مصطفیٰ زیدی " زبان ِ غیر سے کیا شرح ِ آرزو کرتے " ۔ مصطفیٰ زیدی

فرخ منظور نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 26, 2016

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,867
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    " زبان ِ غیر سے کیا شرح ِ آرزو کرتے "
    وہ خُود اگر کہیں مِلتا تو گُفتگُو کرتے

    وہ زخم جِس کو کِیا نوک ِآفتاب سے چاک
    اُسی کو سوزَنِ مہتاب سے رفُو کرتے

    سوادِ دل میں لہُو کا سُراغ بھی نہ ملا
    کِسے اِمام بناتے کہاں وضو کرتے

    وہ اِک طلِسم تھا ، قُربت میں اُس کے عُمر کٹی
    گلے لگا کے اُسے، اُس کی آرزُو کرتے

    حلَف اُٹھائے ہیں مجبُوریوں نے جِس کے لیے
    اُسے بھی لوگ کِسی روز قِبلہ رُو کرتے

    جنُوں کے ساتھ بھی رسمیں، خرد کے ساتھ بھی قید
    کِسے رفیق بناتے کِسے عدُو کرتے

    حجاب اُٹھا دِیے خُود ہی نگار خانوں نے
    ہمیں دِماغ کہاں تھا کہ آرزُو کرتے

    (مصطفیٰ زیدی)
    قبائے سَاز​
     
    • زبردست زبردست × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. ڈاکٹرعامر شہزاد

    ڈاکٹرعامر شہزاد معطل

    مراسلے:
    2,162
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہت ہہی اعلیٰ اور زبردست ۔ ایک ایک شعر کمال ۔۔ انتخاب پہ ڈھیروں داد :)
     
    • دوستانہ دوستانہ × 2
  3. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    3,318
    جنُوں کے ساتھ بھی رسمیں، خرد کے ساتھ بھی قید
    کِسے رفیق بناتے کِسے عدُو کرتے
    بہت زبردست
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  4. سید لبید غزنوی

    سید لبید غزنوی محفلین

    مراسلے:
    3,541
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بہت خوب ۔۔۔
    اک بہترین انتخاب کے لیے بہت سی داد۔۔
    خوش رہیں سلامت رہیں ۔۔۔۔
     

اس صفحے کی تشہیر