1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

انشا اللہ خان انشا ٹک آنکھ ملاتے ہی کیا کام ہمارا ۔ انشا اللہ خان انشا

فرخ منظور نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 22, 2015

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,633
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    ٹک آنکھ ملاتے ہی کیا کام ہمارا
    تِس پہ یہ غضب پوچھتے ہو نام ہمارا

    تم نے تو نہیں خیر یہ فرمائیے بارے
    پھر کِن نے لیا راحت و آرام ہمارا


    میں نے جو کہا آئیے مجھ پاس تو بولے
    کیوں کس لیے، کس واسطے ، کیا کام ہمارا


    رکھتے ہیں کہیں پاؤں تو پڑتا ہے کہیں اور
    ساقی تو ذرا ہاتھ تو لے تھام ہمارا


    ٹک دیکھ ادھر غور کر انصاف یہ ہے واہ
    ہو جرم و گنہ غیر سے اور نام ہمارا


    اے باد سحر محفلِ احباب میں کہیو
    دیکھا ہے جو کچھ حال تہہِ دام ہمارا

    قطعہ
    گر وقتِ سحر جائیے ہوتا ہے یہ ارشاد
    ہے وقتِ ملاقات سرِ شام ہمارا


    پھر شام کو آئے تو کہا صبح کو یوں ہی
    رہتا ہے سدا آپ پہ الزام ہمارا


    سرگشتگی مرحلۂ شوق میں اے عشق
    پڑتا ہے نئی وضع سے ہر گام ہمارا


    اے برہمن دیر محبت میں صنم کی
    الله ہی باقی رکھے اسلام ہمارا

    ہم کوچۂ دلدار کے ہوتے ہیں تصدق
    اے شیخِ حرم ہے یہی احرام ہمارا

    بیتابیِ دل کے سبب اس شوخ تک "انشاؔ"
    پہنچے ہے بلا واسطہ پیغام ہمارا

    (انشا الله خان انشاؔ)
     

اس صفحے کی تشہیر