1. اردو محفل سالگرہ شانزدہم

    اردو محفل کی سولہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

ظہُور نظرؔ ::::::صحرا میں گھٹا کا مُنتظر ہُوں :::::ZUHOOR -NAZAR

طارق شاہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 27, 2019

  1. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,665
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    غزل
    ظہُور نظرؔ


    صحرا میں گھٹا کا مُنتظر ہُوں
    پھر اُس کی وَفا کا مُنتظر ہُوں

    اِک بار نہ جس نے مُڑ کے دیکھا ​
    اُس جانِ صَبا کا مُنتظر ہُوں

    بیٹھا ہُوں درُونِ‌‌ خانۂ غم ​
    سیلابِ بَلا کا مُنتظر ہُوں

    جاں آبِ بَقا کی کھوج میں ہے ​
    مَیں مَوجِ فَنا کا مُنتظر ہُوں

    کُھل جاؤں گا اپنے آپ سے مَیں ​
    مانُوس فضا کا مُنتظر ہُوں

    غنچوں کے سِلے ہُوئے لَبوں سے​
    تحسِینِ صَبا کا مُنتظر ہُوں

    اِس دَور میں خواہشِ طَرب ہے ​
    مدفن میں ہَوا کا مُنتظر ہُوں

    ماضی کی سزا بُھگت رہا ہُوں ​
    فردا کی سزا کا مُنتظر ہُوں

    شاید کہ وہاں مُفر ہو غم سے ​
    تسخِیر‌ خلا کا مُنتظر ہُوں

    ہاتھوں میں ہے میرے دامنِ شب ​
    سُورج کی صَدا کا مُنتظر ہُوں

    برسوں سے کھڑا ہُوں ہاتھ اُٹھائے ​
    تاثِیرِ دُعا کا مُنتظر ہُوں

    میرا تو خُدا کبھی نہیں تھا ​
    میں کِس کے خُدا کا مُنتظر ہُوں

    کہتے ہیں جسے نظرؔ مُسافر ​
    اُس آبلہ پا کا مُنتظر ہُوں

    ظہور نظرؔ​

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر