ردیف ے حصہ پنجم - غزلیں 221 - 235

تفسیر نے 'غالبیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 30, 2006

  1. تفسیر

    تفسیر محفلین

    مراسلے:
    3,088
    .
    صفحہ اول​


    فہرست تبصرہ غزلیات
    ردیف ے حصہ پنجم - غزلیں 221 - 235


    221 ۔ ہر قدم دورئِ منزل ہے نمایاں مجھ سے
    222 ۔ نکتہ چیں ہے ، غمِ دل اُس کو سُنائے نہ بنے
    223 ۔ چاک کی خواہش ، اگر وحشت بہ عُریانی کرے
    224 ۔ وہ آ کے ، خواب میں ، تسکینِ اضطراب تو دے
    225 ۔ تپِش سے میری ، وقفِ کش مکش ، ہر تارِ بستر ہے
    226 ۔ خطر ہے رشتۂ اُلفت رگِ گردن نہ ہو جائے
    227 ۔ فریاد کی کوئی لَے نہیں ہے
    228 ۔ نہ پُوچھ نسخۂ مرہم جراحتِ دل کا
    229 ۔ ہم رشک کو اپنے بھی گوارا نہیں کرتے
    230 ۔ کرے ہے بادہ ، ترے لب سے ، کسبِ رنگِ فروغ
    231 ۔ کیوں نہ ہو چشمِ بُتاں محوِ تغافل ، کیوں نہ ہو؟
    232 ۔ دیا ہے دل اگر اُس کو ، بشر ہے ، کیا کہیے
    233 ۔ دیکھ کر در پردہ گرمِ دامن افشانی مجھے
    234 ۔ یاد ہے شادی میں بھی ، ہنگامۂ "یارب" ، مجھے
    235 ۔ حضورِ شاہ میں اہلِ سخن کی آزمائش ہے


    صفحہ اول​


    ردیف الف ۔ غزل 16 تا 30

    ردیف الف ۔ غزل 31 تا 45

    ردیف الف ۔ غزل 46 تا 60

    ردیف ب تا چ - غزل 61 تا 69

    ردیف د تا ز - غزل 70 تا 87

    ردیف س تا گ - غزل 88 تا 97

    ردیف ل تا م - غزل 98 تا 102

    ردیف ن حصہ اول - غزل103 تا 118

    ردیف ن حصہ دوئم - غزل 119 تا 131

    ردیف ن حصہ سوئم - غزل 132 تا 142

    ردیف و - غزل 143 تا 155

    ردیف ھ - غزل 156 تا 160

    ردیف ے اول - غزل 161 تا 175

    ردیف ے دوئم - غزل 176 تا 190

    ردیف ے سوئم - غزل 191 تا 205

    ردیف ے چہارم - غزل 206 تا 220

    ردیف ے پنجم- غزل221 تا 235

    ردیف ے ششم ۔غزل 236 تا 250

    ردیف ے ہفتم - غزل 251 تا 265

    ردیف ے ہشتم - غزل 266 تا 274

    .
     

اس صفحے کی تشہیر