عمران فاروق قتل کیس میں برطانوی پولیس نے آج 52 سالہ پاکستانی کو گرفتارکرلیا

سید اسد محمود نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 24, 2013

  1. ایچ اے خان

    ایچ اے خان معطل

    مراسلے:
    14,183
    موڈ:
    Cool
    الطاف سے اختلافات اپنی جگہ میں یہ کہنا کہ یہ پاکستانی نہیں ہے صرف ذہنی پستی اور تعصب ہے
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  2. محمود احمد غزنوی

    محمود احمد غزنوی محفلین

    مراسلے:
    6,435
    موڈ:
    Torn
    آپ ماضی میں رہ رہے ہیں، میں حال کی بات کر رہا ہوں۔۔۔اور مستقبل کا بھی عنقریب پتہ چل جائے گا;)
     
  3. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    211,433
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    لیکن میرے خیال میں تو الطاف نے پاکستانی شہریت منسوخ کروا کے برطانوی شہریت لے لی ہوئی ہے۔
     
  4. ایچ اے خان

    ایچ اے خان معطل

    مراسلے:
    14,183
    موڈ:
    Cool
    پاکستان ان ممالک میں شامل ہے جن ممالک میں برطانیہ نے براہ راست حکومت کی ہے۔ لہذا ان ممالک کی انجمن کو "دولت مشترکہ" کہتے ہیں۔ اس لیے برطانیہ کی شہریت لینے کے لیے پاکستان کی شہریت منسوخ کرانے کی ضرورت نہیں
     
    • متفق متفق × 1
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  5. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    یہ غلط فہمی دور کر لیجیئے۔ پاکستان کی پیدائش انگریزوں کی روانگی کے ساتھ ہی ہوئی تھی۔ پاکستان پر ابھی تک کسی نے اس طرح حکومت نہیں کی جس طرح آپ کہہ رہے ہیں :)
     
    • متفق متفق × 1
  6. ایچ اے خان

    ایچ اے خان معطل

    مراسلے:
    14,183
    موڈ:
    Cool
    کیا لاہور، پشاور، کراچی اور کوئٹہ میں فرشتے حکومت کرتے رہے۔
    یہ بات درست ہے کہ مغلوں کے بعد پنجاب میں سکھوں کی حکومت تھی مگر اس کے بعد انگریز بھی حکومت کرگئے ہیں۔
    اسی لیے یہ دولت مشترکہ میں شامل ہے
     
    • متفق متفق × 1
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  7. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    ایک پاکستانی ہونے کی حیثیت سے میرا تبصرہ صرف اتنا ہے کہ

    بکواس بند کرو اپنی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 3
    • متفق متفق × 1
  8. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    پاکستان کا قیام کس تاریخ کو ہوا اور کس تاریخ کو انگریز روانہ ہوئے؟ آپ یہ کہہ سکتے ہیں کہ انگریز ان علاقوں پر قابض تھے جو آج پاکستان کا حصہ ہیں۔ لیکن پاکستان کے ملک پر کبھی انگریز قابض نہیں رہے
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  9. عسکری

    عسکری معطل

    مراسلے:
    18,520
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    دیکھو بھئی ہماری ریاست پر قبضہ نہیں تھا انگریزوں کا :grin:
     
    • متفق متفق × 1
  10. ام نور العين

    ام نور العين معطل

    مراسلے:
    2,026
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    اور ملعون قادیانی پاکستان کے خلاف بکواس کرنا نہیں چھوڑ سکتے ۔اسی لیے پہچانے جاتے ہیں ۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  11. عسکری

    عسکری معطل

    مراسلے:
    18,520
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    اس مین اس کا قصور نہین وہ جس ملک میں رہتا ہے اس کا رقبہ میرے ضلع بہاولپور جتنا ہے اور آبادی میرے ضلعے کی ابادی سے کم اس لیے وہ یہ باتیں کر رہا ہے ان فیکٹ کرائم ریٹ اگر کمپئیر کرنا ہے تو ڈنمارک اور بہاولپور کا ہونا چاہیے نا کہ ڈنمارک اور پاکستان کا :bighug:
     
    • زبردست زبردست × 1
  12. ساجد

    ساجد محفلین

    مراسلے:
    7,113
    موڈ:
    Question
    اس لڑی کا عنوان مت بھولئے اور اگر اس بارے کہنے کو کچھ نہیں تو خاموش رہیں۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. ایچ اے خان

    ایچ اے خان معطل

    مراسلے:
    14,183
    موڈ:
    Cool
    چلیے چھوڑے اس بات کو
    پاکستان دولت مشترکہ میں شامل ہے
    لہذا الطاف کے لیے ضروری نہیں کہ پاکستانی شہریت چھوڑ کر برطانوی اختیار کرے بلکہ وہ دونوں رکھ سکتا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. عسکری

    عسکری معطل

    مراسلے:
    18,520
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    کیا کبھی آپنے سنا کہ اس نے پاکستانی پاسپورٹ کو رنیو کرنے کے لیے پاکستانی ایمبیسی کا چکر لگایا ؟ جیو جو بھائی کے نزلے زکام قبض کی نیوز بڑھ چڑھ کر پوسٹ کرتا ہے یہ خبر کیوں چھوڑتا :grin: کیونکہ یہ ایک طرح سے سیاسی سکور بھی ہوتا اس کے ماننے والوں کے لیے
     
    • متفق متفق × 1
  15. یوسف-2

    یوسف-2 محفلین

    مراسلے:
    4,043
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    [​IMG]
    Link

    [​IMG]
    Link
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  16. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    211,433
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    گرفتار شدہ شخص کی حراست میں مزید 12 گھنٹے کی توسیع۔

    اس کے بعد یا تو چھوڑ دیا جائے گا یا باقاعدہ گرفتار کیا جائے گا۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  17. ایچ اے خان

    ایچ اے خان معطل

    مراسلے:
    14,183
    موڈ:
    Cool
    چھوڑ دیا جائے گا؟ کیوں؟
    ابھی کیا بے قاعدہ گرفتار کیا ہے
    اگر بے قاعدہ گرفتار کیا ہے تو لوگ اتنی باتیں کیوں بنارہے ہیں
     
  18. عادل نذیر

    عادل نذیر محفلین

    مراسلے:
    62
    جھنڈا:
    Spain
    موڈ:
    Busy
    بلکل سچ کہا بھائی جان چور چوری سی سے جاسکتا ہے ہیرا پھری سے نہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  19. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    211,433
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ابھی صرف تفتیش کے لیے زیر حراست ہے۔ ابھی چارج نہیں لگایا گیا۔
     
  20. سید اسد محمود

    سید اسد محمود محفلین

    مراسلے:
    981
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Tolerant
    [​IMG]
    عمران فاروق قتل کیس: لندن پولیس نے الطاف کے کزن کی گرفتاری کے بعد انٹرنیشنل سیکریٹریٹ کے ایک درجن سے زائد افراد کو شامل تفتیش کرلیا، کراچی اورحیدرآباد کےکارکنوں میں تشویش

    لندن: اسکاٹ لینڈ یارڈ پولیس نے ایم کیو ایم کے رہنما ڈاکٹرعمران فاروق کے قتل کے الزام میں مزید کئی دیگر افراد کو شامل تفتیش کرلیا ہے جبکہ اس قتل کے پیچھے پیسوں کے معاملے کا بھی انکشاف ہوا ہے۔گزشتہ روز ہیتھرو ایئرپورٹ سے گرفتار کئے گئے پاکستانی نژاد برطانوی شخص افتخار حسین جو کہ متحدہ کے قائد الطاف حسین کا کزن ہے کی گرفتاری کے بعد ملزم کے زیر استعمال فون کو قبضے میں لے کر اس میں موجود ڈیٹا سے تفتیش کے عمل کو آگے بڑھایا جارہا ہے۔اسکاٹ لینڈ یارڈ نے ملزم سے کی گئی پوچھ گچھ کی روشنی میں ایک خاتون سمیت متعدد افراد کو بھی شامل تفتیش کرلیا ہے معلوم ہوا ہے کہ شامل تفتیش کیے جانے والے تمام افرادکا تعلق متحدہ قومی موومنٹ کے انٹرنیشن سیکریٹریٹ سے ہےذرائع نے بتایا ہے کہ تفتیش کے دوران اس بات کا بھی انکشاف ہوا ہے کہ ڈاکٹر عمران فاروق کے قتل میں پیسوں کے لین دین کا بھی معاملہ شامل ہے، لندن پولیس کا کہنا ہے کہ وہ اس قتل کے محرکات اور قاتل تک جلد ہی پہنچ جائیں گے۔یاد رہے کہ گزشتہ روز لندن پولیس نے ہیتھرو ائرپورٹ سے ایک پاکستانی نژاد برطانوی شہری افتخار احمد کو اس وقت حراست میں لیا تھا جب وہ اپنے خاندان کے دیگر افراد کے ہمراہ کینیڈا سے واپس آرہا تھا۔ برطانوی قانون کے مطابق پولیس ملزم کو 36 گھنٹے سے زیادہ حراست میں نہیں رکھ سکتی ، حراست کے دورانیے میں اضافے کے لئے اسے متعلقہ حکام کو ٹھوس شواہد پیش کرنا ہوں گے بصورت دیگر ملزم کو ضمانت پر رہا کردیا جائے گا ادھر کراچی میں متحدہ کے کارکنوں میں شدید بے چینی پائی جاتی ہے اور یہ تمام درست صورتحال جاننے کے لیے بے چین ہیں جبکہ بعض سرگرم کارکن اس صورتحال کے باعث زیر زمیں بھی جانے کی اطلاع ملی ہے۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ گزشتہ ماہ الطاف حسین نے متحدہ میں تطہیر کے عمل کا اعلان کیا تھا لیکن کارکنوں میں اس بات پر زیادہ تشویش پائی جاتی ہے کہ الطاف حسین اور لندن میں موجود ان کے مرکزی رہنمائوں کا نام عمران فاروق قتل میں کیوں لیا جارہا ہے تاہم انہیں اسکاٹ لینڈ یارڈ کی تفتیش پر کوئی شک بھی نہیں ہے۔
    ------------
    26 جون 2013ء
    لندن (آئی این پی‘مانیٹرنگ ڈیسک ) برطانوی پولیس نے عمران فاروق قتل کیس میںمتحدہ کے قائد الطاف حسین سے بھی پوچھ گچھ کا فیصلہ کیا ہے، صحت ٹھیک نہ ہونے کی وجہ سے معاملات تاخیر کا شکار ہیں،رضا ہارون کی اہلیہ بشریٰ بھی زیر حراست ہیں‘ سلیم شہزاد سے بھی تفتیش‘ تحقیقات کا دائرہ جنوبی افریقا، کینیڈا کے بعد پاکستان تک بڑھا دیا گیا ۔منگل کو لندن پولیس ذرائع کے مطابق ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس میں سیاسی محرکات ہیں‘ ڈاکٹرعمران فاروق کے بھاری رقوم کی برطانیہ منتقلی پر اپنے دوستوں سے اختلافات تھے۔ پولیس ذرائع نے کہا ہے کہ اہم پاکستانی شخصیت سے معلومات حاصل کرنے کے لیے منصوبہ بند ی کی جا رہی ہے۔ کیس میں ایک پاکستانی نژاد شخصیت کی گرفتاری کے بعد اس اہم شخصیت سے پوچھ گچھ جلد متوقع ہے۔ پولیس ذرائع نے کہا ہے کہ کیس میں پاکستان کی اہم شخصیت کا قریبی عزیز ملوث ہونے کے ٹھوس ثبوت بھی ملے ہیں۔ اسی عزیز کے گھر پر پولیس نے گزشتہ ہفتے چھاپہ مار کر 55 گھنٹے تک تلاشی لی تھی۔ ہیتھرو ائرپورٹ سے گرفتار ہونے والے 52 سالہ پاکستانی نژاد برطانوی شخص سے تفتیش کے دوران اہم معلومات حاصل ہوئی ہیں۔ گرفتار شخص کے موبائل فون سے پاکستان اور برطانیہ کے نمبر وں پر ہونے والی کالز کا بھی ڈیٹا اکٹھا کیا جا رہا ہے۔ برطانوی پولیس نے پاکستانی نژاد 5 افراد کے برطانیہ چھوڑنے پر پابندی لگا دی ہے اور ان کی کڑی نگرانی کی جار ہی ہے۔ چند گھنٹوں میں مزید گرفتاریوں کی توقع ہے۔ پولیس ذرائع نے کہا ہے کہ برطانوی پولیس نے قتل کیس میں تحقیقات کا دائرہ جنوبی افریقا، کینیڈا اور پاکستان تک بڑھا دیا ہے۔ لندن پولیس نے ڈاکٹرعمران فاروق کی بیوہ کی سیکورٹی مزید سخت کر دی ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق کیس میں حالیہ پیش رفت کے بعد شمائلہ فاروق اور ان کے بچوں کی سیکورٹی میں اضافہ کرتے ہوئے پولیس اہلکار ان کے گھر پر تعینات کر دیے گئے ہیں۔لندن پولیس کے افسران نے ڈاکٹر عمران فاروق کی بیوہ شمائلہ فاروق سے ملاقات کی ہے اور ان کو اب ہونے تک کیس پر ہونے والی پیش رفت سے آگاہ کیا۔ پولیس نے کیس میں سامنے آنے والے چند نئے ایشوز پر شمائلہ عمران سے معلومات حاصل کیں۔ پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ شمائلہ عمران نے اس بات کی تصدیق کی کہ ان کے چند لوگوں سے سیاسی اختلافات تھے اور وہ اس سلسلے میں کافی پریشان بھی تھے
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2

اس صفحے کی تشہیر