پاکستان میں معاشی ترقی کی شرح 68 سال بعد منفی ہوگئی

جاسم محمد نے 'معیشت و تجارت' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 19, 2020

  1. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
    پاکستان میں معاشی ترقی کی شرح 68 سال بعد منفی ہوگئی
    حسیب حنیف منگل 19 مئ 2020
    [​IMG]
    صنعتی ترقی کی شرح منفی 2.64، ٹیکسٹائل کی منفی 2.7 فیصد رہی، ہدف 4 فیصد تھا۔ (فوٹو: فائل)

    اسلام آباد: پاکستان میں کورونا، لاک ڈان اور ٹڈی دل نے معیشت کو بدترین نقصان پہنچایا، معاشی ترقی کی شرح 68 سال بعد منفی ہو گئی۔

    سیکریٹری منصوبہ بندی ظفر حسن کی زیر صدارت نیشنل اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس ہوا، اجلاس میں بریفنگ میں بتایا گیا کہ کورونا، لاک ڈان اور ٹڈی دل نے معیشت کو بدترین نقصان پہنچایا، معاشی ترقی کی شرح 68 سال بعد منفی ہو گئی، 1952 میں معاشی ترقی کی شرح منفی ہوئی تھی، شرح نمو سال 1952 میں منفی 1.81 فیصد تھی۔

    اعلامیے کے مطابق معاشی ترقی کی شرح منفی 0.38 فیصد رہی، معاشی ترقی کی شرح کا ہدف 4 فیصد تھا،زرعی شعبے میں شرح نمو 2.67 فیصد رہی، زرعی شعبے میں شرح نمو کا ہدف 2.9 فیصد تھا، کپاس کی پیداوار میں 6.92 اور گنے کی پیداوار میں 0.44 فیصد منفی گروتھ ہوئی، پیاز ٹماٹر اور دیگر سبزیوں کی پیداوار میں 4.5 فیصد اضافہ ہوا،لائیو اسٹاک میں شرح نمو 2.5 فیصد رہی، جنگلات میں شرح نمو 2.29 فیصد رہی،صنعتی ترقی کی شرح منفی 2.64 رہی، لارج اسکیل مینوفیکچرنگ میں 7.7 فیصد کمی آئی۔

    ٹیکسٹائل سیکٹر میں منفی 2.7 فیصد کمی، فوڈ مشروبات اور تمباکو سیکٹر میں منفی 2.3 فیصد کمی ،کوک اور پیٹرولیم مصنوعات میں منفی 17.4 ، فارماسیوٹیکل منفی 5.3 ،کیمیکل منفی 2.3 فیصد کمی ہوئی، الیکٹرونکس منفی 13.5 فیصد، انجینئرنگ منفی 7 فیصد کمی ہوئی،تعمیراتی سرگرمیوں میں 8.6 فیصد اضافہ ہوا۔

    ٹرانسپورٹ، اسٹوریج اور کمیونی کیشن سیکٹر میں 7.13 فیصد نیگیٹو گروتھ رہی، فنانس اور انشورنس سیکٹر کی گروتھ میں 0.79 فیصد اضافہ ہوا، 2019-20 میں فی کس آمدنی 2 لاکھ 14ہزار 539 روپے رہی ،فی کس آمدنی میں گزشتہ سال کی نسبت 8.3 فیصد اضافہ ہوا،اس سال جی ڈی پی 41 ہزار 772 ارب روپے رہی۔
     
  2. ابن آدم

    ابن آدم محفلین

    مراسلے:
    155
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    • متفق متفق × 1
  3. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
    پاکستانی روپے کی قدر 30 فیصد گرانے کی وجہ سے۔
     
  4. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
     
  5. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
  6. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    25,124
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    ویسے ہی ایک لطیفہ یاد آ گیا، پچھلے دنوں ہی پڑھا۔ :)

    ایک نائی شادی کا کھانا پکا رہا تھا کہ چاول خراب ہو گئے وہ گھبرا گیا۔ اچانک اسے ایک بہانہ سوجھا اس نے شادی والوں سے کہا کہ دھیان رکھنا کہ جب بارات آئے تو کوئی پٹاخہ نہ چلا دے، نہیں تو چاول جڑ جائیں گے۔
    جیسے ہی بارات آئی تو لڑکی والے جلدی سے بارات کی طرف لپکے کہ پٹاخوں سے روک لیں مگر ان کے پہنچنے تک بارات والوں نے پٹاخے پھوڑ دیے۔
    جونہی نائی نے پٹاخوں کی آواز سنی تو اس نے رومال کندھے پر رکھا اور وہاں سے یہ کہتا ہوا چل دیا۔ روکا بھی تھا میں نے، اب سارے چاول خراب کر دیے نا۔ :p
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
  7. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
  8. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
  9. ابن آدم

    ابن آدم محفلین

    مراسلے:
    155
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    روپے میں گراوٹ زیادہ تر تو ٢٠١٨-٢٠١٩ کے مالی سال میں ہوئی تھی. جولائی ٢٠١٩ سے تو روپے کی قدر قدرے مستحکم ہے. تو ٢٠١٩-٢٠ کے مالی سال میں اکانومی کے حجم میں کمی دیگر عناصر کی وجہ سے ہوئی ہے
     
    • متفق متفق × 1
  10. ابو ہاشم

    ابو ہاشم محفلین

    مراسلے:
    826
    1952 میں کیا ہوا تھا؟
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  11. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
    روپے کی قدر کو اب اسٹیٹ بینک ماضی کی طرح کنٹرول نہیں کر رہا۔ امپورٹ کم کرنے سے معاشی ایکٹیویٹی میں شدید کمی آئی ہے
     
  12. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,244
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    روپیہ فری فلوٹ تو نہیں ہے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
    As part of negotiations for the 22nd IMF bailout package, the global lender demanded that Pakistan adopt a free-float exchange rate regime. Hence, after decades of being strictly controlled by the State Bank of Pakistan (SBP), the government consented to put in place a market-based flexible exchange rate
    Rupee-dollar parity – from volatility to stability
     
  14. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,244
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Amused
    فری فلوٹ نہیں بلکہ مینیجڈ فلوٹ ہے
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  15. ابن آدم

    ابن آدم محفلین

    مراسلے:
    155
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    ندیم ملک کے پروگرام میں یہ بات ائی تھی کہ اب بھی اسٹیٹ بنک ضرورت پڑنے پر روپے کی قدر مستحکم رکھنے کے لئے ڈالر کا استعمال کرتا ہے.
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  16. ابن آدم

    ابن آدم محفلین

    مراسلے:
    155
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    ویسے حکومت نے یہ بھی کہا ہے کہ ٣٠ جون ٢٠١٩ ختم ہونے والے مالی سال میں مجموعی قومی پیداوار کی شرح نمو درحقیقت صرف ١.٩٪ رہی جو کہ ١١ سال میں سب سے کم ہے جب کہ پہلے یہ بولا گیا کہ شرح نمو ٣.٣% ہے
    https://tribune.com.pk/story/222451...rst-time-68-years/&__twitter_impression=true/
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  17. ابن آدم

    ابن آدم محفلین

    مراسلے:
    155
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  18. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,833
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    اب جاسم صاحب کہیں گے کہ
    "دو منفیوں کی ضرب سے بنتی ہیں مثبتیں
    انشاء اللہ اگلے سال بھی منفی رہے گی تو پھر دیکھیے گا کہ کس طرح معاشی ترقی چھپڑ پھاڑ کر نکلے گی"
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  19. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
    ندیم ملک کے مطابق معاشی شرح نمو کم ہونے سے معیشت کا حجم ڈالروں میں کم ہو گیا۔ یہ بات درست ہے کیونکہ پاکستانی روپے کی قدر اور ویلیو تھی جسے ۱۶۰ روپے فی ڈالر تک گرانے کے بعد اسے استحکام ملا ہے۔ اس کا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ معاشی شرح نمو کم ہونے سے معیشت کا حجم پاکستانی روپوں میں کم ہو گیا۔
     
  20. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,512
    کورونا وائرس وبا کی وجہ سے امریکہ جیسی مضبوط معیشتوں کی شرح نمو بھی منفی ہو گئی ہے تو پاکستانی معیشت کس کھیت کی مولی ہے؟
    [​IMG]
     

اس صفحے کی تشہیر