1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

بس اسٹاپ پر ۔۔۔۔ایک افسانہ برائے تنقید ،تبصرہ و اصلاح

محمد علم اللہ نے 'افسانے' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 5, 2013

  1. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,827
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring
    کب سے انتظار کر رہا تھا جواب کا بس اتنا ہی سا اور آپ کو میں ٹیگ کیا تھا اگر نہیں ہوا تو معذررت خواہ ہوں مجھے لگا شاید میں نے ٹیگ کیا تھا ۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,674
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed

    "اصلاحی" مشورے تو سب دوستوں نے دے ہی دیے ہیں۔ ہم نے اپنی رائے دے دی۔
     
  3. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    بہت خوب لکھا ہے جناب، داد حاضر ہے، گر قبول ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
  4. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,827
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring
    کچھ دیں گے تبھی تو قبول کروں گا یا ایسے ہی خالی خولی قبول کر لوں:laughing3:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,827
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring
    :):(:)
     
  6. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    شاباشی خاضر ہے :lol:
     
  7. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,674
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed

    یہ تو شادیء مرگ کی کیفیت لگ رہی ہے۔ :p
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  8. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,827
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring
    :-P:-P
    اور یہ
     
  9. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,827
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring
    :haha:چلئے قبول کیا
    اب پیٹھ بھی تھپ تھپا دیجئے :dancing: ۔
     
  10. نایاب

    نایاب لائبریرین

    مراسلے:
    13,422
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Goofy
    ماشاءاللہ
    بہت خوب لکھا ہے فسانہ زندگی محترم اصلاحی بھائی
     
  11. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    21,674
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed

    یہ "شادی" کی۔۔۔۔! :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. عبد الرحمن

    عبد الرحمن لائبریرین

    مراسلے:
    1,968
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Pensive
    بہت عمدہ محترمی! بہت ہی عمدہ۔ یہ صرف ایک افسانہ نہیں بلکہ غریبوں پر ظلم کی ایک داستان ہے اور اس ظلم میں ہم سب شامل ہے۔ ہماری اس ظلم کی طرف نشان دہی کرنے کا ڈھیروں شکریہ۔ جزاکم اللہ خیرا۔
     
  13. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,889
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    خالی جگہیں اتنی تکنیکی ہیں کہ مصنف کے سوا کوئی (کم از کم مجھ سا کم فہم) انہیں پر نہیں کرسکتا۔ ذرا غور سے دوبارہ لکھیے بہت بہتری آئے گی۔ اور ایک ترکیب یہ بھی ہے کہ کچھ لکھنے کے بعد پورا نسخہ قلم زد کر کے دوبارہ لکھا کریں فی البدیہ۔ بہت بہتری آجاتی ہے اس طرح۔ باقی ہم کہاں کہ تنقید نگار ہوئے ہیں کہ باتیں بناتے پھریں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,219
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    بہت معذرت کہ اچانک چلا گیا۔
    ہم تو صرف تعریف ہی کر سکتے ہیں، تنقید کا کام تنقید نگار جانیں۔
    ابتداء میں ہی کافی اچھا لکھ رہے ہیں تو آگے جا کے تو کمال کریں گے۔
     
  15. امجد میانداد

    امجد میانداد محفلین

    مراسلے:
    4,970
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dead
    بہت اچھی کاوش،

    بس مجھے صرف یہ پوچھنا تھا کہ رکشا اور آٹو دونوں الگ الگ ہوتے ہیں، معاف کیجیے گا میری کم علمی پہ۔ پھر یہ کہ آپ کا کردار بھی تو شدت سے رکشہ کی تلاش میں تھا رکشہ نظر آنے پہ وہ بھاگ کر بیٹھا کیوں نہ اور دیکھتا کیوں رہا،
     
    • متفق متفق × 1
  16. S. H. Naqvi

    S. H. Naqvi محفلین

    مراسلے:
    942
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Torn
    امجد صاحب سے اتفاق کروں گا، افسانہ اچھا ہے مگر کچھ جھول ہیں۔ ایک طرف تو شدت سے رکشے کی تلاش ہے اور دوسری طرف کان دوسرے مسافروں کے تبصروں سے بھی بے زار اور نظریں بھی اخبار بینی کو نظر انداز کر کے بڑے انہماک سے کونے میں کھڑے رکشے پر مرکوز ہیں، کچھ جچا نہیں۔۔۔۔ شاید سوچے گئے سبق آموز نقطے کو بیان کرنے کی کچھ زیادہ جلدی تھی مصنف کو۔۔۔۔۔۔۔۔! منظر نگاری اچھی تھی مگر کردار نگاری میں کچھ کمی محسوس ہوئی، سٹوڈنٹ ایک رکشے والے سے ایسا سلوک کیوں کریں گے خاص کر جب وہ انفرادی طور پر موجود ہیں، اور ایک طرف تولڑکیوں کی خود غرضی کہ بات طے کر کے بھی رکشہ پر سوار نہ ہوئیں اور دوسری طرف رحم دلی کہ بنا برتے رقم حوالے کر دی۔۔۔۔۔ بڑی بات کہ راوی خود کیوں نہ ایسے رکشے پر سوار ہوا۔۔۔۔۔۔۔! بس گزر گئی آرام سے مگرپولیس والے کو گالی دے کر گزرنا پڑا۔۔۔۔۔ کچھ زبردستی ہو گئی پولیس والے کے کردار سے۔۔۔۔۔۔ پاکستانی پولیس کی خوفناکی اپنی جگہ۔۔۔۔۔۔۔ پھر قاری کے ذہن میں تجسس ڈالا گیا کہ بوڑھے کی مجبوری معلوم ہو مگر بات پلٹ گئی پارٹی کی پالیسی اور گورنمنٹ کے بیڈ گورنس اور محکموں کی نااہلی پر۔۔۔۔۔!
    بحرحال خوب کاوش تھی جاری رکھیئے اللہ کرے زور قلم اور زیادہ۔۔۔۔!:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    بہت اچھا لکھا @محمد علم اللہ اصلاحی ۔ مقام اور کردار بدلتے رہتے ہیں لیکن حالات و واقعات وہی رہتے ہیں۔
    اچھا اچھا لکھتے رہیں اور قلمی جہاد کرتے رہیں۔ (y)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  18. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,827
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring

    رکشہ کی تلاش تو بس اسٹاپ تک جانے کے لئے تھی نا اور آٹو جہاں تک جانا تھا اس کے لئے جی رکشہ انسان کھینچتا ہے جبکہ آٹو ایندھن سے :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  19. ماہا عطا

    ماہا عطا محفلین

    مراسلے:
    2,138
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بھیا تبصرہ بعد میں کرتی ہوں پڑھ تو تب ہی لیا تھا ضب آپ نے پوسٹ کیا تھا۔۔۔۔۔۔۔۔۔:)
     
  20. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,827
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring

    اوکے بابا انتظار رہے گا بھلکڑ کی طرح بھول مت جانا
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر