برائے اصلاح (مفاعیلن مفاعیلن فعولن)

نوید ناظم نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 12, 2017

  1. نوید ناظم

    نوید ناظم محفلین

    مراسلے:
    1,139
    کسی نے اس سے یہ پوچھا کہاں ہے!
    مِرے پہلو میں جو دل تھا کہاں ہے؟

    جو میری دھوپ پر کل ہنس رہی تھی
    اب اُس دیوار کا سایہ کہاں ہے

    فقط ملتا ہے وہ اپنی غرض سے
    مِرے دل سے کوئی رشتہ کہاں ہے

    مریضِ عشق کا چارہ عبث ہے
    اب اِس نے ہجر میں بچنا کہاں ہے

    لو پیاسا مر رہا ہے تشنگی سے
    کوئی پوچھے کہ اب دریا کہاں ہے

    کئی نغمے مِرے دل میں چھپے ہیں
    ابھی یہ تار بھی چھیڑا کہاں ہے

    مجھے اندر سے کھائے جا رہا تھا
    بھلا ہر زخم اب رِستا کہاں ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 7
  2. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,845
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
  3. نوید ناظم

    نوید ناظم محفلین

    مراسلے:
    1,139
    محترم سر الف عین
    دیگر اساتذہءِ کرام
     
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,723
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    اچھی غزل ہے ماشاء اللہ۔
    مطلع میرے حساب سے تو درست ہے کہ میں ہندی یا دیو ناگری کے حساب سے چھ اور تھ کو الگ حرف مانتا ہوں۔ لیکن کلاسیکی اردو عروضیوں کے حساب سے اس میں ایطا کا سقم آ گیا ہے۔ ’ھا ہے‘ ردیف ہو جاتی ہے مطلع میں۔
    اس کے علاوہ

    مریضِ عشق کا چارہ عبث ہے
    اب اِس نے ہجر میں بچنا کہاں ہے
    دونوں مصرعوں میں ’ہے‘ آخر میں اچھا نہیں لگتا، اور ’اس نے کرنا ہے‘ پنجابی اردو ہے، فصیح اردو میں ’اس کو کرنا ہے‘ ہوتا ہے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  5. نوید ناظم

    نوید ناظم محفلین

    مراسلے:
    1,139
    سر بہت شکریہ۔۔۔۔
    مطلع کے پہلے مصرعے میں پوچھ ہے اور قائم مقام روی 'ا' اور دوسرے مصرع میں 'تھا' ہے جس کا الف اصلی ہے۔۔۔ سر کیا اس صورت میں بھی 'ہا' ردیف کا حصہ قرار پائے گا میرا تو یہ اندازہ تھا کہ اس صورت میں الف حرفِ روی اور ' کہاں ہے' ردیف ہو گی۔۔۔۔ آپ کی رائے پھر درکار ہے اس پر۔۔۔
    سر اسی ضمن میں یہ سوال بھی ہے کہ دو چشمی ھ تو عروض میں شمار نہیں ہوتی تو اس صورت میں کیا یہ 'چا' اور 'تا' نہیں ہو گا؟

    سر آپ کی رہنمائی کا ثمر ہے کہ مجھے یہ اندازہ تھا کہ ' ہے ' کی تکرار قبول نہ ہو گی' پتہ نہیں کیسے بے دھیان رہا اس سے۔ شعر بدل دیا' اب آپ دیکھیے گا۔۔۔
    مریضِ عشق کا چارہ نہ کیجے
    اب اس کو ہجر میں بچنا کہاں ہے
     
    آخری تدوین: ‏اپریل 13, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. ڈاکٹرعامر شہزاد

    ڈاکٹرعامر شہزاد معطل

    مراسلے:
    2,162
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہت خوب بھیا ۔ لاجواب ۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  7. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,723
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  8. محمد ریحان قریشی

    محمد ریحان قریشی محفلین

    مراسلے:
    1,898
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Devilish
    اگر چھ اور تھ کو علیحدہ حروف تصور کیا جائے تو عیب باقی نہیں رہتا۔ تقطیع میں ھ کا شمار نہ ہونے کا قافیے کے ساتھ کوئی تعلق نہیں۔ علمِ قافیہ کی بنیاد آواز پر قائم ہے اور تا اور تھا کی آواز ایک سی نہیں۔
     
    آخری تدوین: ‏اپریل 14, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  9. نوید ناظم

    نوید ناظم محفلین

    مراسلے:
    1,139
    جی ٹھیک۔ رہنمائی کے لیے شکریہ:)
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  10. نوید ناظم

    نوید ناظم محفلین

    مراسلے:
    1,139
    جی نوازش!
     
  11. مزمل شیخ بسمل

    مزمل شیخ بسمل محفلین

    مراسلے:
    3,523
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    قوافی درست ہیں۔
    تھا اور پوچھا کا مجموعی روی الف قرار پاتا ہے جو کہ آخری حرف ہے قافیے میں۔
    اور اس کے مقابلے پر سایہ وغیرہ عام مستعمل ہے۔ بلکہ حسرت موہانی کے نزدیک ایسی صورت میں سایہ کی بجائے سایا لکھنا چاہیے۔

    مجھے اندر سے کھائے جا رہا تھا​
    بھلا ہر زخم اب رِستا کہاں ہے
    ۔۔بہت عمدہ!!​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  12. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    24,074
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بہت عمدہ جناب۔
    ڈھیروں داد۔
    اللہ کرے زورِ قلم اور زیادہ۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. نوید ناظم

    نوید ناظم محفلین

    مراسلے:
    1,139
    بڑی نوازش!
     
  14. نوید ناظم

    نوید ناظم محفلین

    مراسلے:
    1,139
    بے حد شکریہ، اللہ پاک آپ کے علم میں مزید برکتیں عطا فرمائے-
     

اس صفحے کی تشہیر