عدیم ہاشمی اچھی ہے دوستوں سے شِکایت کبھی کبھی

شیزان نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 23, 2012

  1. شیزان

    شیزان لائبریرین

    مراسلے:
    6,469
    موڈ:
    Cool
    اچھی ہے دوستوں سے شِکایت کبھی کبھی
    بڑھتی ہے اِس طرح بھی محبت کبھی کبھی
    پہچان ہو گئی کئی لوگوں کی اِس طرح
    آئی ہے کام یُوں بھی ضرُورت کبھی کبھی
    ہوتے ہیں قُربتوں میں بھی محشر کئی بپَا
    آتی ہے وصل میں بھی قیامت کبھی کبھی
    پھر ایک بےپناہ سی شِدت کے واسطے
    قُربان ہم نے کی تری قُربت کبھی کبھی
    یُوں بھی لگا کہ تیرے سوا کوئی دل میں ہے
    محسُوس کی نہیں تیری چاہت کبھی کبھی
    یُوں بھی لگا کہ تیرے سوا ہے ہی کچھ نہیں
    دُنیا پہ چھا گئی تری صورت کبھی کبھی
    وہ جس کو دیکھ دیکھ کے جی تنگ آ گیا
    اچھی بہت لگی وہی صُورت کبھی کبھی
    سچائی تو ہے یہ کہ زمانے کے حُسن میں
    یاد آئی ہی نہیں تری صُورت کبھی کبھی
    دُنیا کی اور بات ہے، دُنیا تو غیر ہے
    ہوتی ہے اپنے آپ سے وحشت کبھی کبھی
    سارا ہی وقت، سارے جہاں کے لیے عدیم
    اپنے لئے بھی چاہیئے فُرصت کبھی کبھی
    دُوری کبھی کبھی بڑی اچھی لگی عدیم
    اچھی نہیں لگی ہمیں قُربت، کبھی کبھی
    عدیم ہاشمی
    "بہت نزدیک آتے جا رہے ہو" سے انتخاب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  2. محمود احمد غزنوی

    محمود احمد غزنوی محفلین

    مراسلے:
    6,435
    موڈ:
    Torn
    پھر ایک بےپناہ سی شِدت کے واسطے
    قُربان ہم نے کی تری قُربت کبھی کبھی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. شیزان

    شیزان لائبریرین

    مراسلے:
    6,469
    موڈ:
    Cool
    پسندیدگی پر مشکور ہوں غزنوی صاحب:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر