرد گروہوں اور ان کی قيادت کے خلاف مستقبل ميں بھی ايسے مستقل اور مسلسل اقدامات کی حوصلہ افزائ کرتے رہيں گے جو پاکستان اور خطے ميں امن اور خوشحالی کے ليے انتہائ اہم ہيں۔

    حق‍یقت يہی ہے کہ امريکی حکومت کی جانب سے حافظ سعيد کے حوالے سے تازہ فيصلے سے بہت پہلے ہی ان کی تنظيم کو حکومت پاکستان، بھارت، امريکہ، برطانيہ، يورپين يونين، رشيا اور آسٹريليا کی جانب سے کالعدم قرار ديا جا چکا تھا۔

    ايک دہشت گرد تنظيم جس کی اپنی تاريخ اور ايجنڈہ دانستہ بے گناہوں کو نشانہ بنانے سے عبارت ہو، اسے کبھی بھی سياسی اکائ تسليم نہيں کيا جا سکتا چاہے اس کے دعوے اور عزائم کتنے ہی خوشنما کيوں نہ ہوں۔


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ
     
    • زبردست زبردست × 1
  14. جان

    جان محفلین

    مراسلے:
    1,678
    غلامِ اعظم؟ غدارِ اعظم؟ فنکارِ اعظم؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  15. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,047
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کراں میں نظارہ جدوں اودی تصویر دا۔
    پیندا اے 'بھلیکھا' مینوں سوہنی سسی ہیر دا۔


    سجنا۔۔۔ اے بھلیکھے ای نی۔ ویلا ٹپ لین دے، حافظ صاحب فیر بوہڑ تھلے ہونے نیں۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  16. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,228
    جب تک ٹرمپ صدر، مودی وزیر اعظم ہے آپ اقوام عالم کو ماضی کی طرح دھوکہ میں نہیں رکھ سکتے۔ اسٹیبلشمنٹ کو سمجھنا پڑے گا کہ یہ 80، 90 کی دہائی نہیں رہی جب آپ اوجڑی کیمپ میں امریکی اسلحہ ضائع کر کے دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونکتے تھے ۔
    دنیا جہادیوں کو استعمال کر کے آگے بڑھ گئی ہے اور یہ وہیں ان کے ساتھ ٹنگے ہوئے ہیں۔
     
  17. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    8,624
    ایک دو نسلیں تیار کر لیں آپ نے۔ ان کو کیا خلا میں بھیج دیا جائے؟ جب کسی سے کام لیا جاتا ہے، تو پھر، انہیں کام ختم ہونے کے بعد، راہ بھی سجھائی جاتی ہے۔
     
    • متفق متفق × 1
  18. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    8,624
    اسٹیبلشمنٹ ہی تھی نا جس نے نواز شریف اور واجپائی کے خلاف محاذ کھڑا کر لیا تھا۔ کشمیر کا مسئلہ سیاسی قیادت حل کر رہی تھی تو پھر اسٹیبلشمنٹ نے کیوں ہنگامہ بپا کر دیا، کارگل مچا دیا، حافظ سعید صاحب اور دیگر کو بھی استعمال کیا اور ایسی پالیسی اور روش اختیار کی جو کہ اکیسویں صدی کے تقاضوں کے برخلاف تھی۔ انڈیا تب محتاط رہا اور اس نے ہمارے خلاف عالمی سطح پر تحریک چلائی جس کے باعث ہم بیک فٹ پر ہیں۔ اب ہم اس موضوع پر بات کریں گے تو غدار ٹھہریں گے! :)
     
    • زبردست زبردست × 1
    • متفق متفق × 1
  19. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,228
    یہ کند ذہن عسکری ایسے ہی ہیں۔
    دل کے پھپھولے جل اٹھے سینے کے داغ سے
    اس گھر کو آگ لگ گئی گھر کے چراغ سے
    ایوب کی دس سالہ آمریت کے بعد ملک میں جمہوری دور آیا۔ الیکشن صاف شفاف ہوئے۔ اقتدار الیکشن جیتی ہوئی پارٹی کو منتقل ہونے ہی والا تھا کہ صدر پاکستان کی پھرکی گھوم گئی اور جس شخص کو وزیر اعظم بننا تھا اس پر غداری کا الزام لگا کر جیل میں ڈال دیا گیا۔ ان اقدامات پرمشرقی پاکستان میں بغاوت ہوئی جسے دبانے کیلئے فوجی آپریشن کیا گیا اور بنگلہ دیش آزاد کروا کر دم لیا۔
    اس سارے سانحہ کا پس منظر یہ تھا کہ صدر یحییٰ صدر رہنا چاہتے تھے اور مجیب الرحمان انہیں مزید ایکسٹینشن دینے کیلئے ڈیل نہیں کر رہے تھے۔
    عسکری دماغ میں مصلحت (این آر او، ڈیل) اور فوجی آپریشن کے درمیان کوئی درمیانی راہ موجود نہیں ہوتی۔ اور یہی فسطائیت ہے جس کا آپ رونا روتے ہیں۔
     
  20. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    8,624
    یہ تو خیر طویل داستان ہے۔ مشرقی پاکستان کا معاملہ ایسا سادہ کب تھا!
     
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر