حفیظ تائب سو بسو تذکرے اے میرِؐ امم تیرے ہیں

محمد بلال اعظم نے 'حمد، نعت، مدحت و منقبت' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 17, 2013

  1. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,288
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    سو بسو تذکرے اے میرِؐ امم تیرے ہیں​
    اوجِ قوسین پہ ضَو ریز عَلَم تیرے ہیں​
    وقت اور فاصلے کو بھی تری رحمت ہے محیط​
    سب زمانے ترے، موجود و عدم تیرے ہیں​
    جیسے تارے ہوں سرِ کاہکشاں جلوہ فشاں​
    عرصۂ زیست میں یوں نقشِ قدم تیرے ہیں​
    اہلِ فتنہ کا تعلّق نہیں تجھ سے کوئی​
    قافلے خیر کے اے خیر شیم تیرے ہیں​
    ہیں تری ذات پہ سو ناز گنہگاروں کو​
    کیسے بے ساختہ کہتے ہیں کہ ہم تیرے ہیں​
    ہم کو مطلوب نہیں مال و منالِ ہستی​
    ہم طلبگار فقط تیری قسم تیرے ہیں​
    ناز بردارئ دنیا کی مشقّت میں نہ ڈال​
    ہم کہ پروردۂ صد ناز و نعم تیرے ہیں​
    ان کی خوشبو سے مہک جائے مشامِ عالم​
    میرے دامن میں جو گلہائے کرم تیرے ہیں​
     
    • زبردست زبردست × 2
  2. تلمیذ

    تلمیذ لائبریرین

    مراسلے:
    3,914
    موڈ:
    Cool
    سبحان اللہ!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,288
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    بہت شکریہ پسندیدگی کا
    جزاک اللہ
     

اس صفحے کی تشہیر