رات کی زلفیں بھیگی بھیگی اور عالم تنہائی کا ۔ کلیم عثمانی

فرخ منظور نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 2, 2020

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,731
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    رات کی زلفیں بھیگی بھیگی اور عالم تنہائی کا
    کتنے درد جگا دیتا ہے اک جھونکا پروائی کا

    اڑتے لمحوں کے دامن میں تیری یاد کی خوشبو ہے
    پچھلی رات کا چاند ہے یا ہے عکس تری انگڑائی کا

    کب سے نہ جانے گلیوں گلیوں سائے کی صورت پھرتے ہیں
    کس سے دل کی بات کریں ہم شہر ہے اس ہر جائی کا

    عشق ہماری بربادی کو دل سے دعائیں دیتا ہے
    ہم سے پہلے اتنا روشن نام نہ تھا رسوائی کا

    شعر ہمارے سن کر اکثر دل والے رو دیتے ہیں
    ہم بھی لئے پھرتے ہیں دل میں درد کسی شہنائی کا

    تم ہو کلیمؔ عجب دیوانے بات انوکھی کرتے ہو
    چاہ کا بھی ارمان ہے دل میں خوف بھی ہے رسوائی کا


    کلیم عثمانی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 2
  2. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,922
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بہت خوب انتخاب سر۔ شکریہ اس خوبصورت غزل کے لیے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,731
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت شکریہ۔ آج کل لاہور میں ہی ہیں یا کسی اور شہر میں ڈیرے ڈال رکھے ہیں؟ اگر لاہور میں ہیں تو ملاقات کرتے ہیں۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  4. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,922
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    لاہور ہی میں سر۔ ضرور۔ کیوں نہیں۔ بنائیں پروگرام
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  5. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,731
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    جلد ملتے ہیں ایک چھوٹے سے بریک کے بعد :)
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  6. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    22,180
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت خوب !

    عمدہ غزل ہے فرخ بھائی!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر