شب ِ قدر

ذوالفقار نقوی نے 'آپ کی شاعری (پابندِ بحور شاعری)' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 27, 2014

  1. ذوالفقار نقوی

    ذوالفقار نقوی محفلین

    مراسلے:
    384
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Happy
    میرے حصے میں بھی ثواب آئے
    ہے شب ِ قدر ، بے حساب آئے

    آج رحمت کے جام بٹتے ہیں
    ہر سیہ کار اب شتاب آئے

    کشت ِ ویراں میں کچھ نہیں اُگتا
    فکر میری پہ بھی شباب آئے

    رات بھر آج ہوں کھڑا در پر
    جانے کس وقت کچھ جواب آئے

    رات افضل ہو کیوں نہ راتوں پر
    جس میں معجز نما کتاب آئے

    نام ورد ِ زباں ہے احمد کا
    مجھ پہ کیسے کوئی عتاب آئے

    میرے مولا بدل حقیقت میں
    راہ میں جو کوئی سراب آئے

    میرے حامی ہوں احمد و زہرا
    میری مشکل میں بو تراب آئے

    خار ِ ذلت ہٹا دے دامن سے
    میرے حصے میں بھی گلاب آئے

    در سے خالی کوئی نہیں لوٹا
    ہو بھکاری کہ یا نواب آئے

    ذوالفقار نقوی​
     
    • زبردست زبردست × 2
  2. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    17,213
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    نام ورد ِ زباں ہے احمد کا
    مجھ پہ کیسے کوئی عتاب آئے
     

اس صفحے کی تشہیر