شہید، شہادت، شہدا

ام اویس نے 'اشعار اور گانوں کے کھیل' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 9, 2020

  1. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    دو حق و صداقت کی شہادت سرِ مقتل
    اٹھو کہ یہی وقت کا فرمان جلی ہے

    نوابزادہ نصراللہ خان
     
  2. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یہ ملتِ احمد مرسل ہے اک ذوق شہادت کی وارث
    اس گھر نے ہمیشہ مردوں کو سولی کے لیے تیار کیا

    نعیم صدیقی
     
  3. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    مہلت یہ شہیدوں کو کب تھی وہ اپنی اجل کی فکر کریں
    بس ایک نظر میں جی بھر کر نظارہء حسن یار کیا

    نعیم صدیقی
     
  4. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    شہید ہو ہو کے پھر اٹھوں گا نہ موت کے ہاتھ آؤں گا میں
    رسولِ رحمت کے دشمنوں کو لہو کے آنسو رلاؤں گا میں

    نعیم صدیقی
     
  5. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    میدانِ شہادت میں اڑاؤں گا پھریرے
    باہم ہمہء لشکرِ جرار چلوں گا

    شورش کاشمیری
     
  6. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ہر ایک دورِ وقت کا خود اپنا اک یزید ہے
    ہر ایک دور کا حسین بے گنہ شہید ہے

    نعیم صدیقی
     
  7. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ہم ضمیر و شعور رکھتے ہیں حکمِ شاہی پہ ہم نہیں جھکتے
    سر شہیدوں کا خم نہیں ہوتا غازیوں کے علم نہیں جھکتے

    سیف الدین سیف
     
  8. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    خونِ اعداء سے نہ ہو خونِ شہیداں ہی سے ہو
    کچھ نہ کچھ اس دور میں رنگ چمن نکھرا تو ہے

    ساحر لدھیانوی
     
  9. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    رنگ لائے گا شہیدوں کا لہو
    یہ لہو سرخی ہے آزادی کے افسانے کی

    تنویر نقوی
     
  10. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کن شہیدوں کے لہو کے یہ فروزاں ہیں چراغ
    روشنی سی جو ہے زنداں کے ہر اک روزن میں

    گلناز آفریں
     
  11. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ہم ہو گئے شہید یہ اعزاز تو ملا
    اہل جنوں کو نکتۂ آغاز تو ملا

    خالد یوسف
     
  12. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    اٹھو تم کو شہیدوں کا لہو آواز دیتا ہے
    خدا بھی اہل ہمت کو پر پرواز دیتا ہے

    سلیم ناز
     
  13. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    مجھ سے مرے بیان کی مانگیں شہادتیں
    کاذب کا لفظ لفظ حقیقت لکھا گیا

    شاہین کہروڑی
     
  14. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    مرا ہوا نہ کہو وہ ہمیشہ زندہ ہیں
    بنائی رب نے ہے جنت جگہ شہیدوں کی

    پسند آتی ہے سب کو ادا شہیدوں کی
    کبھی مٹے گی نہ رسمِ وفا شہیدوں کی

    جو پیدا کرنا ہے جذبہ حسینی بچوں میں
    کہانی ان کو تو ہمیشہ سنا شہیدوں کی

    رسول پاک نے بانہوں میں بھر لیا ہو گا
    سنی جو آپ نے ہو گی صدا شہیدوں کی

    انہی کا نام سدا ہو گا رہتی دنیا تک
    کریں گے سب ہی ہمیشہ ثنا شہیدوں کی

    لگے تھے سینے میں نیزے تھا جنگ کا میداں
    نماز تب نہ ہوئی تھی قضا شہیدوں کی

    سیما غزل
     
  15. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یوں راہِ حق میں جان کا نذرانہ دے دیا
    رتبہ بڑا شہیدوں میں پایا حسین نے

    تصدق حسین صادق
     
  16. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    تمھارے شہیدوں میں داخل ہوئے ہیں
    گل و لالہ و ارغواں کیسے کیسے

    خواجہ حیدر علی آتش
     
  17. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    نکھار گلشن اسلام پر جو آیا ہے
    خدا کے فضل سے ہے یہ عطا شہیدوں کی

    ولا تقولوا لمن یقتل سے ہے واضح
    رہے گی دہر میں قائم وفا شہیدوں کی

    محمد احمد زاھد
     
  18. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    قصورِ جنتِ ماویٰ جزا شہیدوں کی
    پسند آئی خدا کو ادا شہیدوں کی

    کسی نے موڑا نہیں چہرہ اپنا مقتل سے
    گواہی دیتی ہے یہ کربلا شہیدوں کی

    نبی کے نام پر قرباں ابد تلک ھوں گے
    کبھی مٹے گی نہ رسمِ وفا شہیدوں کی

    انہیں کبھی نہ سمجھنا اے لوگو تم مردہ
    کلامِ حق میں رقم ھے بقا شہیدوں کی

    سرورِ عشقِ محمد میں سر کٹاتے ھیں
    کیا چیز خوف ھے جانے بلا شہیدوں کی

    کسی يزيد کے آگے نہ سر جھکانا تم
    یہ دشتِ کرب سے آئے صدا شہیدوں کی

    حصولِ رحمتِ حق کے لئے وسیلہ ھے
    ھمارے واسطے عابد قبا شہیدوں کی

    ھماری مدح کی ان کو نہیں کوئی حاجت
    بڑھاتا شان ھے خود ھی خدا شہیدوں کی

    عابد علی
     

اس صفحے کی تشہیر