شاعری سیکھیں۔ (ابتدائی تین قسطیں ) ۔ قوافی کی ابتدائی پہچان

محمد اسامہ سَرسَری نے 'تعلیم و تدریس' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 25, 2013

  1. محمد اسامہ سَرسَری

    محمد اسامہ سَرسَری لائبریرین

    مراسلے:
    6,457
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    ملحد کی ح کے نیچے زیر ہے ، ہمارے نہ لکھنے سے کوئی فرق نہیں پڑتا ، اعتبار پڑھنے کا ہے اور پڑھا مُ ل حِ د جاتا ہے۔
    آپ کے سوال کا سیدھا سا جواب یہ بھی ہے کہ اس طرح کی صورت حال کا نام ”متحرک پر حرکت نہ لکھنا“ ہے۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  2. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    شکریہ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. ساقی۔

    ساقی۔ محفلین

    مراسلے:
    3,304
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding

    اگر کسی د سے پچھلے حرف پر پیش یا زیر ہو تو بھی قافیہ بن سکتا ہے یا نہیں ۔جیسے عابد ، زاہد،ساجد میں د سے پہلے زیر ہے مگر احد میں د سے پہلے زبر ہے کیا یہ قافیہ ٹھیک ہے ؟ یا لازمی طور پر اگر دال سے پہلے زیر ہے تو سب قوافی کے نیچے زیر ہی ہونی ضروری ہے یا حرکت کوئی سی بھی ہو سکتی ہے؟
     
    • زبردست زبردست × 1
  4. ابن رضا

    ابن رضا لائبریرین

    مراسلے:
    4,255
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    تھوڑا سا اضافہ۔ حرف روی قافیہ کے آخری و اصلی حرف کو کہتے ہیں
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 3, 2014
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  5. محمد اسامہ سَرسَری

    محمد اسامہ سَرسَری لائبریرین

    مراسلے:
    6,457
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    آپ نے بہت اچھا سوال کیا ہے۔ :)
    حرف روی اگر ساکن ہے یعنی اس پر زبر ، زیر یا پیش نہیں ہے تو اس سے پہلے والے حرف کی حرکت کی مطابقت ضروری ہے، لہذا احَد(ایک) اور اُحُد(پہاڑ کا نام) یہ دونوں لفظ عابد ، ساجد جیسے الفاظ کا قافیہ نہیں بن سکتے ، بلکہ احَد کے قوافی ہیں: ابَد ، اسَد ، خِرَد اور اُحُد کے قوافی وہ الفاظ ہوں گے جن میں آخری حرف د ہو اور اس سے پہلے والے حرف پر پیش ہو۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. ساقی۔

    ساقی۔ محفلین

    مراسلے:
    3,304
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    کیا حرف روی بھی متحرک ہو سکتا ہے ۔ مثال سے واضح کر دیں ۔




    تکلیف کے لیے معذرت خواہ ہوں۔
     
  7. محمد اسامہ سَرسَری

    محمد اسامہ سَرسَری لائبریرین

    مراسلے:
    6,457
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    اس میں تکلیف کی کیا بات ہے؟
    آپ دس مرتبہ سوال کریں ، جواب آتا ہوگا تو ضرور دیں گے اور پھر گیارھویں سوال کا بھی خوشی سے انتظار کریں گے۔ :)

    وضاحت کرنے سے پہلے ایک بات کہتا چلوں کہ ابتدائی اسباق میں حرف روی کی تٍفصیل اس لیے بیان نہیں کی کہ اسے سمجھنے کے لیے زبان کے تمام الفاظ کی ساخت اور ان کے اصلی اور زائد حروف کو سمجھنا بہت ضروری ہے، لہذا اگر حرف روی کی تفصیل سمجھنے میں دشواری ہو تو فی الحال اسے سمجھنا ترک کردیجیے گا اور اگلے اسباق کو حل کرنے کوشش کیجیے گا۔ :)

    حرف روی اصل میں صرف آخری حرف کو نہیں کہتے بلکہ جیسا کہ ابن رضا بھائی نے نشان دہی کی ہے کہ سب سے آخری اصلی حرف کو حرف روی کہا جاتا ہے ، مثال کے طور پر ”عالم“ ایک لفظ ہے اس میں چار حروف ہیں: ”ع ا ل م“۔ اب اگر اس میں سے ہم ”م“ نکال دیں تو ”عال“ بچ جائے گا اور مطلب بالکل خراب ہوجائے گا ، معلوم ہوا کہ ”م“ جو کہ ”عالم“ کا آخری حرف ہے اصلی ہے۔ اب اسی عالم سے ہم اور بہت سے الفاظ بنا سکتے ہیں جیسے ”عالموں“ ، ”عالمی“ ، ”عالمانہ“ ، ”عالمہ“۔ ان چاروں الفاظ کے آخری حروف الگ الگ ہیں ، مگر ان چاروں الفاظ کا وہ آخری حرف جو کہ اصلی بھی ہے وہ ”م“ ہے۔
    اس تفصیل کو سامنے رکھ اب ان الفاظ میں غور کیجیے:
    عالمانہ ، ظالمانہ ، خادمانہ ، جاہلانہ ، کاہلانہ
    ان تمام الفاظ کے آخر میں آنے والے تین حروف ”انہ“ چونکہ اصلی نہیں ہیں اس لیے یہ ردیف کا حصہ بنیں گے۔
    ”انہ“ سے پہلے ”عالمانہ“ میں ”م“ ہے جو کہ اصلی ہے لہذا ”م“ حرف روی ہوا۔
    یہی حرف روی ”ظالمانہ“ اور ”خادمانہ“ میں بھی پایا جارہا ہے لہذا یہ دونوں لفظ بھی ”عالمانہ“ کے قوافی بن سکتے ہیں۔
    مگر ”جاہلانہ“ اور ”کاہلانہ“ میں حرف روی ”م“ نہیں بلکہ ”ہ“ ہے ، اس لیے یہ دونوں لفظ ایک دوسرے کے لیے تو قافیہ بن سکتے ہیں ، مگر ”عالمانہ“ کا قافیہ نہیں بن سکتے۔

    اب آتے ہیں آپ کے سوال کی طرف:
    ہاں حرف روی متحرک ہوسکتا ہے اور اس کی مثال ہے عالمانہ ، ظالمانہ ، خادمانہ کہ ان تینوں میں حرف روی ”م“ ہے جو کہ متحرک ہے۔
    :)

    اسی طرح شرم سے شرمی ، نرم سے نرمی ، گرم سے گرمی ، قلم سے قلمی اور علم سے علمی بنے ہیں، لہذا بے شرمی کے قوافی ہیں نرمی ، گرمی ، قلمی ، علمی اور ان سب میں ”م“ حرف روی ہے جو کہ متحرک ہے یعنی اس کے نیچے زیر ہے۔ :)
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 3, 2014
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
    • متفق متفق × 1
  8. ساقی۔

    ساقی۔ محفلین

    مراسلے:
    3,304
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    بہت بہت شکریہ بھائی محمد اسامہ سَرسَری۔
    اب میں ان نکات کو اچھی طرح ذہن نشین کر لوں پھر آگے چلوں گا ۔
    اور مشق ستم(پریکٹس) آپ کے موضوع " آؤ قافیے بنائیں " میں ہو گی اب:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. محمد اسامہ سَرسَری

    محمد اسامہ سَرسَری لائبریرین

    مراسلے:
    6,457
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    درست۔
    بالکل۔۔۔
    درست۔۔۔۔
    یہ غلط ہیں۔ م حرف روی ساکن ہے ، اس سے پہلے والے حرف کی حرکت ایک ہونا ضروری ہے ، تبسم میں م سے پہلے س پر پر پیش ہے، موسم ، قسم(کھانا) بھسم اور مجسم میں م سے پہلے س پر زبر ہے ، جب کہ قسم(نوع) ، اسم ، رسم اور جسم میں م سے پہلے س بھی ساکن ہے ، یہاں ایک اور اصل یاد رکھیں کہ اگر حرف روی بھی ساکن ہو اور اس سے پہلے والا حرف بھی ساکن ہو تو اس سے بھی پہلے والے حرف کی حرکت کا اعتبار کیا جائے گا ،قسم ، اسم اور جسم میں م سے پہلے س ہے ، س سے پہلے والے حرف پر سب میں زیر ہے لہذا یہ آپس میں قافیہ ہیں ، مگر رسم میں س سے پہلے والے حرف پر زبر ہے۔
    خلاصہ یہ کہ:
    تبسم ۔۔۔۔ ان تمام میں اکیلا ہے ، ان میں سے کوئی بھی اس کا قافیہ نہیں بن سکتے ، البتہ تبسم کے قوافی ہیں: ترنم ، گم صم ، تلازم ، تحکم۔
    قسم(نوع) ۔۔۔ اس کے قوافی ہیں: اسم ، جسم ، علم ، حلم ، اثم۔
    قسم(کھانا) ۔۔۔ اس کے قوافی ہیں: موسم ، بھسم ، مجسم ، علم(جھنڈا) ، قلم ، قدم ، حرم ، عجم ، حشم ، خدم۔۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  10. ساقی۔

    ساقی۔ محفلین

    مراسلے:
    3,304
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    میرے ساتھ یہ بڑا مسئلہ ہے کہ میرا تلفظ ٹھیک نہیں ہے ۔ آپ نے جن الفٓاظ کے تلفظ کے متعلق بتا ہے مثلاً تبسُم ، میں اس کو موسَم کے قافیے کے طور پر لے رہا تھا ۔ مجھے لگا تبسم پر پیش نہیں زبر ہے ۔
    کیا کوئی آسان طریقہ ہے جس سے مجھے مطلوبہ الفاظ کے تلفظ معلوم ہو جائیں ۔ پتا چل جائے کہ کس لفظ کے اوپر کون سے اعراب ہیں ۔؟

    مجھے یہاں ایک اردو لغت ملی تو ہے اس میں الفاظ کے ساتھ اعراب بھی ہیں مگر مسلہ یہ ہے کہ ایک ایک لفظ تلاش کرنا پڑے گا یوں بہت سا وقت ضائع ہو گا ۔
     
  11. ساقی۔

    ساقی۔ محفلین

    مراسلے:
    3,304
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    قسط نمبر 3 بہانہ قوافی کی مشق:
    درست قافیے:کوچہ،کلچہ، گُردہ،مردہ،سبزہ،کہنہ،گہنہ،ابرہہ،وَجَہ،حیلہ،وسیلہ
    اچھے قافیے:چلنا،ملنا،رُلنا،سونا،کھونا،بونا،رونا،ہونا،رکنا۔کمینہ،پسینہ،سفینہ،مہینہ،کرینہ،روزینہ،
    بہتر قافیے:نہانہ،بتانا،جتانا،ستانا،رولانا،اٹھانا،پلانا،چلانا،سہانا،بہانہ،آشیانہ،آمرانہ،کارخانہ،احمقانہ
    بہترین قافیے:بہانہ(مکر، فریب) بہا نا(پانی میں بہا دینا)
     
    • زبردست زبردست × 1
  12. ابن رضا

    ابن رضا لائبریرین

    مراسلے:
    4,255
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    اچھے قافیے سمجھ نہیں آئے ذرا سمجھا دیجیے
    اچھے قافیے:چلنا،ملنا،رُلنا،سونا،کھونا،بونا،رونا،ہونا،رکنا۔کمینہ،پسینہ،سفینہ،مہینہ،کرینہ،روزینہ، (کیا یہ سب ہم قافیہ ہیں؟)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  13. ساقی۔

    ساقی۔ محفلین

    مراسلے:
    3,304
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    چلنا،ملنا،رُلنا،سونا،کھونا،بونا،رونا،ہونا،رکنا ،کے آخر میں الف آنے کی وجہ سے کہہ رہے ہیں ؟یا اعراب کا مسئلہ ہے؟
     
  14. ابن رضا

    ابن رضا لائبریرین

    مراسلے:
    4,255
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    پہلے آپ بتائیں کہ کیا یہ سب ہم قافیہ ہیں۔ آپ کے حساب سے؟
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  15. ساقی۔

    ساقی۔ محفلین

    مراسلے:
    3,304
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    میرے خیال سے تو ٹھیک تھے اس لیے پوسٹ کر دیئے تھے۔

    محمد اسامہ سرسری: قسط تیسری
    ساقی۔
    محمد اسامہ سرسری:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  16. محمد اسامہ سَرسَری

    محمد اسامہ سَرسَری لائبریرین

    مراسلے:
    6,457
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    میرے خیال میں ابتدائی تین اسباق حل کرنے والے کو قافیے کی گہرائی میں الجھانا اس کے حق میں ٹھیک نہیں ہوگا۔ :)

    ساقی بھائی! ماشاءاللہ آپ بہت محنت کر رہے ہیں ، لگے رہیں ، آہستہ آہستہ الفاظ اور ان کے اصلی اور غیراصلی حروف واضح ہوتے چلے جائیں گے، تلفظ بھی ہوتے ہوتے ٹھیک ہوجائے گا ، آج ”تبسم“ کا تلفظ معلوم ہوا ہے کل دوسرے الفاظ کا بھی اسی طرح معلوم ہوجائے گا۔

    ایک بات یاد رکھیے گا کہ قافیے کی یہ چار قسمیں میں نے خود بنائی ہیں ، کسی کتاب میں نہیں ہیں ، درحقیقت قافیے کی دو ہی قسمیں ہیں: ایک درست اور دوسری غلط ، جن قوافی میں اس کی شرائط پائی جائیں گی وہ درست اور جن میں نہیں پائی جائیں گی وہ غلط کہلائیں گے، مگر مسئلہ یہ ہے کہ قوافی کی درستی کی شرائط کافی مشکل ہے ، اس بارے میں مزمل بھائی نے بڑی عمدہ بات لکھی ہے کہ قوافی ایک لحاظ سے بہت آسان ہیں اور ایک لحاظ سے وزن کو سمجھنے سے بھی زیادہ مشکل ہیں۔

    اب آپ چوتھی مشق حل کرسکتے ہیں ، آئندہ کبھی قوافی کی مزید مشق ہونے کے بعد ادھر کا چکر لگائیے گا ، تاکہ اندازہ ہوسکے کہ ابن رضا بھائی نے کیا اشکال اٹھایا ہے، فی الحال یہی بہت ہے۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. محمد اسامہ سَرسَری

    محمد اسامہ سَرسَری لائبریرین

    مراسلے:
    6,457
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    آپ آئے نہیں دوبارہ۔ :)
     
  18. سلمان انصاری

    سلمان انصاری محفلین

    مراسلے:
    21
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    سر جی ۔ ۔۔۔ بس کیا نہیں آئے ۔ ۔ ۔ ایم اے اردو کا داخلہ بھیج دیا ہے ۔۔۔۔ ۔ :) ماسٹرز کے ساتھ ساتھ اب جلد شروع کروں گا کلاس یہاں بھی
     
    • زبردست زبردست × 1
  19. محمد اسامہ سَرسَری

    محمد اسامہ سَرسَری لائبریرین

    مراسلے:
    6,457
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    بہت خوب ۔۔۔۔ اللہ تعالیٰ خوب ترقی عطا فرمائے۔
     
  20. ساقی۔

    ساقی۔ محفلین

    مراسلے:
    3,304
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    جلوہ،حلوہ،بلوہ،انبوہ،بٹوہ،شکوہ،لقوہ،قہوہ،علاوہ،یاوہ
     
    • زبردست زبردست × 1

اس صفحے کی تشہیر