سلیم احمد غزل : ٹھہر جاتے ہیں کہ آدابِ سفر جانتے ہیں - سلیم احمد

فرحان محمد خان نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 18, 2019

  1. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,138
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    غزل
    ٹھہر جاتے ہیں کہ آدابِ سفر جانتے ہیں
    ورنہ منزل کو بھی ہم راہگزر جانتے ہیں

    نامُرادانِ محبت کو حقارت سے نہ دیکھ
    یہ بڑے لوگ ہیں جینے کا ہنر جانتے ہیں

    شرطِ ویرانی سے واقف ہی نہیں شہر کے لوگ
    در و دیوار بنا کر اسے گھر جانتے ہیں

    دیکھ اے دستِ عطا تیری غلط بخشی کو
    یہ الگ بات کہ ہم چپ ہیں مگر جانتے ہیں

    ان کو تسکینِ حضر دے کہ ترے خانہ بدوش
    گھر کو منجملۂ اسبابِ سفر جانتے ہیں

    ہر طرف معرکۂ سود و زیاں جاری ہے
    دستِ خالی کو سلیمؔ اپنی سپر جانتے ہیں
    سلیم احمد
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  2. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,138
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    کلامِ شاعر بہ زبانِ شاعر
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    18,434
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    بہت عمدہ ،
    زبردست شیئرنگ ۔
     
  4. نور ازل

    نور ازل محفلین

    مراسلے:
    23
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
  5. فلسفی

    فلسفی محفلین

    مراسلے:
    2,584
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    کیا کہنے، بہت خوب
     

اس صفحے کی تشہیر