غزل برائے اصلاح

محمد فائق نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 12, 2019

  1. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    327
    عنوان تک پتہ نہیں طرزِ جہان کا
    کم بخت وقت آن پڑا امتحان کا

    منزل یقین کی، ہو میسر، بعید ہے
    کٹتا نہیں ہے مرحلہ وہم و گمان کا

    نفرت ضروری تو نہیں ترکِ وفا کے ساتھ
    اک اور انتخاب بھی ہے درمیان کا

    ہر سمت کیوں بلند ہے شورِ فساد، جب
    طالب ہر ایک شخص ہے امن و امان کا

    فائق! چھپا سکا نہ دلِ غم زدہ کا حال
    چہرے نے کام کر ہی دیا ترجمان کا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  2. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    327
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,321
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    عنوان تک پتہ نہیں طرزِ جہان کا
    کم بخت وقت آن پڑا امتحان کا
    ... طرز کا عنوان؟ یہ محاورہ نہیں۔ مفہوم واضح نہیں پوا

    منزل یقین کی، ہو میسر، بعید ہے
    کٹتا نہیں ہے مرحلہ وہم و گمان کا
    .... پہلے مصرع کا انداز بیان ذرا واضح نہیں۔ منزل ملنے کو منزل کا میسر ہونا بھی خلاف محاورہ ہے
    ممکن نہیں یقین کی منزل بھی مل سکے
    یا ایسا کچھ مصرع لگایا جائے تو بہتر ہے

    نفرت ضروری تو نہیں ترکِ وفا کے ساتھ
    اک اور انتخاب بھی ہے درمیان کا
    .. ضروری کی ی کا اسقاط اور تو کی واو کا طویل کھنچنا روانی کو متاثر کر رہا ہے
    نفرت ہی لازمی نہیں.... کیا جا سکتا ہے

    ہر سمت کیوں بلند ہے شورِ فساد، جب
    طالب ہر ایک شخص ہے امن و امان کا
    ... شور بلند ہونا بھی خلاف محاورہ ہے
    ہر سمت کیوں مچا ہے یہ...
    کیا جا سکتا ہے

    فائق! چھپا سکا نہ دلِ غم زدہ کا حال
    چہرے نے کام کر ہی دیا ترجمان کا
    .. درست
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,321
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    عنوان تک پتہ نہیں طرزِ جہان کا
    کم بخت وقت آن پڑا امتحان کا
    ... طرز کا عنوان؟ یہ محاورہ نہیں۔ مفہوم واضح نہیں پوا

    منزل یقین کی، ہو میسر، بعید ہے
    کٹتا نہیں ہے مرحلہ وہم و گمان کا
    .... پہلے مصرع کا انداز بیان ذرا واضح نہیں۔ منزل ملنے کو منزل کا میسر ہونا بھی خلاف محاورہ ہے
    ممکن نہیں یقین کی منزل بھی مل سکے
    یا ایسا کچھ مصرع لگایا جائے تو بہتر ہے
    8
    نفرت ضروری تو نہیں ترکِ وفا کے ساتھ
    اک اور انتخاب بھی ہے درمیان کا
    .. ضروری کی ی کا اسقاط اور تو کی واو کا طویل کھنچنا روانی کو متاثر کر رہا ہے
    نفرت ہی لازمی نہیں.... کیا جا سکتا ہے

    ہر سمت کیوں بلند ہے شورِ فساد، جب
    طالب ہر ایک شخص ہے امن و امان کا
    ... شور بلند ہونا بھی خلاف محاورہ ہے
    ہر سمت کیوں مچا ہے یہ...
    کیا جا سکتا ہے

    فائق! چھپا سکا نہ دلِ غم زدہ کا حال
    چہرے نے کام کر ہی دیا ترجمان کا
    .. درست
     
  5. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    327
    بہت شکریہ سر رہنمائی کے لیے
    طرزِ جہان کی جگہ درسِ جہان کیا جاسکتا ہے ؟ تا کہ شعر کا مفہوم واضح ہو جائے
    منزل ملے یقین کی، دشوار ہے بہت
    یہ مصرع درست رہے گا؟
     
  6. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,321
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    مطلع کا مفہوم تو درس سے بھی واضح نہیں ہوتا
    دوسرا شعر درست ہو گیا
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  7. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    327
    آساں ذرا سفر نہیں راہِ جہان کا
    ہر اک قدم بتاتا ہے یہ رفتگان کا

    الجھے ہوئے ہیں اب بھی سوالاتِ زندگی
    اور اس پہ وقت آن پڑا امتحان کا


    ہنگامۂ حیات میں ہوتا نہ گم اگر
    یا
    ہوتا نہ گم ہجوم ِ غمِ روزگار میں
    رہتا پتہ کچھ اپنے بھی نام و نشان کا
    سر نئے سرے سے دو تین اشعار کیے ہیں برائے اصلاح
     
  8. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    327
     
  9. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    327
  10. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,321
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    درست ہیں نئے اشعار، آخری شعر کے دونوں متبادل اچھے ہیں، کچھ بھی رکھ سکتے ہو
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    327
    بہت شکریہ سر
     

اس صفحے کی تشہیر