1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی یوم تاسیس کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

موجودہ حالات میں جمہوریت کافی نہیں ، قتال فی سبیل اللہ کو عام کرنا ہوگا، منور حسن

حسینی نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 22, 2014

  1. حسینی

    حسینی محفلین

    مراسلے:
    1,560
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    موجودہ حالات میں جمہوریت کافی نہیں ، قتال فی سبیل اللہ کو عام کرنا ہوگا، منور حسن
    [​IMG]
    لاہور(دنیا نیوز)جماعت اسلامی کے سابق امیر منور حسن نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا ، کہتے ہیں معاشرے میں قتال فی سبیل اللہ کا کلچر عام کرنا ہوگا ، محض جمہوری سیاست کے ذریعے مسائل پر قابو نہیں پایا جا سکتا۔
    لاہور میں جماعت اسلامی کے اجتماع عام سے خطاب کرتے ہوئے منور حسن نےکہا کہ موجودہ حالات میں جہاد فی سبیل اللہ اور قتال فی سبیل اللہ کو عام کرنے کی ضرورت ہے ۔ کچھ لوگ ان اصطلاعات کے استعمال سے گریز کرتے ہیں کہ لیکن محض جمہوری سیاست کے ذریعے معاشرے کو درپیش مسائل پر قابو نہیں پایا جا سکتا ۔ منور حسن نے کہا قتال فی سبیل اللہ کے نتیجے میں اچھائی جیت جائے تب ہی جمہوری سیاست کارگر ہو سکتی ہے۔ سابق امیر جماعت اسلامی منورحسن کا کہنا ہے کہ انجینئرڈ انتخابات کے ہوتے ہوئے جمہوریت نہیں آ سکتی ، اس کے لیے طویل جدوجہد کرنا ہوگی۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  2. حسینی

    حسینی محفلین

    مراسلے:
    1,560
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    لو جی منور حسن صاحب نے اک نیا شوشا چھوڑا۔۔۔۔
    مائک کو ترسے تھے شاید۔۔۔ آج اک عرصہ بعد موقعہ ملا ہے تو۔۔ اک نیا حکم لے آئے ہیں۔۔۔۔
    وہ کن کے خلاف یہ قتال اور جہاد کرنے جارہے ہیں؟؟ اللہ خیر کرے پاکستان کی۔۔۔۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  3. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    38,347
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Bookworm
    جاہل آدمی!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  4. نایاب

    نایاب لائبریرین

    مراسلے:
    13,422
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Goofy
    انا للہ و انا الیہ راجعون
     
    • متفق متفق × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    یہ سوال تو واقعی اہم ہے کہ جہاد کس کے خلاف کرنا ہے؟ اور کہاں کرنا ہے؟ اپنے ہم وطنوں کے خلاف؟ ؟ ؟
    اپنے جذباتی خطابات سے کہیں اپنی جماعت کو وطن میں بینڈ ہی نا کرا لیں
     
    • متفق متفق × 2
  6. نایاب

    نایاب لائبریرین

    مراسلے:
    13,422
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Goofy
    شاید " اخوان المسلمون " کے ہمراہ پاکستان کو پاک کرتے پورے " بلاد اسلامیہ " میں " جہاد وقتال " ہوگا ۔
     
  7. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اللہ کریم خیر کرے
     
  8. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,551
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question
    یہ جماعت ِ اسلامی کی تقریباَ 35 سال پرانی آئیڈیالوجی ( جہاد )ہے ۔ آج اس کو صرف موڈفائیڈ کیا ہے ۔ اس آئیڈیالوجی کی برکت آج بھی پاکستان کے طول و عرض میں پھیلی ہوئی ہے ۔ جس کے سائے میں طالبان اور دیگر دہشت گرد گروپ خوب پروان چڑھے ہیں ۔ اور اس برکت کے اثرات خود کش حملے کی صورت میں ہزاروں لوگوں کےقتل اور ملک کی بربادی میں نمایاں ہیں ۔ اور یہ سلسلہ ہنوز جاری ہے ۔ یہ سر پھراا نسان شاید اس میں دلچسپی کا کوئی نیا سامان پیدا کرنا چاہتا ہے ۔ اللہ خیر کرے ۔
     
    • متفق متفق × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. حسینی

    حسینی محفلین

    مراسلے:
    1,560
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    واقعا اخوان المسلمین کے مسئولین کو پاکستان بلانا۔۔۔ اور اتنی آزادی سے ان کی تقریریں۔۔ بہت بڑا معنی رکھتا ہے۔
    دنیا کے اکثر ممالک اخوان کو اچھی نظر سے نہیں دیکھتے۔۔۔ ویسے بھی اخوان المسلمین، جماعت اسلامی کی طرح، اپنے بانی کے افکار سے بہت زیادہ ہٹ چکی ہے۔
    البتہ یہاں یہ موقف منور حسن کا ذاتی ہوسکتا ہے۔۔۔ جماعت کے دوسرے لوگ ایسا نظریہ یا تو نہیں رکھتے یا کم از کم اتنا کھل کر اظہار کرنے کی جرات نہیں رکھتے۔
     
    • متفق متفق × 2
  10. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,551
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question
    واضع رہے کہ منور حسن جماعتِ اسلامی کے عام کارکن نہیں بلکہ امیر تھے ۔
     
    آخری تدوین: ‏نومبر 22, 2014
    • متفق متفق × 2
  11. منقب سید

    منقب سید محفلین

    مراسلے:
    267
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Question
    جماعت اسلامی کے سابق امیر سید منور حسن نے شاید اجتماع عام کو "مجلس شوریٰ" سمجھ لیا ہوگا۔ بہرحال جلالی سید کا یہ بیان ان کی ذاتی سوچ :bomb1: کی ہی عکاسی کرتا ہے۔ اس سلسلے میں جماعت اسلامی کے اکثر اہم ممبران تو :mobilephone: رابطے پر تبصرہ کرنے سے گریزاں ہیں :silent3: باقی اسے ذاتی سوچ کہہ کر مزید کچھ کہنے سے گریز کر رہے ہیں۔ اب اس بیان کی صفائیاں کون کون کہاں کہاں اور کب تک دیتا نظر آئے گا یہ میڈیا پر سب دیکھیں گے۔ :tv:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  12. واجدحسین

    واجدحسین معطل

    مراسلے:
    678
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اب تو مجھے تم لوگوں کو بھائی کہنا بھی اچھا نہیں لگتا
    کیا تمھیں اللہ کے فرمان سے قران کے نظام یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی ان اعمال سے نفرت ہیں جنہیں تم سن کر بالکل بے ہوش ہو جاتے ہو
    تمھاری زندگیوں میں اگر تمھیں سخت الفاظ میں خبردار کرنا ہوں تو صرف دو الفاظ کا فی جہاد اور قتال فی سبیل اللہ

    تکبیر
    اللہ اکبر
     
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 3
  13. یوسف-2

    یوسف-2 محفلین

    مراسلے:
    4,043
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    سُوۡرَةُ المَائدة
    إِنَّمَا جَزَٲٓؤُاْ ٱلَّذِينَ يُحَارِبُونَ ٱللَّهَ وَرَسُولَهُ ۥ وَيَسۡعَوۡنَ فِى ٱلۡأَرۡضِ فَسَادًا أَن يُقَتَّلُوٓاْ أَوۡ يُصَلَّبُوٓاْ أَوۡ تُقَطَّعَ أَيۡدِيهِمۡ وَأَرۡجُلُهُم مِّنۡ خِلَ۔ٰفٍ أَوۡ يُنفَوۡاْ مِنَ ٱلۡأَرۡضِ‌ۚ ذَٲلِكَ لَهُمۡ خِزۡىٌ۬ فِى ٱلدُّنۡيَا‌ۖ وَلَهُمۡ فِى ٱلۡأَخِرَةِ عَذَابٌ عَظِيمٌ (٣٣)
    جو لوگ الله تعالیٰ سے اور اس کے رسول سے لڑتے ہیں اور ملک میں فساد پھیلاتے پھرتے ہیں ان کی یہی سزاہے کہ قتل کیے جائیں یاسولی دیے جائیں یا ان کے ہاتھ اور پاوٴں مخالف جانب سے کاٹ دئیے جائیں یا زمین پر سے نکال دئیے جائیں یہ ان کے لیے دنیا میں (سخت) رسوائی ہے اور ان کو آخرت میں عذابِ عظیم ہوگا۔ (۳۳)

    سُوۡرَةُ محَمَّد
    فَإِذَا لَقِيتُمُ ٱلَّذِينَ كَفَرُواْ فَضَرۡبَ ٱلرِّقَابِ حَتَّىٰٓ إِذَآ أَثۡخَنتُمُوهُمۡ فَشُدُّواْ ٱلۡوَثَاقَ فَإِمَّا مَنَّۢا بَعۡدُ وَإِمَّا فِدَآءً حَتَّىٰ تَضَعَ ٱلۡحَرۡبُ أَوۡزَارَهَا‌ۚ ذَٲلِكَ وَلَوۡ يَشَآءُ ٱللَّهُ لَٱنتَصَرَ مِنۡہُمۡ وَلَ۔ٰكِن لِّيَبۡلُوَاْ بَعۡضَڪُم بِبَعۡضٍ۬‌ۗ وَٱلَّذِينَ قُتِلُواْ فِى سَبِيلِ ٱللَّهِ فَلَن يُضِلَّ أَعۡمَ۔ٰلَهُمۡ (٤) سو تمہارا جب کفار سے مقابلہ ہوجائے تو انکی گردنیں مارو ․یہانتک کہ جب تم انکی خوب خونریزی کرچکو تو خوب مضبوط باندھ لو پھر اسکے بعد یا تو بلامعاوضہ چھوڑ دینا اور یا معاوضہ لے کر چھوڑ دینا جب تک کہ لڑنے والے اپنے ہتھیار نہ رکھ دیں یہ (حکم جہاد کا جو مذکور ہوا بجالانا) اور اگر اللہ چاہتا تو ان سے انتقام لے لیتا لیکن تاکہ تم میں ایک کا دوسرے کے ذریعے سے امتحان کرےاور جو لوگ اللہ کی راہ میں مارے جاتے ہیں (اللہ) ان کے اعمال کو ہرگز ضائع نہ کرے گا۔ (۴)


    سُوۡرَةُ البَقَرَة
    يَسۡ۔َٔلُونَكَ عَنِ ٱلشَّہۡرِ ٱلۡحَرَامِ قِتَالٍ۬ فِيهِ‌ۖ قُلۡ قِتَالٌ۬ فِيهِ كَبِيرٌ۬‌ۖ وَصَدٌّ عَن سَبِيلِ ٱللَّهِ وَڪُفۡرُۢ بِهِۦ وَٱلۡمَسۡجِدِ ٱلۡحَرَامِ وَإِخۡرَاجُ أَهۡلِهِۦ مِنۡهُ أَكۡبَرُ عِندَ ٱللَّهِ‌ۚ وَٱلۡفِتۡنَةُ أَڪۡبَرُ مِنَ ٱلۡقَتۡلِ‌ۗ وَلَا يَزَالُونَ يُقَ۔ٰتِلُونَكُمۡ حَتَّىٰ يَرُدُّوكُمۡ عَن دِينِڪُمۡ إِنِ ٱسۡتَطَ۔ٰعُواْ‌ۚ وَمَن يَرۡتَدِدۡ مِنكُمۡ عَن دِينِهِۦ فَيَمُتۡ وَهُوَ ڪَافِرٌ۬ فَأُوْلَ۔ٰٓٮِٕكَ حَبِطَتۡ أَعۡمَ۔ٰلُهُمۡ فِى ٱلدُّنۡيَا وَٱلۡأَخِرَةِ‌ۖ وَأُوْلَ۔ٰٓٮِٕكَ أَصۡحَ۔ٰبُ ٱلنَّارِ‌ۖ هُمۡ فِيهَا خَ۔ٰلِدُونَ (٢١٧) لوگ آپ سے شہرِ حرام میں قتال کرنے کے متعلق سوال کرتے ہیں آپ فرمادیجیے کہ اس میں( خاص طور پر) قتال کرنا (یعنی عمداً) جرم عظیم ہے اور الله تعالیٰ کی راہ میں روک ٹوک کرنا اور الله کے ساتھ کفر کرنا اور مسجدِ حرام (یعنی کعبہ) کے ساتھ اور جو لوگ (مسجدِحرام) کے اہل تھے ان کو اس سے خارج کردینا جُرمِ عظیم ہے اور الله تعالیٰ کے نزدیک اور فتنہ پروازی کرنا (اس) قتل (خاص) سے بدر جہا بڑھ کرہے اور یہ کفار تمھارے ساتھ ہمیشہ جنگ جاری ہی رکھیں گے۔ اس غرض سے کہ اگر (خدا نہ کرے) قابو پاویں تو تم کو تمھارے دین(اسلام)سے پھیر دیں․ اور جو شخص تم میں سے اپنے دین سے پھرجاوے پھر کافر ہی ہونے کی حالت میں مرجائےتو ایسے لوگوں کے (نیک) اعمال دنیااور آخرت میں سب غارت ہوجاتے ہیں اور ایسے لوگ دوزخی ہوتے ہیں۔ (اور) یہ لوگ دوزخ میں ہمیشہ رہیں گے۔ (۲۱۷)
     
  14. یوسف-2

    یوسف-2 محفلین

    مراسلے:
    4,043
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    حکومت منور حسن کو گرفتار کرکے مقدمہ قائم کرے، ایم کیو ایم
    ====================================
    کراچی (جنگ نیوز) متحدہ رابطہ کمیٹی کے ڈپٹی کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی اورسابق صوبائی وزیرِ صنعت و تجارت اور رکنِ سندھ اسمبلی رئوف صدیقی نے جماعتِ اسلامی کے سابق امیر منور حسن کے بیان پر شدید غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ منور حسن کی جانب سے قتال فی سبیل اللہ کی تشریح دانستہ طور پر فساد فی العرض کے زمرے میں آتی ہے۔ حکومت فی الفور منور حسن کو گرفتار کر کے مقدمہ قائم کرے۔ڈا کٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ الطاف حسین پاکستان کو صحیح معنوں میں قائد اعظم محمد علی جناح رحمۃ اللہ کا پاکستان بنانا چاہتے ہیں جس میں تمام مذاہب کو بلا امتیازرنگ و نسل و مذہب برابر کے حقوق حاصل ہوںاور قوم متحد ہو، جماعت اسلامی نے پاکستان میں مذہبی جنونیت ،دہشتگردی اور مذہبی منافرت کی داغ بیل ڈالی ہے اور نوجوانوں کو مذہب کے نام انتہاء پسندی کیلئے ور غلایا ہے۔ ایم کیو ایم اقلیتی امور کمیٹی کی جانب سے کورنگی کے کرسچن ٹائون میں قائم رکنیت سازی کیمپ پر میڈیا نمائندگان سے گفتگو کررہے تھے۔رئوف صدیقی نے کہا منور حسن نے اس سے پہلے بھی ’’شہید‘‘ کو جو اسلام میں اللہ تعالیٰ کا دیا گیا اعزاز ہے متنازعہ بنانے کی دانستہ کوشش کی تھی۔ اور اب قتلِ عام کو بڑھاوا دینے کی دانستہ کوشش کی ہے۔ رئوف صدیقی نے شدید مذمت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ منور حسن مسلمانوں میں تفرقہ اور کنفیوژن پھیلانے کا کردار ادا کر رہے ہیں۔ قتلِ عام کے جذبات کو بڑھاوا دینے کی سزا پاکستان کے آئین اور قانون میں موجود ہے لیکن حیرت ہے کہ ریاست کیوں خاموش بیٹھی ہے؟ فساد فی العرض کرنے والے کی شریعت میں مخالف سمت میں ہاتھ اور پائوں کاٹنے سزا مقرر ہے، اور پاکستان کے آئین میں قتل کرنے کی کوشش یا اس کی ترغیب دینے والے کی سزا واضح طور پر موجود ہے
     
  15. ظفری

    ظفری محفلین

    مراسلے:
    11,551
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question
    آپ کو خدا کا واسطہ یوسف- 2
    ۔۔۔۔۔۔قرآن کی آیتوں کو اس کے سیاق و سباق ( Context) سے باہر کا نکال کر اپنی شرپسندی اور تخریب کاری کے لیے استعمال نہ کریں ۔ اللہ کو منہ دکھانا ہے ۔ اس طرح کی شرانگیزیوں سے صرف معصوم لوگوں کا خون بہنا ہے ۔ اور یاد ر ہے کہ اس میں آپ کابھرپور حصہ شامل ہوگا۔ اللہ ہمیں ہمارے لوگوں کے شر سے محفوظ رکھے ۔
     
    • متفق متفق × 5
    • زبردست زبردست × 2
  16. ناصر علی مرزا

    ناصر علی مرزا معطل

    مراسلے:
    1,234
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    ایک لمحہ کے لیے آپ کی بات درست سمجھیں تو یہ بتائیے کہ منور حسن نے پاکستانی معاشرے میں قتل و قتال کی بات کی ہے تو یہ کس قسم کا جہاد ہوگا اور اس کے متاثرین کون ہوں گے؟
     
    • متفق متفق × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. نایاب

    نایاب لائبریرین

    مراسلے:
    13,422
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Goofy
    بلاشبہ اس " سیاق و سباق " سے دوری ہی نے " سلامتی " کے دین کو " انتشار " کے دائرے میں قید کر دیا ہے ۔
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
    • متفق متفق × 4
  18. منصور مکرم

    منصور مکرم محفلین

    مراسلے:
    1,961
    جھنڈا:
    Pakistan
    اسی نام نہاد قتال و جھاد نے تو ملک کو تباہی کے دھانے پر لاکھڑا کیا ہے۔
    جھاد جھاد کرنا تو بہت آسان ہے ،لیکن یوں اپنے جھاد کو ہائی جیکنگ سے بچانا دل گردے کا کام ہے۔
    روس سے لیکر کشمیر تک اور آمریکہ سے لیکر عراق وشام تک اسلام کی ترویج کم اور اسلام کی بیخ کنی زیادہ کی گئی ہے۔

    جھاد کا نام استعمال کرکے ہم نے ان نوجوانوں کو کئی دھائیوں سے ورغلایا ہے۔جنت کے سبز باغ دکھا کر ہم نے انکو تعلیم و ترقی سے محروم ہی رکھا ہے۔
    آج بھی شرطیہ کہتا ہوں کہ برصغیر سے جھاد وقتال کا نام ختم کیا جائے تو نہ امریکیوں کیلئے رہنے کا جواز رہے گا اور نا ہی نوجوانوں کو ورغلایا جائے گا۔

    کیا صرف پورے اسلام میں ایک جھاد ہی رہ گیا ہے معاشرے کو سدھارنے کیلئے؟؟؟
    باقی اسلام گویا بے معنی ہی ہے کیا؟؟؟
     
  19. منصور مکرم

    منصور مکرم محفلین

    مراسلے:
    1,961
    جھنڈا:
    Pakistan
    برداشت کا تو یہ عالم ہے معمولی اختلافات برداشت نہیں ہوتے،لیکن آئے ہیں جھاد جیسی باریکی رکھنے والے کام سے معاشرے کا اصلاح کرنے کیلئے۔
     
  20. سید ذیشان

    سید ذیشان محفلین

    مراسلے:
    7,227
    موڈ:
    Asleep
    جہاد کے لئے پاک آرمی کا ادارہ موجود ہے اس کے علاوہ کسی کو جہاد کا اختیار نہیں ہونا چاہیے۔
     
    • متفق متفق × 5
    • پر مزاح پر مزاح × 1

اس صفحے کی تشہیر